September 24, 2020

پی سی بی نے پشاور کو پی ایس ایل کی میزبانی دینے سے معذرت کرلی

پشاور: جدت ویب ڈیسک :پاکستان کرکٹ بورڈ نے پشاور کو پی ایس ایل کی میزبانی دینے سے معذرت کرلی۔ارباب نیاز کرکٹ اسٹیڈیم کے بعد حیات آباد کرکٹ اسٹیڈیم بھی بروقت مکمل نہ ہونے پر پاکستان کرکٹ بورڈ نے پشاور کو پی ایس ایل کی میزبانی دینے سے معذرت کرلی جب کہ فیصلے سے متعلق صوبائی حکومت کو آگاہ کردیا ہے۔پی ایس ایل کے چھٹے سیزن کے لیے پشاور کو بھی میزبانی دینے کا اعلان کیا گیا تھا اور پشاور کے ارباب نیاز کرکٹ اسٹیڈیم کو جدید طرز پر بنانے کے لیے منصوبہ شروع کیا گیا لیکن منصوبہ بروقت مکمل نہ ہونے کی وجہ سے پی ایس ایل کے میچز کے انعقاد کو ناممکن قراردیا گیا تاہم وزیراعلی محمود خان کی خواہش پر پی ایس ایل کے میچز کے انعقاد کو ممکن بنانے کے لیے حیات آباد کرکٹ اسٹیڈیم کو توسیع دینے پر کام شروع کیا گیا لیکن پی سی بی کی ٹیم کے معائنے کے بعد رپورٹ کی روشنی میں پاکستان کرکٹ بورڈ نے پشاور کو میزبانی سے معذرت کرلی ہے۔

September 24, 2020

انڈر 19 کرکٹر کے حالات دیکھ کر محمد حفیظ کا دل رو پڑا

لاہور:جدت ویب ڈیسک : انڈر19کرکٹر کے حالات دیکھ کر محمد حفیظ کا دل رو پڑا، انہوں نے جونیئر ورلڈ کپ 2016 میں پاکستان کی نمائندگی کرنے والے احمد شفیق کی بے روزگاری پر آل راونڈر نے افسردگی کا اظہار کیا ہے۔پی سی بی کی جانب سے متعارف کروائے جانے والے نئے ڈومیسٹک اسٹرکچر کی وجہ سے کرکٹرز کی بڑی تعداد بے روزگار ہوئی،کئی اپنی نوکریوں سے ہاتھ دھونے والے ہیں،چند نوجوان کھلاڑیوں کو مسلسل نظر انداز کیا گیا، کسی ٹیم میں جگہ نہ بنا پانے کی وجہ سے وہ ماہانہ تنخواہ سے بھی محروم ہوئے اور دلبرداشتہ ہوکر کھیل کو ہمیشہ کیلیے خیرباد کہنے کا فیصلہ کررہے ہیں، ان میں سے ایک احمد شفیق بھی ہیں۔انہوں نے کہا کہ انڈر 19ورلڈکپ میں پاکستان کی نمائندگی کرنے والے باصلاحیت کرکٹر کا ستارہ کچھ انداز میں گردش میں آیاکہ مسلسل2 سال سے نظر انداز کئے جاتے رہے ہیں، اب انھوں نے ہمیشہ کیلیے کرکٹ چھوڑنے کا فیصلہ کیا ہے۔اس حوالے سوشل میڈیا پر پیغام پر محمد حفیظ نے اپنے ردعمل میں کہا کہ بڑی افسوسناک حقیقت ہے، مواقع اور مالی مدد نہ ملنے کی وجہ سے مسائل پیدا ہورہے ہیں۔یاد رہے کہ محمد حفیظ، مصباح الحق اور اظہر علی کے ہمراہ کرکٹرز کی بے روزگاری کا مقدمہ لے کر وزیر اعظم عمران خان کے پاس بھی گئے تھے لیکن کامیابی نہ حاصل ہوسکی۔

September 23, 2020

مصباح الحق کی تاحال صوبائی ٹیموں کے نئے کوچز سے ملاقات نہ ہوسکی

لاہور:جدت ویب ڈیسک : چیف سیلیکٹر اور ہیڈ کوچ مصباح الحق کو تاحال صوبائی ٹیموں کے نئے کوچز سے ملاقات کا موقع نہیں مل سکا۔اب ملتان میں 30 ستمبر سے شروع ہونے والے ٹی ٹوئنٹی ٹورنامنٹ کے موقع پر سلیکٹرز کی بیٹھک ہوسکے گی یا پھر زوم پر میٹنگ کسی بھی وقت پلان کی جائے گی، کوویڈ ایس اوپیز کی وجہ سے صوبائی ٹیموں کے تمام کوچز بائیو ببل کا حصہ ہیں تاہم چیف سلیکٹر کو اس ببل کا حصہ بننے کیلیے دو کورونا ٹیسٹ کرانا ہوں گے اور رپورٹ منفی آنے پر وہ سلیکشن ٹیم سے مل سکیں گے۔پی سی بی نے صوبائی ٹیموں کے کوچز کی تقرری کا اعلان اس وقت کیا تھا جب مصباح الحق انگلینڈ میں تھے، یہ کوچز مصباح الحق کی سلیکشن کمیٹی کا بھی حصہ ہیں، وطن واپسی کے بعد مصباح الحق کی ڈائریکٹر ہائی پرفارمنس سینٹر ندیم خان سے تو کوچز کی سلیکشن پر بات چیت ہوئی تھی تاہم ابھی تک باسط علی، فیصل اقبال، محمدوسیم، شاہد انور، عبدالرحمن اور عبدالرزاق سے باقاعدہ میٹنگ نہیں ہوپائی۔ ایک دو کوچز سے راہ چلتے ان کی سلام دعا ضرور ہوئی ہے تاہم سب کے ساتھ باقاعدہ میٹنگ نہیں ہوسکی۔

September 22, 2020

پی سی بی کا نیشنل ٹی ٹوئنٹی کپ کیلیے 90 لاکھ روپے انعامی رقم کا اعلان

لاہور:ویب ڈیسک : پاکستان کرکٹ بورڈ نے نیشنل ٹی ٹوئنٹی کپ کے لیے 90 لاکھ روپے کی انعامی رقم کا اعلان کیا ہے۔ ملک بھر سے تعلق رکھنے والے محدود طرز کی کرکٹ کے بہترین کھلاڑی 30 ستمبر سے ملتان میں شروع ہونے والے نیشنل ٹی ٹوئنٹی کپ میں جلوہ گر ہوں گے۔ ڈومیسٹک کرکٹ سیزن 21-2020 کے اس ابتدائی ٹورنامنٹ میں مجموعی طورپر تقریبا 90 لاکھ روپے کی انعامی رقم تقسیم ہوگی۔ ایونٹ کی فاتح ٹیم کو 50 لاکھ روپے کی انعامی رقم دی جائے گی جبکہ دوسری فائنلسٹ ٹیم 25 لاکھ روپے کی حقدار ٹھہرے گی، یہی نہیں بلکہ ٹورنامنٹ کے بہترین کھلاڑی، بیٹسمین، بالر اور وکٹ کیپر کو ایک ایک لاکھ روپے کی انعامی رقم بھی دی جائے گی۔سیزن کے پہلے ٹورنامنٹ کے دوران ہر میچ کے بہترین کھلاڑی کو 25 ہزار روپے دیے جائیں گے جب کہ ڈبل لیگ کی بنیاد پر کھیلے جانے والے اس ایونٹ کے مین آف دی فائنل کو بطور انعام 35 ہزار روپے ملیں گے۔ ایونٹ کا فائنل 18 اکتوبر کو پنڈی کرکٹ اسٹیڈیم راولپنڈی میں کھیلا جائے گا۔ ٹورنامنٹ میں تقسیم ہونے والی 90 لاکھ روپے کی انعامی رقم ڈومیسٹک کنٹریکٹ کے حامل کھلاڑیوں کو ملنے والے ماہوار وظیفے اور میچ فیس کے علاوہ ہے۔ ادھر سیزن 21-2020 کا ڈومیسٹک کنٹریکٹ حاصل کرنے والا ایک کرکٹر ماہوار وظیفے اور میچ فیس کی مد میں سالانہ 18 سے 32 لاکھ روپے (کٹیگری کے اعتبار سے ) کمائے گا۔

September 21, 2020

پاکستان کرکٹ کے بڑوں کو قائمہ کمیٹی نے طلب کرلیا

لاہور: جدت ویب ڈیسک : پاکستان کرکٹ کے بڑوں کو قائمہ کمیٹی نے بلا لیا،چیئرمین احسان مانی،چیف ایگزیکٹیو وسیم خان اور ڈائریکٹر ہائی پرفارمنس ندیم خان قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے قانون و استحقاق کے اجلاس میں بدھ کو پیش ہوں گے، انھیں وہاں چوہدری محمد حامد حمید کی طرف سے ملازمین کی بھاری تنخواہوں کے حوالے سے اٹھائے گئے سوالات کے جواب دینا ہوں گے۔دوسری جانب ملکی کرکٹ کے فیصلہ سازوں نے نتھیا گلی کے پرفضا مقام پر اگلے تین سالہ پلان پرتفصیلی مشاورت مکمل کرلی،احسان مانی کی زیرصدارت ہونے والے اجلاس میں تمام شعبوں کے سربراہان نے شرکت کی تھی، شرکا نے 2سالہ کارکردگی کا جائزہ لینے کے ساتھ مستقبل کی حکمت عملی پر تبادلہ خیال کیا۔ پی سی بی ترجمان کے مطابق یہ ایک معمول کا اجلاس تھا جس میں سب نے اپنی کارکردگی رپورٹ پیش کی اور مستقبل کے لائحہ عمل پر نقطہ نظر بیان کیا۔ذرائع کے مطابق اجلاس میں زمبابوے سے سیریز کی تیاریوں کو حتمی شکل دے دی گئی، اگلے ماہ مہمان ٹیم کی آمد کے پیش نظر مجوزہ شیڈول اور سیکیورٹی انتظامات سمیت تمام معاملات پر حکومتی عہدیداروں کو اعتماد میں لینے کے بعد سیریز کے پروگرام کا باقاعدہ اعلان چند روز میں کیا جائے گا۔

September 20, 2020

قومی ٹیم کے فاسٹ بولر شاہین آفریدی نے کاؤنٹی کرکٹ میں دھوم مچادی

لندن:ویب ڈیسک :: قومی ٹیم کے فاسٹ بولر شاہین شاہ آفریدی نے وائٹلٹی بلاسٹ میں ہمپشائر کی نمائندگی کرتے ہوئے 6 وکٹیں حاصل کیں اور میچ کے بہترین کھلاڑی قرار پائے۔

تفصیلات کے مطابق قومی ٹیم کے فاسٹ بولر شاہین شاہ آفریدی نے ہمپشائر کی نمائندگی کرتے ہوئے مڈل سیکس کے خلاف 4 گیندوں پر چار وکٹیں حاصل کیں، شاہین آفریدی نے مقررہ 4 اوورز میں 19 رنز دے کر 6 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی۔

شاہین آفریدی نے تمام کھلاڑیوں کو کلین بولڈ کیا، پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے شاہین آفریدی کی بولنگ کی ویڈیو سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر شیئر کردی۔

اس سے قبل ہمپشائر نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے مقررہ اوورز میں 9 وکٹوں کے نقصان پر 141 رنز بنائے، ہولینڈ اور ایلسوف 25، 25 رنز بنا کر نمایاں رہے۔

مڈل سیکس کی جانب سے این اے سوٹر نے تین اور ہول مین نے دو وکٹیں حاصل کیں۔

مڈل سیکس کی ٹیم 142 رنز کے تعاقب میں شاہین شاہ آفریدی کی تباہ بولنگ کے سامنے 18.1 اوورز میں 121 رنز پر ڈھیر ہوگئی، سیمپسن نے 48 رنز کی ذمہ دارانہ اننگز کھیلی انہیں بھی شاہین آفریدی نے کلین بولڈ کیا۔

شاہین شاہ آفریدی کو 6 وکٹیں حاصل کرنے پر میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔

واضح رہے کہ چند روز قبل قومی ٹیم کے کپتان بابر اعظم نے گلیمورگن کی نمائندگی کرتے ہوئے ناقابل شکست 114 رنز کی میچ وننگ اننگ کھیلی تھی، بابر اعظم کو شاندار سنچری اسکور کرنے پر میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا تھا

September 20, 2020

پاکستان کرکٹ بورڈ کا نتھیا گلی میں جاری 2 روزہ اجلاس ختم

لاہور:جدت ویب ڈیسک : بورڈ چیئرمین احسان مانی کی صدارت میں نتھیا گلی میں جاری پی سی بی کا 2 روزہ اجلاس ختم ہوگیا۔ پی سی بی ترجمان کے مطابق یہ ایک انٹرنل اجلاس تھا جس میں سب نے اپنی کارکردگی رپورٹ پیش کی اور مستقبل کے لائحہ عمل پر اپنا نقطہ نظر بیان کیا۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں زمبابوے کے خلاف سیریز، ڈومیسٹک کرکٹ اور دوسرے اہم امور پر غور کرنے کے ساتھ بعض اہم سفارشات پر اتفاق کرنے کے بعد گورننگ بورڈ کے شرکا کو بھی اعتماد میں لینے کا فیصلہ کیا گیا جب کہ کوڈ آف ایتھکس کو لاگو کرنے پر بھی زور دیا گیا۔احسان مانی کی صدارت میں ہونے والے اجلاس میں بورڈ کے تمام شعبوں کے ہیڈز نے شرکت کی، شرکا نے 2 سالہ کارکردگی کا جائزہ لینے کے ساتھ مستقبل کی حکمت عملی پر بھی مشاورت کی۔ اطلاعات کے مطابق احسان مانی نیشنل اسٹینڈنگ کمیٹی کے اجلاس میں شرکت کریں گے جو 23 ستمبر کو اسلام آباد میں ہی طلب کیا گیا ہے، ان کے ساتھ چیف ایگزیکٹو وسیم خان اور ڈائریکٹر ہائی پرفارمنس ندیم خان بھی اس اجلاس میں شریک ہوں گے۔

September 16, 2020

کاؤنٹی کے دوران نسلی تعصب کا سامنا کرنا پڑا، رانا نوید کا انکشاف

لاہور: ویب ڈیسک :: سابق ٹیسٹ کرکٹر رانا نوید الحسن کا کہنا ہے کہ یارکشائر کی جانب سے کھیلتے ہوئے نسلی تعصب کا سامنا کرنا پڑا۔
تفصیلات کے مطابق سابق ٹیسٹ کرکٹر رانا نوید الحسن بھی پاکستانی نژاد اسپنر عظیم رفیق کے دفاع میں سامنے آگئے، رانا نوید نے کہا کہ یارکشائر کی نمائندگی کے دوران انہیں بھی نسلی تعصب کا نشانہ بنایا گیا۔
رانا نوید الحسن کا کہنا تھا کہ وہ عظیم رفیق کی بات سے اتفاق کرتے ہیں، یارکشائر کلب کے مداح کارکردگی نہ دکھانے پر جملے کستے تھے۔
سابق ٹیست کرکٹر کا کہنا تھا کہ کاؤنٹی میں ایشیائی کرکٹرز کو کم تر سمجھا جاتا ہے، میں نے ان سب چیزوں کی پرواہ کیے بغیر صرف کرکٹ پر توجہ دی۔
رانا نوید نے بتایا کہ کیریئر کے دوران اس بات کا ذکر اس لیے کرنا مناسب نہیں سمجھا کہ ہم غیرملکی کھلاڑی تھے اور اس طرح کی گفتگو کرکے اپنا کیریئر خراب نہیں کرنا چاہتے تھے۔
واضح رہے کہ حال ہی میں یارکشائر کلب میں نسلی تعصب کا شکار ہونے والے عظیم رفیق نے میڈیا کو بتایا تھا کہ وہ ساتھی کرکٹرز اور آفیشلز کے امتیازی سلوک سے اتنا پریشان تھے کہ انہوں نے خودکشی کا سوچ لیا تھا۔