سکتے ہو تو پکڑ لو نہ،کوئی ثبوت نہیں تو الزام ہی لگا دو

July 14, 2017 3:08 pm

جدت ویب ڈیسک : ماضی میں حکومتوں پرسکیورٹی رسک،کرپشن کے الزامات لگا کرختم کیاجاتارہا، ملک 70 سال سے اتارچڑھاؤکا شکارہے، جے آئی ٹی نے مجھ پرکسی کرپشن میں ملوث ہونے کاذکر نہیں کیاکوئی کرپشن کی ہے تو پکڑلو ،کوئی ثبوت نہیں تو الزام ہی لگاؤ۔ان خیالات کا اظہار وزیراعظم نواز شریف نے پارلیمانی پارٹی اجلاس میں ارکان سے خطاب کرتے ہوئے کیا، وزیراعظم کا کہنا تھاکم ازکم یہ توبتا دیں میں نے کہاں سے رشوت لی ہے میں نے ایک نصب العین کی خاطر ہمیشہ مشکلوں کو برداشت کیااور کبھی عوام کے مینڈیٹ اور جمہوریت پرسمجھوتا نہیں کیاان کا کہنا تھا یہ تیسرے دھرنے کی تیاری ہے ہم سب کے مینڈ یٹ پر تیسرا وار ہو رہاہے جبکہ پہلے دھرنے کابھی کوئی جواز نہیں تھابلاجواز دھرنا مہم شروع کی گئی ہمیں ملک کو روشن کرنے کی سزا دی جا رہی ہے لیکن مستعفی نہیں ہوں گااور پاکستان کے عوا م کیلئے آخری وقت تک لڑوں گا،میرے ضمیر اور دامن پر کوئی داغ نہیں اورملک کو پیچھے دھکیلنے نہیں دوں گاانہوں نے کہا ہم نے اپنے دور میں ہمیشہ شفافیت کو فروغ دیا 4سال میں کراچی،پنجاب دیگرعلاقوں میں اربوں روپے کے پاورپلانٹس لگائے، موٹروے کا منصوبہ،توانائی کے منصوبوں میں کوئی ایک پیسے کی خوردبرد بتاؤ۔جب سے آئے ہیں عوام اور ملک کیساتھ کیا ہو رہا ہے ،وزیراعظم نے کہا جان ہتھیلی پر رکھ کر عدلیہ کی آزادی کی جنگ لڑی جب میدان میں نکلے تو سب چھپ گئے لانگ مارچ سے پہلے برطانیہ اور امریکا سے فون آئے جس میں میری جان کو خطرے کا بتایا گیا،انہوں نے کہا میں نے مشرف کی آمریت کے سامنے سر نہیں جھکایا ہم کوئی این آر او نہیں چاہتے تھے لیکن محترمہ کے آمر کیساتھ این آر اوکرنے پر دستخط کرنے پر دکھ ہوا۔

متعلقہ خبریں