July 12, 2017

کرکٹ بورڈ کاقومی کرکٹرز کیلئے نئے سینٹرل کنٹریکٹ کا اعلان

لاہور جدت ویب ڈیسک پاکستان کرکٹ بورڈ نے قومی کرکٹرز کیلئے نئے سینٹرل کنٹریکٹ کا اعلان کردیا نئے سینٹرل کنٹریکٹ میں35 کھلاڑیوں کے نام شامل ہیں اورانہیں 4 کیٹیگریزمیں رکھا گیا ہے ،کھلاڑیوں کامعاوضہ 10 فیصد بڑھایا گیا ہے بتایا گیا ہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ نے 35 کرکٹرز کو سال 2017-18کے لیے سینٹرل کنٹریکٹ دینے کا اعلان کردیا ہے۔انئے سینٹرل کنٹریکٹ کا اطلاق یکم جولائی2017 سے تیس جون 2018 تک ہوگا۔کرکٹرز کے معاوضے دس فیصد اضافہ بھی کیا گیا ہے ۔گزشتہ کنٹریکٹ 30کھلاڑیوں کو دیا گیا تھا جن میں سے 22 نیا کنٹریکٹ حاصل کرنے میں کامیاب رہے ہیں 8کھلاڑی عمر اکمل ،عمران خان سینئر ، محمد عرفان، خالد لطیف، شرجیل خان، سہیل تنویر، عمر اکمل، انور علی اور ذوالفقار بابر اس بار سینٹرل کانٹریکٹ حاصل نہیں کر پائے۔کرکٹرز کو چار مختلف کیٹگریز میں سینٹرل کنٹریکٹ دئیے گئے ہیں۔پاکستانی فاسٹ بولر محمد عامر اس مرتبہ اے کیٹیگری میں شامل کیے گئے ہیں جبکہ ان کے ہمراہ اے کیٹیگری کا کنٹریکٹ پانے والے دیگر پانچ کھلاڑیوں میں کپتان سرفراز احمد، اظہر علی، شعیب ملک، یاسرشاہ اور محمد حفیظ شامل ہیں۔بی کیٹیگری میں اسد شفیق اپنی جگہ برقرار رکھنے میں کامیاب رہے جبکہ گزشتہ سال سی کیٹگری میں شامل تین کرکٹرز بابر اعظم، عماد وسیم اور آئی سی سی چیمپیئنز ٹرافی کے بہترین کھلاڑی حسن علی ترقی کے بعد بی کیٹیگری میں شامل کیے گئے ہیں۔گیارہ کرکٹرز کو سی کیٹگری میں رکھا گیا ہے اور ان میں بی کیٹیگری سے تنزلی پانے والے وہاب ریاض اور راحت علی کے علاوہ حارث سہیل، سمیع اسلم، شان مسعود، سہیل خان، فخر زمان، جنید خان، احمد شہزاد، محمد عباس اور شاداب خان شامل ہیں۔احمد شہزاد گزشتہ کنٹریکٹ میں ڈی کیٹیگری میں شامل تھے تاہم اس مرتبہ انہیں سی کیٹیگری دی گئی ہے جبکہ آئی سی سی چیمپینئز ٹرافی کے فائنل میں سنچری بنانے والے فخر زمان پہلی مرتبہ براہِ راست سی کیٹیگری میں ہی شامل کیے گئے ہیں۔سب سے زیادہ 14 کھلاڑیوں کو ڈی کیٹیگری ملی ہے جن میں محمد نواز اور محمد رضوان ایک درجہ تنزلی کے بعد سی سے ڈی میں آئے ہیں جبکہ دیگر کھلاڑیوں میں آصف ذاکر، عثمان صلاح الدین، عامر یامین، عثمان شنواری، فہیم اشرف، رومان رئیس، امام الحق، بلال آصف، میر حمزہ، عمر امین، محمد حسن اور محمد اصغر شامل ہیں۔نئے کنٹریکٹ میں کرکٹرز کے معاو میں 10 فیصد اضافہ کیا گیا ہے جس کے بعد کیٹیگری اے میں شامل کھلاڑیوں کو 6لاکھ 50 ہزار، بی 4لاکھ 50ہزار، سی 2لاکھ 60ہزار جبکہ ڈی والوں کو ایک لاکھ 79ہزار روپے ماہانہ ملیں گے۔

July 12, 2017

انتالیس سال بعد برطانوی خاتون ومبلڈن کے سیمی فائنل میں پہنچ گئیں

لندن جدت ویب ڈیسک برطانیہ کی جوانا کونٹا رومانیہ کی سیمونا ہیلپ کو شکست دےکر 1978 کے بعد ومبلڈن اوپن کے سیمی فائنل میں پہنچنے والی پہلی برطانوی خاتون کھلاڑی بن گئی ہیں۔ٹینس کی عالمی درجہ بندی میں چھٹے نمبر پر براجمان جوانا کونٹا نے منگل کو کھیلے جانے والے کوارٹر فائنل میں سیمونا ہیلپ کو 6-7، 2-7، 7-6، 7-5، اور 6-4 کے فرق سے شکست دی۔برطانوی ٹینس سٹار کا دو گھنٹے سے زیادہ وقت تک جاری رہنے والے اس مقابلے کو جیتنے کے بعد کہنا تھا کہ مجھے ہمیشہ سے ہی اپنی قابلیت پر بھروسہ تھا اور میں نے ہمیشہ ہی بڑے خواب دیکھے ہیں۔برطانیہ کی سابق چمپئن 72 سالہ ورجینیا ویڈ نے جوانا کونٹا کا مقابلے دیکھنے کےلئے ومبلڈن کے میدان میں موجود تھیں۔انھوں نے جوانا کونٹا کی شاندار فتح کے بعد کہا کہ میں جوانا کونٹا کےلئے بہت خوش ہیں ¾مجھے پتہ ہے کہ میچ کے دوران کتنا دباؤ ہوتا ہے؟ومبلڈن اوپن کے سیمی فائنل میں جوانا کونٹا کا مقابلہ امریکہ کی وینس ولیمز سے جمعرات کو ہو گا۔