اشرف صحرائی کی عید سے ایک دن قبل دو پارٹی کارکنوں کی گرفتاری کی شدیدمذمت

Ashraf Sehrai
June 11, 2019 4:50 pm

سرےنگر جدت ویب ڈیسک :مقبوضہ کشمیر میں تحریک حریت جموںو کشمیرکے چیئرمین محمد اشرف صحرائی نے عید سے ایک دن قبل بانڈی پورہ سے دو پارٹی کارکنوں طارق احمد شیخ اور فاروق احمد شیخ کو ا ن کے گھروں سے گرفتار کرنے کی شدیدمذمت کرتے ہوئے کہاہے کہ یہ گرفتاریاں غیر ضروری، بلا جواز اور غیر انسانی ہیں ۔کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق محمد اشرف صحرائی نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں کہاکہ انسانیت کا تقاضا تھا کہ جو سیاسی قیدی جموںو کشمیر اور بھارت کی مختلف جیلوں میںنظربند ہیں ان کو عید پر رہا کیا جاتاتاکہ وہ اپنے اہل خانہ کے ساتھ عید مناسکیں لیکن بدقسمتی سے یہاں اُلٹی گنگا بہتی ہے اورجو لوگ اپنے گھروں میں تھے ان کو بھی گھروں سے گرفتار کرکے تھانوں اور جیلوں میں بند کیا جاتا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ عید کے بعد بھی پلوامہ ،شوپیان ،کولگام ،اسلام آباد ، ترال اور دیگرعلاقوں میں شبانہ چھاپوں کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے نوجوانوں کو گرفتار کیا گیا ہے۔ سینئر حریت رہنما نے کہا کہ طارق احمد شیخ اور فاروق احمد شیخ کو عیدسے ایک دن قبل گرفتار کرنے کی کوئی وجہ نظر نہیں آتی ۔اُن کا کوئی ایسا جُرم نہیں تھا جس کی بنیاد پر ان کو گرفتار کرنا لازمی بن گیا تھا ۔انہوں نے کہا کہ یہاں بھارتی فورسز راہ چلتے لوگوں کو گرفتار کرکے ان کی شہری آزادی سلب کررہی ہےں ۔کسی کو آزاد ماحول میں سانس لینے کی بھی اجازت نہیں دی جارہی ۔انہوںنے تمام گرفتار افراد کی فوری رہائی کا مطالبہ کیا۔

متعلقہ خبریں