ظالمو۔۔۔۔کچھ شرم کرو

July 26, 2017 12:41 pm

کراچی جدت ویب ڈیسک سردار اپنے خاندان کے ساتھ ٹرین میں جا رہا تھا،دورانِ سفر ایک باڈی بلڈرنما پہلوان سے لڑائی ہو گئی،پہلوان نے سردار کے گال پہ زور سے تھپڑ مارا،سردار – میری تو کوئی بات نہیں، لیکن میرے بھائی کو مارا تو پھر دیکھنا -پہلوان نے بھائی کے منہ پر بھی زور سے مکہ مار دیا -سردار – تو نے اگر میرے بیٹے کو ہاتھ بھی لگایا پھر تیری خیر نہیں -پہلوان نے بیٹے کو بھی اٹھا کے پرے پھینک دیا -سردار اب غصے سے بولا – میری بیوی کو کچھ کہا تو تجھے مجھ سے کوئی نہیں بچا پائے گا -پہلوان نے بیوی کو بھی چٹیا پکڑ کے سیٹ سے نیچے گرا دیا -اب سردار خاموشی سے سیٹ پر بیٹھ گیا،تھوڑی دیر بعد جب اسٹیشن سے اترے تو ایک آدمی بولا -سردارجی ، یہ بات آپ کے تھپڑ پر ہی ختم ہو سکتی تھی ، لیکن آپ نے پہلوان کو چھیڑ کر پورے خاندان کو پٹوا دیا -سردار – بھائی تم نہیں سمجھو گے ، اگر میں اکیلا پِٹتا تو یہ سب گھر جا کر میرا مذاق اڑاتے ۔
نوٹ :- شریف خاندان سے مماثلت اتفاقیہ سمجھی جائے ۔

متعلقہ خبریں