May 21, 2018

برازیلین فٹ بال ٹیم 17 جون کو عالمی ٹائٹل کیلئے مہم کا آغاز کرے گی

ریوڈی جنیرو جدت ویب ڈیسک :برازیل کی فٹ بال فیڈریشن نے آئندہ ماہ شیڈول ورلڈ کپ فٹ بال ٹورنامنٹ کیلئے 23 رکنی سکواڈ کا اعلان کر دیا، سٹار فٹ بالر نیمار کو انجری مسائل کے باوجود ٹیم میں شامل کر لیا گیا ہے، رواں سال مارچ میں نیمار کے پائوں کی سرجری ہوئی تھی اور برازیل ٹیم ڈاکٹر نے کہا تھا کہ نیمار تین ماہ تک فٹ بال نہیں کھیل سکیں گے جس کی وجہ سے ان کی میگا ایونٹ میں شرکت غیریقینی صورتحال کا شکار تھی۔ میگا ایونٹ 14 جون سے 15 جولائی تک روس میں کھیلا جائے گا، برازیلین ٹیم کو گروپ ای میں کوسٹا ریکا، سربیا اور سوئٹزرلینڈ کا چیلنج درپیش ہو گا اور وہ 17 جون کو عالمی ٹائٹل کیلئے مہم کا آغاز کرے گی۔ اعلان کردہ سکواڈ نیمار، تیاسن، گبرائل جیسز، روبرٹو فرمینو، ایلیسن، ایڈرسن، کاسیو، ڈانیلو، فاگنر، مارسیلو، فلپ لوئس، تھیاگو سلوا، مارکنہوس، میرانڈا، کاسمیرو، فرننڈنہو، پائولنہو، فریڈ، ریناٹو، فلپ کوٹنہو، ولین اور ڈوگلس پر مشتمل ہے۔

May 21, 2018

ڈیئرڈیولز نے دفاعی چمپئن ممبئی انڈینز کو آئی پی ایل سے باہر کردیا

نئی دہلی جدت ویب ڈیسک : انڈین پریمیر لیگ میں دہلی ڈیئر ڈیولز نے دفاعی چمپئن ممبئی انڈینز کو آخری میچ میں 11 رنز سے ہرا کر لیگ سے باہر کرتے ہوئے ٹائٹل کے دفاع کا خواب چکنا چور کردیا۔ممبئی انڈینز نے رواں برس ایونٹ کا آغاز کچھ اچھے انداز میں نہیں کیا اور انہیں ابتدا میں اپنے اکثر میچوں میں شکست کا منہ دیکھنا پڑا تاہم گزشتہ چند میچوں میں ٹیم نے شاندار واپسی کی البتہ اسے پلے آف تک رسائی کےلئے اپنے آخری لیگ میں لازمی فتح درکار تھی۔گزشتہ روز کھیلے گئے آئی پی ایل کے 55ویں میچ میں دہلی ڈیئر ڈیولز نے پہلے کھیلتے ہوئے مقررہ اوورز میں 4 وکٹوں کے نقصان پر 174 رنز بنائے۔ریشابھ پانٹ نے 4 چھکوں کی مدد سے 64 رنز کی دلکش اننگز کھیلی جبکہ وجے شنکر 43 رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہے، ان کے علاوہ آسٹریلین گلین میکسویل نے 22 رنز بنائے۔ممبئی انڈینز کی جانب سے کرونل پانڈیا، جسپریت بمراہ اور مارکنڈ نے ایک، ایک وکٹ لی۔جواب میں ممبئی انڈینز کی ٹیم ہدف کے تعاقب میں آخری اوور کی تیسری گیند پر 163 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی، ویسٹ انڈیز سے آئے ایون لوئس کی 48 اور بین کٹنگ کی 37 رنز کی جارحانہ اننگز بھی ٹیم کو شکست سے نہ بچا سکیں۔ممبئی انڈینز کے دیگر بڑے اسٹارز ناکامی سے دوچار ہوئے جہاں ہردک پانڈیا 27، کپتان روہت شرما 13، کیرن پولارڈ 7 رنز بنا سکے۔دہلی ڈیئر ڈیولز کی جانب سے امیت مشرا، پٹیل اور لیمی چن نے تین، تین کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا اور مشرا کو شاندار باؤلنگ پر میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا اور ممبئی انڈینز کی ٹیم آئی پی ایل سے باہر ہو گئی۔

May 21, 2018

لال چند راجپوت زمبابوین ٹیم کے کوچ مقرر

ہرارے جدت ویب ڈیسک :سابق بھارتی کرکٹر لال چند راجپوت کو مختصر دورانیے کےلئے زمبابوین کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ مقرر کردیا گیا جنہیں ہیتھ اسٹریک کی جگہ یہ ذمہ داری دی گئی ہے۔میڈیا رپورٹ کے مطابق راجپوت اور زمبابوے کرکٹ بورڈ کے درمیان ابتدائی طور پر تین ماہ کا معاہدہ طے پایا ہے تاہم اگر ان کی زیر کوچنگ ٹیم کی کارکردگی میں بہتری آئی تو ان کے معاہدے میں توسیع کی جا سکتی ہے۔نئے ہیڈ کوچ کی پہلی آسائنمنٹ جولائی میں شیڈول ہوم سہ ملکی ٹی ٹونٹی سیریز ہو گی جس میں میزبان زمبابوے کے علاوہ پاکستان اور آسٹریلیا کی ٹیمیں شرکت کریں گی۔یاد رہے کہ زمبابوے نے ٹیم کی 2019 ورلڈکپ تک رسائی میں ناکامی کے بعد پورے کوچنگ سٹاف کو برطرف کر دیا تھا۔لال چند راجپوت نے اپنے بیان میں کہا کہ زمبابوین ٹیم کا کوچ مقرر ہونے پر خوش ہوں، اس وقت یہ میرے لیے چیلنجنگ ہے تاہم میں اس کا سامنا کرنے کےلئے تیار ہوں، میری کوشش ہو گی کہ زمبابوین کرکٹ بورڈ کی توقعات پر پورا اتروں۔

May 21, 2018

میانداد نے بھی ٹیسٹ کرکٹ سے ٹاس ختم کرنے کی حمایت کر دی

لاہور جدت ویب ڈیسک : انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے نئے فیوچر ٹور پروگرام میں ٹیسٹ میچز کے دوران ٹاس ختم کرنے کی تجویز پر غور شروع کردیا ہے جس کی سابق عظیم پاکستانی بلے باز جاوید میانداد نے حمایت کردی ہے تاہم سابق کرکٹر سلیم الطاف اس تجویز کی مخالفت میں سامنے آ گئے ہیں۔آئی سی سی کی کرکٹ کمیٹی نئے فیوچر ٹور پروگرام میں شیڈول ٹیسٹ چمپئن شپ کے لیے ٹاس کو ختم کرنے پر بحث کرے گی جہاں اس تجویز کا بنیادی مقصد ہوم ٹیم کے ایڈوانٹج کو ختم کرنا ہے۔1877 میں انگلینڈ اور آسٹریلیا کے درمیان کھیلے گئے ٹیسٹ میچ کے بعد سے اب تک کھیلے گئے ہر ٹیسٹ میچ کا آغاز ٹاس سے ہی ہوا جس کے بعد ٹاس جیتنے والی ٹیم بیٹنگ یا باؤلنگ کا فیصلہ کرتی ہے۔روایت کے تحت ہوم ٹیم کا کپتان ٹاس اچھالتا ہے اور مہمان کپتان ہیڈ یا ٹیل بولتا ہے تاہم اب اس 140سال پرانی روایت کو ختم کرنے پر غور کیا جا رہا ہے۔آئی سی سی کرکٹ کمیٹی رواں ماہ کے آخر میں ممبئی میں شیڈول اجلاس میں ٹاس ختم کرنے یا نہ کرنے کے حوالے سے بحث کرے گی جہاں ٹاس کو ختم کرنے کا بنیادی مقصد مہمان ٹیم کو جیت کا یکساں مواقع فراہم کرنا ہے کیونکہ عام تاثر یہ ہے کہ میزبان ٹیم اپنی مرضی کی وکٹ تیار کرتی ہے جس سے میچ میں توازن برقرار نہیں رہتا جس کی وجہ سے کمیٹی اس بات پر بھی بحث کرے گی کہ کیا مہمان ٹیم کے کپتان کو بیٹنگ یا باؤلنگ کرنے کا اختیار دیا جا سکتا ہے؟۔قومی ٹیم کے سابق کپتان اور عظیم بلے باز جاوید میانداد نے اس تجویز کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ اگر آئی سی سی ٹاس ختم کرنے کی تجویز پر عمل کرتا ہے تو اس میں کوئی نقصاندہ بات نہیں کیونکہ اس کی بدولت میزبان ٹیم اپنے لیے موزوں وکٹ بنانے کے بجائے معیاری پچ تیار کرےگی۔124 ٹیسٹ میچ کھیلنے والے میانداد نے کہا کہ اس میں کوئی شک و شبہ نہیں کہ ٹاس میچ کا اہم جزو ہے تاہم بہتر نتائج کےلئے تجربہ تو کرنا پڑے گا اور ٹاس ختم کرنے کی تجویز اچھی معیاری وکٹیں بننے میں بھی مددگار ثابت ہو سکتی ہے کیونکہ موجودہ دور میں تیار کی جانے والی وکٹیں میزبان ٹیم کو غیرمنصفانہ مدد فراہم کرتی ہیں اور یہ مہمان ٹیموں کی جیت کی راہ میں بڑی رکاوٹ ہے۔دوسری جانب سابق کرکٹر سلیم الطاف اس تجویز کے مخالف نظر آئے اور انہوں نے ٹاس کے سلسلے کو برقرار رکھنے کی تجویز پیش کی۔انہوں نے کہا کہ ٹاس کھیل کا اہم اور روایتی حصہ ہے لہٰذا اسے ختم کرنے کی کوئی تْک نہیں۔ درحقیقت ٹاس کپتان کی قابلیت کو جانچنے کا بھی ایک ذریعہ ہے جہاں اسے ٹاس جیتنے کے بعد بیٹنگ یا باؤلنگ کا فیصلہ کرنا ہوتا ہے۔ بعدازاں اس کا فیصلہ میچ کے اختتام پر غلط یا صحیح ثابت ہوتا ہے جو اس کی ٹیم کی فتح یا شکست پر منتج ہوتا ہے۔انہوں نے کہا کہ میں پاکستان کرکٹ بورڈ چیف آپریٹنگ آفیسر کی حیثیت سے آئی سی سی کے اجلاسوں میں شرکت کرتا رہا ہوں جہاں وکٹوں کے معیار کو برقرار رکھنے کے لیے انٹرنیشنل کیوریٹر متعارف کرنے کی تجویز پر بھی مباحثے ہوئے۔سلیم الطاف نے تجویز پیش کی کہ ٹاس ختم کرنے کے بجائے انٹرنیشنل کیوریٹر کو وکٹ بنانے کی ذمے داری سونپی جائے جسے یہ ہدایات دی جائیں کہ وہ اسپورٹنگ وکٹیں تیار کرے۔انہوں نے کہا کہ بھارت اور پاکستان میں سلو اور اسپن کے لیے سازگار وکٹیں بنائی جاتی ہیں جو ان ٹیموں کی جیت میں کردار ادا کرتی ہیں کیونکہ اس خطے نے عموماً دنیا کے بہترین اسپنرز پیدا کیے ہیں۔ تاہم جب یہ دنووں ٹیمیں انگلینڈ، آسٹریلیا یا نیوزی لینڈ کا دورہ کرتی ہیں تو اچھی کارکردگی دکھانے میں ناکام رہتی ہیں کیونکہ ان ملکوں میں وکٹیں برصغیر کی نسبت بالکل مختلف ہوتی ہیں۔سلیم الطاف نے موقف اختیار کیا کہ کرکٹ کے لیے بہتر یہی ہے کہ اسپورٹنگ وکٹیں تیار کی جائیں جو بلے بازوں، اسپنرز اور فاسٹ باؤلرز کے لیے یکساں مددگار ہوں اور یہ آئی سی سی کے لیے بڑا چیلنج ہے۔

May 20, 2018

اٹالین اوپن ٹینس‘ ماریا شراپوا کو بھی شکست کا سامنا

روم جدت ویب ڈیسک :عالمی نمبر 2 اور اسپین کے ٹینس اسٹار رافیل نڈال نے اٹالین اوپن ٹینس میں فتوحات کا سلسلہ برقرار رکھتے ہوئے مینز سنگلز کے سیمی فائنل میں سابق عالمی نمبر ایک سربیا کے نوواک جوکوچ کو شکست دےدی جبکہ خواتین کے مقابلوں میں ماریا شراپوا کو بھی شکست کا سامنا کرنا پڑا۔تفصیلات کے مطابق مینز سنگلز کے پہلے سیمی فائنل میں نڈال نے انتہائی شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے جوکووچ کو اسٹریٹ سیٹ میں 7-6 اور 6-3 سے ہرا کر فائنل میں جگہ بنالی۔خواتین کے سیمی فائنل میں رومانیہ کی سیمونا ہیلپ نے روسی اسٹار ماریا شراپوا کو 4-6، 6-1 اور 6-4 سے شکست دے کر فائنل کےلئے کوالیفائی کرلیا۔یاد رہے کہ گزشتہ برس اٹالین اوپن کے فائنل میں نوواک جوکووچ کو جرمن کھلاڑی الیگزینڈر زیوریف نے شکست دے کر چمپئن بننے کا اعزاز حاصل کرلیا تھا۔جرمنی کے نوجوان کھلاڑی نے اس وقت کے عالمی نمبر 2 جوکووچ کو اٹالین اوپن کے فائنل میں 4-6، 3-6 سے شکست دے کر ٹائٹل اپنے نام کر لیا تھا۔انٹرنیشنل ٹینس فیڈریشن کی جانب سے رواں ہفتے کے آغاز میں جاری تازہ ترین اے ٹی پی اور ڈبلیو ٹی اے درجہ بندی میں راجر فیڈرر نے اپنے حریف رافیل نڈال کو پہلی پوزیشن سے محروم کر کے ایک مرتبہ پھر عالمی نمبر ایک بننے کا اعزاز حاصل کر لیا تھا۔آئی ٹی ایف نے میڈرڈ اوپن ٹینس ٹورنامنٹ کے بعد تازہ ترین اے ٹی پی اور ڈبلیو ٹی اے رینکنگ جاری کر دی جس کے تحت مینز میں سوئس اسٹار راجر فیڈرر نے ایک درجہ ترقی پا کر نڈال سے ٹاپ پوزیشن چھین لی۔نئی رینکنگ میں نڈال تنزلی کے بعد دوسرے نمبر پر چلے گئے جبکہ جرمن کھلاڑی اور میڈرڈ اوپن کے چیمپیئن الیگزینڈر زیوریف تیسرے، گریگور دمتروف چوتھے، مارلن سیلس پانچویں اور جان مارٹن ڈیل پوٹرو چھٹے نمبر پر برقرار ہیں۔کیون اینڈرسن ایک سیڑھی چڑھ کر ساتویں نمبر پر آ گئے ¾ سیم کیوری، باٹسٹا ایگٹ، جیک ساک اور ڈائیگو ایک، ایک اور لیوکاس پاؤلی دو درجے ترقی کے ساتھ بالترتیب 12ویں، 13ویں، 14ویں، 15 اور 16ویں نمبر پر آ گئے۔سابق عالمی نمبر ایک سربیا کے نوواک جوکووچ 6 درجے تنزلی کے بعد 18ویں نمبر پر چلے گئے جو ان کی 2006 کے بعد سے سب سے بدترین رینکنگ ہے جبکہ کائل ایڈمونڈ تین سیڑھیاں چڑھ کر 19ویں اور ہیون چنگ ایک درجہ ترقی پا کر 20ویں نمبر پر آ گئے۔