مقبوضہ کشمیر میں آزادی اظہار رائے اور پر امن احتجاج پر پابندی ختم کی جائے، اقوام متحدہ

August 22, 2019 5:55 pm

اسلام آباد: جدت ویب ڈیسک :: اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے ماہرین نے بھارت سے کشمیر میں ذرائع ابلاغ بحال کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہاہے کہ آزادی اظہار رائے اور پر امن احتجاج پر کریک ڈاؤن ختم کیا جائے۔
اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے ماہرین کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیاہےکہ بھارت کی جانب سے اٹھائے گئے اقدامات پر تشویش ہے،بھارت کے اقدام سے خطے کی کشیدگی میں مزید اضافہ ہوگا۔
ماہرین کا کہنا ہے کہ رپورٹس کے مطابق 4 اگست سے مقبوضہ وادی کا دنیا سے کوئی رابطہ نہیں ہے۔ذرائع ابلاغ کی بندش بنیادی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔
بھارت کی جانب سے بندشیں خطے میں اندرونی خلفشار کا باعث ہیں۔ وادی میں صحافیوں، حریت رہنماؤں اور کارکنوں کی گرفتاریوں سے متعلق بھی آگاہ ہیں۔ گھروں پر چھاپے اور نوجوانوں کی گرفتاریوں پر تشویش ہے۔اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے ماہرین نے مطالبہ کیاہے کہ یہ اقدامات بنیادی حقوق کی خلاف ورزی ہیں، ملوث عناصر کے خلاف کارروائی کی جائے۔ خطے میں ضرورت سے زیادہ طاقت کے استعمال پر بھی تشویش ہے،زائد طاقت کا استعمال آخری حربے کے طور پر ہی کیا جائے۔

متعلقہ خبریں