May 18, 2018

رمضان کی آمد پر کونسی دو معروف موبائل فون کمپنیوں نے قیمتوں میں کمی کا اعلان کر دیا، جانیے

کراچی جدت ویب ڈیسک :::رمضان کی آمد پر کونسی دو معروف موبائل فون کمپنیوں نے قیمتوں میں کمی کا اعلان کر دیا، جانیے …….رمضان کی آمد پر دو معروف موبائل فون کمپنیوں نے قیمتوں میں کمی کا اعلان کر دیا۔ پاکستان میں 2 بڑی اسمارٹ فونز فروخت کرنے والی کمپنیاں سام سنگ اور نوکیا کی جانب سے ڈیوائسز کی قیمت میں کمی کا اعلان کر دیا۔تفصیلات کے مطابق نوکیا فونز کی فروخت کا لائسنس رکھنے والی کمپنی ایچ ڈی گلوبل ماہ رمضان کے موقع پر اسمارٹ فونز کی قیمتوں میں کمی کا اعلان کر دیا۔سام سنگ نے ماہ رمضان کومد نظر رکھتے ہوئے اپنی جے سیریز کے فونز کی قیمتوں میں کمی کا اعلان کیا ہے۔جے سیریز کا گلیکسی جے 7 کور اب 23 ہزار 999 روپے کی بجائے 18 ہزار 999 روپے میں دستیاب ہوگا۔ اسی طرح گلیکسی جے 5 پرائم کی قیمت 22 ہزار 999 روپے سے کم ہوکر 18 ہزار 999 روپے کردی گئی ہے جبکہ گلیکسی جے 7 پرو ساڑھے 5 ہزار روپے کمی سے 34 ہزار 999 روپے کی بجائے 28 ہزار 999 روپے میں فروخت ہوگا۔یا درہے کہ پاکستان میں رمضان المبارک کا چاند نظر آ گیاہے اور کل 17 مئی کو پاکستان بھر میں پہلا روزہ رکھا جائے گا۔جبکہ پاکستان کے علاوہ سعودی عرب سمیت دنیا بھر میں رمضان کا آغاز بھی کل سے ہونے جا رہا ہےاسمارٹ فونز کی قیمتوں میں 5سو روپے سے لے کر 14ہزار روپے تک کی کمی کا اعلان کیا۔وکیا 1 فون 10 ہزار 900 روپے کی بجائے 9 ہزار 250 روپے،نوکیا 2 کی قیمت ساڑھے 5 سو روپے کمی سے 12 ہزار 470 روپے کی بجائے 11 ہزار 920 روپے میں ملے گا۔نوکیا 5 کی قیمت 19 ہزار 500 روپے سے کم کرکے 17 ہزار 650 روپے کر دی گئی ہے۔اسی طرح نوکیا سکس کی قیمت میں 4 ہزار 960 روپے جبکہ نوکیا 8 کی قیمت میں 13 ہزار 910 روپے کمی کی گئی ہے۔

May 15, 2018

فیس بک نے 200 ایپس کو معطل کردیا، جانیے کیوں ؟

جدت ویب ڈیسک ::فیس بک کمپنی ڈیٹا لیکس اسکینڈل کے بعد انتہائی محتاط ہوگئی ہے اور صارفین کا اعتماد بحال کرنے کے لیے سیکیورٹی کے سخت اقدامات کر رہی ہے۔
ان ہی اقدامات کے سلسلے میں فیس بک نے اُن 200 ایپس کو معطل کردیا ہے جو صارفین کا ڈیٹا بغیر اجازت غیر قانونی طور پر استعمال کر رہی تھیں۔فیس بک کے مطابق ہر اُس ایپ کو بند کیا جارہا ہے جس نے ڈیٹا غیر قانونی طور پر استعمال کیا ہے۔ ان سلسلے میں اب تک 200 ایپس کا انکشاف ہوا ہے جب کہ اب بھی کئی ایپس کی جانچ پڑتال جاری ہے۔فیس بک بلاگ پوسٹ کے مطابق کمپنی نے ایک ہزار سے زائد ایپس کی جانچ پڑتال شروع کردی ہے، جس کے دوران یہ معلوم کیا جارہا ہے کہ صارفین کا فیس بک ڈیٹا کون کون غلط جگہ پر استعمال کر رہا ہے۔فیس بک پروڈکٹ کے نائب صدر آرکی بونگ نے بلاگ میں لکھا کہ ڈیٹا کے تحفظ کے لیے سخت اقدامات کیے جا رہے ہیں جس کے لیے تحقیقات زور و شور سے جاری ہیں۔انہوں نے لکھا کہ ‘ہماری ایک بڑی ٹیم ہے جو اندرونی اور بیرونی طور پر تحقیقات کر رہی ہے تاکہ دیگر ایپس کے حوالے سے بھی جلد معلومات حاصل کی جاسکیں’

May 14, 2018

ناسا نے مریخ پر ہیلی کاپٹر بھیجنے کا اعلان کردیا،تفصیل جانیے

نیویارک:جدت ویب ڈیسک :: امریکی خلائی تحقیقاتی ادارے ناسا نے مریخ پر ایک ہیلی کاپٹر بھیجنے کا اعلان کردیا ہے تاکہ معلوم کیا جاسکے کہ مریخ پر بھاری مشینوں کی اڑان سے کیا نتائج برآمد ہوتے ہیں۔
تفصیلات کے مطابق ناسا نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ دو سال بعد مریخ پر ایک ’روور‘ بھیجی جائے گی جس کی نچلی سطح سے ایک چھوٹا ہیلی کاپٹر منسلک کیا جائے گا۔ناسا کی جانب سے جاری کردہ تفصیلات کے مطابق ہیلی کاپٹر کو زمین سے دی جانے والی ہدایات کے ذریعے اڑایا جائے گا۔ بتایا گیا ہے کہ اس ہیلی کاپٹر کے پنکھے زمین پر اڑنے والے ہیلی کاپٹر سے دس گنا تیز چلیں گے، جس کی وجہ مریخ کی انتہائی لطیف ہوا ہے۔ناسا کا کہنا ہے کہ یہ منصوبہ ’ہائی رسک، ہائی ریوارڈ‘ یعنی ’بڑا خطرہ اور بڑا ثمر‘ کے مترادف ہے۔ اگر یہ ہیلی کاپٹر مریخ مشن 2020 میں اس طرح کامیاب نہ ہوا جیسا سوچا گیا ہے، تو اس سے مشن کو بہ حیثیت مجموعی کوئی نقصان نہیں ہو گا۔ناسا کے مطابق روور مریخ پر پہنچے گا تو ہیلی کاپٹر اس سے علیحدہ ہوجائے گا، اس کا وزن دو کلو گرام سے بھی کم ہے اور حجم میں بیس بال کی ایک گیند کے برابر ہوگا۔یہ ہیلی کاپٹر مریخ کے ماحول میں اڑنے کے لیے تیار کیا جا رہا ہے جو شمسی توانائی سے چارج ہوگا اور اسی توانائی کو سردی میں درجہ حرارت برقرار رکھنے کے لیے استعمال کرے گا۔

May 10, 2018

’یاہو‘ کمپنی ایک نئی ’اسکوئرل ایپ‘ (Squirrel App) جلد متعارف کرائے گی

جدت ویب ڈیسک :: ’یاہو‘ کمپنی ایک نئی ’اسکوئرل ایپ‘ (Squirrel App) جلد متعارف کرائے گی
سوشل میڈیا کے اس دور میں میسجنگ ایپلیکیشنز کا استعمال عام سی بات ہے اور ایسی بہت ساری ایپس دستیاب ہیں جن میں تقریباً ایک جیسے فیچرز شامل ہوتے ہیں اور اب ’یاہو‘ کمپنی ایک نئی ’اسکوئرل ایپ‘ (Squirrel App) پیش کرنے جارہی ہے۔اس ایپ کو ایپل آئی او ایس اور گوگل کے اینڈرائڈ ورژن کے لیے پیش کیا جائے گا۔ ٹیک کرنچ کی رپورٹ کے مطابق یاہُو کمپنی کی جانب سے گروپ چیٹ کے لیے نئی ’اسکوئرل ایپ‘ متعارف کی جائے گی جو فی الحال آزمائشی مراحل میں ہے۔’اسکوئرل ایپ‘ میں دوست احباب سے یا کاروباری مقاصد کے لیے گروپ چیٹ اور چیٹ رومز کی سہولت فراہم کی جائے گی جب کہ متعدد ایپس میں گروپ فیچر پہلے سے دستیاب ہے۔تاہم صارفین اس ایپ تک صرف اسی صورت میں رسائی حاصل کرسکیں گے، جب انہیں کسی دوست کی جانب سے اس کا انویٹیشن موصول ہوگا۔اگرچہ اسکوئرل ایپ میں کوئی نیا فیچر شامل نہیں، تاہم یاہو کی جانب سے یہ یقین دہانی کروائی گئی ہے کہ اس کی پرائیوسیی دیگر ایپس کے مقابلے میں انتہائی سخت ہوگی جس سے صارفین مطمئن ہوں گے۔کمپنی کی جانب سے اسے مکمل طور پر گروپ ایپ رکھا جائے گا جب کہ ممکن ہے کہ اس میں پرائیویٹ چیٹ فیچر بھی شامل کردیا جائے۔

May 5, 2018

سورج میں سوراخ ، 6 مئی کو شمسی طوفان کا خطرہ ہے،ناسا سمیت مختلف عالمی سائنسی اداروں کی پیش گوئی

جدت ویب ڈیسک ::سائنسی ماہرین کا دعویٰ ہے کہ شمسی طوفان، سورج میں سوراخ ہوجانے کے باعث رونما ہوسکتا ہے جب کہ سورج کا سوراخ والا حصہ زمین کی طرف گردش کر رہا ہے۔
امریکی خلائی ادارہ ناسا کے مطابق شمسی طوفان، جسے جیو میگنیٹک طوفان (Geomagnetic Storm) بھی کہتے ہیں، کی مقناطیسی لہروں سے جزوی تکنیکی بلیک آؤٹ ہوسکتا ہے جبکہ فلائٹس اور سیٹلائٹ آپریشن بھی متاثر ہونے کا امکان ہے۔ ناسا نے خبردار کیا ہے کہ زمینی مقناطیسی فیلڈ متاثر ہونے سے بجلی کے ترسیلی نظام پر بھی اثر پڑے گا، جس سے پاور اسٹیشنز متاثر اور بجلی کی فراہمی منقطع ہوسکتی ہے۔شمسی طوفان کو 5 درجہ بندی یعنی G1 سے G5 تک میں تقسیم کیا گیا ہے، ان میں سے چار معمولی نوعیت کے ہوں گے جب کہ G5 کے خطرناک ثابت ہونے کی پیشگوئی کی گئی ہے۔دوسری جانب خلائی ادارے اسپیس ویدر پریڈکشن سینٹر نے اپنی ویب سائٹ پر 6 اور 7 مئی کو جیو میگنیٹک طوفان کے G1 ہونے کی پیشگوئی کی ہے۔نیشنل اوشیئن ایٹموسفرک ایڈمنسٹریشن (این او اے اے) کے مطابق طوفان شمالی اور جنوبی روشنی کی وجہ سے ہوسکتا ہے۔

May 5, 2018

واٹس ایپ نے صارفین کی بڑی پریشانی ختم کردی، نیا فیچر متعارف کرادیا

کیلی فورنیا: جدت ویب ڈیسک ::تفصیلات کے مطابق واٹس ایپ انتظامیہ کی جانب سےصارفین کو متاثر کرنے کے لیے آئےروز نت نئے فیچرز متعارف کروائے جاتے ہیں جس کا مقصد بہتر سروس مہیا کرنا ہے۔انتظامیہ نے رواں سال کے آغاز کے بعد ویسے تو ایپلی کیشن میں بہت سی اہم تبدیلیاں کیں مگر ایک مسئلہ ایسا تھا جو اینڈرائیڈ ورژن استعمال کرنے والے صارفین کے لیے سر کا درد بنا ہوا تھا۔
واٹس ایپ نے صارفین کی خواہش کو مدنظر رکھتے ہوئے وائس میسج بھیجنے کے حوالے سے فیچر متعارف کرایا جس کے بعد اب آواز والا آڈیو پیغام اُسی پلیٹ فارم پر محفوظ ہوگا۔
موبائل ایپ کے بیٹا ورژن صارفین کے لیے فیچر کی اپ ڈیٹ گوگل پلے اسٹور پر موجود ہے جبکہ کمپنی کا یہ بھی کہنا ہے کہ آزمائشی سروس کے بعد یہ سہولت عام صارفین کو بھی مہیا کردی جائے گی۔ قبل ازیں آئی فون (آئی او ایس iOS) استعمال کرنے صارفین اس سہولت سے استفادہ حاصل کررہے تھے۔اس سے قبل یہ سسٹم تھا کہ جب صارف وائس میسج کسی دوسرے نمبر پر بھیجتا تھا تو یہ پیغام فون میں ہی محفوظ رہتا تھا اور فارمیٹ یا گمشدہ ہونے کی صورت میں وہ میسج ضائع ہوجاتا تھا۔
کمپنی کی جانب سے ابھی یہ فیچر آزمائشی طور پر بیٹا ورژن صارفین کے لیے متعارف کرایا گیا، یعنی اب صارف جب بھی وائس میسج بھیجے گا تو فون تبدیل کرنے پر اُسے پیغامات اپیلیکشن ڈاؤن لوڈ ہونے کے بعد بیک اپ کی صورت میں آسانی سے مل جائیں گے۔واٹس ایپ کی جانب سے یہ بھی وضاحت کی گئی ہے کہ کسی دوست کو بھیجا جانے والا پیغام اگر صارف نے حذف بھی کردیا تب بھی وہ دوبارہ سے آسانی کے ساتھ مل سکے گا۔

April 30, 2018

گوگل چیٹ کے لیے نیا مسینجر متعارف ۔۔۔۔۔جانیے

کیلی فورنیا جدت ویب ڈیسک ::: انٹرنیٹ کے سب سے بڑے ادارے گوگل چیٹ کے لیے نیا مسینجر متعارف کروانے جارہا ہے جو آئی فون اور فیس بک کی طرز پر بنایا گیا ہے۔
گوگل کے نئے چیٹ میسنجر کی کچھ تفصیلات سامنے آئی ہیں جن کے مطابق اگر کسی صارف کا فون انٹرنیٹ سے کنیکٹ نہیں ہوگا تو اُس کے پاس پیغام ٹیکسٹ میسج کی صورت میں پیغام پہنچ جائے گا، علاوہ ازیں میسنجر میں گروپ میسجز، ویڈیو بھیجنے اور پیغام وصول کرنے والے کے بارے میں بھی صارف کو آگاہ کیا جائے گا۔اینڈائیڈ ورژن کے تمام سیٹوں میں گوگل کا نیا میسنجر استعمال کیا جاسکے گا، صارف کی تمام چیٹ کمپنی کے پاس بالکل محفوظ ہوگی اور کوئی بھی موبائل کمپنی کو یہاں تک پہنچنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ گوگل کے ترجمان کا کہنا تھا کہ ’کمپنی نے پرانے میسجنگ پلیٹ فارم ’آلو‘ پر کام گذشتہ دو برس سے روک دیا اور نئی سروس پر کام تیزی سے جاری ہے۔
برطانوی اخبار سے بات کرتے ہوئے راگو گوپال کا کہنا تھا کہ ’جی ایس ایم اے کمپنی اس ضمن میں گذشتہ کئی عرصے سے کام کررہی ہے اور ہماری کوشش ہے کہ وائس میسج بھیجنے کے لیے دیگر ایپس کی طرح تھرڈ پارٹی کو شامل نہ کریں‘۔اُن کا کہناتھا کہ مسیجنگ ایپ کے حوالے سے گوگل کا ماننا ہے کہ وہ بہت دیر کرچکے جب ہی کچھ ایسے فیچرڈ ایپ میں شامل کیے جارہے ہیں جو ابھی تک کسی نے بھی استعمال نہیں کیے یا پھر وہ بالکل منفرد ہیں۔گوگل پروجیکٹ کے سربراہ انیل کا کہنا تھا کہ ’ہم نے مسینجر کی تیاری ایپل یا فیس بک کے سسٹم کو دیکھ کر نہیں کی بلکہ یہ ہماری تکنیکی ٹیم کی اپنی تخلیق ہے‘۔ اُن کا کہنا تھا کہ ’گوگل کی ہمیشہ سے کوشش رہی کہ وہ صارفین کو اچھی اور محفوظ سروس فراہم کرے تاکہ ہماری پروڈکٹ کا اعتماد مارکیٹ میں وقت کے ساتھ بڑھتا رہے‘۔کمپنی کا ماننا ہے کہ اُن کا نیا مسینجر صارفین کو نہ صرف متوجہ کرے گا بلکہ دیگر سروسز کے مقابلے میں بھی سرفہرست رہے گا جس کی وجہ منفرد سہولیات ہیں،مسینجر کی ریلیز سے قبل گوگل کی کوشش ہے کہ وہ تمام موبائل بنانے والی کمپنیوں نے رابطہ کر کے پیغام رسانی کے سسٹم کو اپ ڈیٹ کروادے تاکہ صارفین کو بہتر سے بہتر سروس فراہم کی جائے۔

April 30, 2018

یو ٹیوب نے تین ماہ میں 0 8لاکھ سے زائد ویڈیوز ڈیلیٹ کردیں،جانیے

نیویارک جدت ویب ڈیسک :: : انٹرنیٹ کی معروف ویڈیو شیئرنگ ویب سائٹ یو ٹیوب نے تین ماہ میں اسی لاکھ سے زائد ویڈیوز ڈیلیٹ کردیں، یوٹیوب نے 47 لاکھ شکایت کے بعد یہ ویڈیوز ہٹائیں۔
تفصیلات کے مطابق معروف ویڈیو شیئرنگ ویب سائٹ یوٹیوب نے اپنی انفورسمنٹ رپورٹ جاری کردی، جس میں کمپنی کا کہنا ہے کہ دوہزار سترہ میں اکتوبر سے دسمبر کے دوران تیراسی لاکھ ویڈیوز ویب سائٹ سے ہٹائی گئیں۔رپورٹ میں بتایا گیا بچوں کو جنسی ہراساں، دہشت گردی اور انتشار پھیلانے والی تقاریر کی ویڈیوز ڈیلیٹ کی گئیں۔رپورٹ کے مطابق نوے لاکھ سے زائد ویڈیوز کیخلاف سینتالیس لاکھ شکایتیں موصول ہوئیں ، شکایت درج کرنے والے ممالک میں امریکہ، برازیل، سعودی عرب ، بھارت ، روس ، جرمنی ، میکسیکو، ترکی، انڈونیشیا اور سعودی عرب شامل ہیں۔
یوٹیوب کا کہنا ہے کہ خلاف ورزی پر مبنی مواد پر زیادہ تر شکایات بھارت، امریکہ اور برازیل سے آئیں جبکہ ضابطۂ کار کی نگرانی کے نظام نے 67 لاکھ ویڈیوز کی نشاندہی کی، جسے بعد میں مختلف معائنہ کاروں کو بھیجنے کے بعد ڈیلیٹ کیا گیا۔دوسری جانب یو ٹیوب نے مطلع کرنے کے طریقہِ کار کے ساتھ ساتھ اپنے صارفین کے لیے ایک اور سہولت بھی متعارف کروانے کا اعلان کیا، جس کے ذریعے صارفین غیر مناسب مواد پر مبنی ویڈیوز کے حیثیت کا بھی پتہ لا سکتے ہیں۔کمپنی نے مزید بتایا کہ کہ اگر ڈیلیٹ کی گئی ویڈیوز دوبارہ اپ لوڈ کی جائیں گی تو محفوظ فنگر پرنٹ کے ذریعے ان کا پتہ لگایا جاسکے گا۔