قاتل موسیقی۔وہ گیت جوموت ثابت ہوئے۔ کیوں؟جانیے

November 6, 2019 5:27 pm

جدت ویب ڈیسک ::موسیقی روح کی غذا ہے۔ یہ انسان کے لیے شادمانی اور راحت و سرور کا سبب بنتی ہے، لیکن یہ جان کر آپ کو حیرت ہو گی کہ ایسی موسیقی اور گیت بھی ہیں جن پر پرفارمنس کے نتیجے میں کئی جانیں ضایع ہو چکی ہیں۔ اسے بلاشبہ ہم قاتل موسیقی کہہ سکتے ہیں۔
یہ موسیقی ’نارکو کوریڈو‘ کہلاتی ہے جو میکسیکو اور قریبی ملکوں میں ڈرگ مافیا میں مقبول ہے۔ یہ دراصل ڈرگ لارڈز کے قصیدوں پر مبنی ہوتی ہے۔ منشیات اور جرائم کی دنیا میں سرگرم مختلف گروہ ایک دوسرے سے غیرقانونی کاروبار کے حوالے سے حسد اور رقابت کا شکار ہو کر اپنے مخالف گروہ کے سربراہ کی شکل و صورت کا مذاق اڑاتے ہیں۔
اس کے لیے وہ شاعروں سے ایسے گانے لکھواتے ہیں جن میں مخالف کی برائیاں، اس کی شکل و صورت کا مذاق اڑایا گیا ہو اور اس کی موسیقی ترتیب دے کر کسی گلوکار سے اس پر پرفارم کروایا جاتا ہے۔ اسی طرح اپنے کارندوں کا حوصلہ بڑھانے کے لیے بھی گیت اور موسیقی تخلیق کروائی جاتی ہے۔
ڈرگ لارڈز ایسے گلوکاروں کو بھاری معاوضہ دیتے ہیں مگر جرائم پیشہ گروہوں کے لیے گانے والے کئی فن کاروں کو ان کی اس پرفارمنس کی وجہ سے موت کے منہ میں اتار دیا گیا۔ یہ مخالف ڈرگ لارڈ کے کارندوں کے ہاتھوں قتل ہوئے۔
’’نارکو کوریڈو‘‘ موسیقی دراصل دو الفاظ نارکو اور کوریڈو کا مرکب ہے۔ نارکو، نارکوٹکس کا اختصار ہے جب کہ کوریڈو شاعری کی وہ قسم ہے جس میں حالات اور واقعات بیان کرتے ہوئے شخصیات کو گویا گھسیٹا جاتا ہے۔
کتنی عجیب اور حیرت انگیز بات ہے کہ موسیقی نے میکسیکو میں موسیقی بھی جرم کی دنیا میں پھنسی ہوئی ہے اور اس کے ذریعے منشیات فروش تسکین حاصل کرتے ہیں۔ موسیقی کا یہ خونیں روپ 1970ء میں سامنے آیا تھا۔ نارکو کوریڈو سے مختلف میوزیکل بینڈ باقاعدہ وابستہ ہیں اور وہ یہ سب دولت کی ہوس اور دوسرے مفادات پورے کرنے کے لیے کرتے ہیں۔
یہ موسیقی اور گیت نگاری زیادہ تر حقیقی واقعات اور زندہ شخصیات کے لیے کی جاتی ہے۔

Related image

Image result for narcocorrido music

متعلقہ خبریں