February 18, 2018

ٹیکس گوشوارے جمع کرانے میں تاخیر پر جرمانے لگانے پر غور

اسلام آباد جدت ویب ڈیسک :فیڈرل بورڈ آف ریونیو âایف بی آرá نے آئندہ مالی سال کے بجٹ میں نئے لوگوں کو ٹیکس نیٹ میں لانے اوردیر سے ٹیکس گوشوارے جمع کرانے کے رجحان کو ختم کرنے کے لیے آسٹریلوی، بھارتی اور برطانوی ٹیکس ماڈلزکا جائزہ لینا شروع کردیا ہے۔ دستیاب دستاویزکے مطابق فیڈرل بورڈ آف ریونیوآئندہ بجٹ میں انکم ٹیکس آرڈیننس سے سیکشن 214 ڈی ختم کرکے اس کی جگہ متبادل نظام متعارف کرانے کی تجاویز کا جائزہ لے رہا ہے کیونکہ مذکورہ سکیشن کے تحت دیر سے انکم ٹیکس گوشوارے جمع کرانے والے ازخود آڈٹ کے لیے منتخب ہو جاتے ہیں جس کی وجہ سے آڈٹ ڈپارٹمنٹ کی کارکردگی متاثر ہو رہی ہے جس کے لیے ایف بی آر متبادل نظام متعارف کرانے کے لیے مختلف ممالک کے ماڈلز کا جائزہ لے رہا ہے۔دستاویز میں بتایا گیا کہ آسٹریلیا میں اگر کوئی ٹیکس دہندہ مقررہ وقت پر اپنے ٹیکس گوشوارے جمع نہیں کراتا تو آسٹریلین ٹیکس آفس کی جانب سے فیلئیر ٹو لاج âایف ٹی ایلá پنلٹی عائد کی جاتی ہے مگر اس سے قبل بذریعہ ٹیلی فون یا تحریری طور پر متعلقہ ٹیکس دہندہ کو وارننگ جاری کی جاتی ہے۔آسٹریلین ٹیکس آفس نے ٹیکس دہندگان کو 4 کٹیگریز میں تقسیم کررکھا ہے، وارننگ کی باوجود ٹیکس گوشوارے جمع نہ کرانے پرآسٹریلین ٹیکس آفس کی جانب سے ہر کٹیگری کے لیے طے کردہ طریقہ کار کے مطابق جرمانے کی رقم کا تعین کیا جاتا ہے، چھوٹے ادارے یا ٹیکس دہندہ کو بروقت انکم ٹیکس گوشوارے جمع نہ کرانے پر 1پینلٹی یونٹ کی شرح سے جرمانہ عائد کیا جاتا ہے اور اسے 28 دن میں ٹیکس گوشوارے جمع کرانے کی مہلت دی جاتی ہے اور مذکورہ کٹیگری کے ٹیکس دہندہ پر 5 پینلٹی یونٹ تک جرمانے عائد کیے جاتے ہیں جبکہ 10لاکھ ڈالر سے 2 کروڑ ڈالر مالیت کی آمدن والی دوسری کیٹیگری میں درمیانے درجے کے ادارے و ٹیکس دہندہ پر جرمانے کی شرح کو دگنا کردی جاتی ہے جبکہ 2 کروڑ ڈالر سے زائد آمدنی رکھنے والے تیسری کٹیگری کے بڑے ٹیکس دہندگان و اداروں پر جرمانے کی یہ شرح 5 گنا بڑھادی جاتی ہے جبکہ یکم جولائی 2017 کے بعد سے چوتھی کٹیگری کے حامل اہم عالمی اداروں و ٹیکس دہندگان پر جرمانے کی شرح میں 500 گنا اضافہ کر دیا گیا ہے۔بھارتی ٹیکس ماڈل میں بھارتی حکومت نے انکم ٹیکس ایکٹ 1961 میں سیکشن 234 ایف متعارف کرا رکھی ہے جس کے تحت مقررہ مدت گزرنے کے بعد ٹیکس گوشوارے جمع کرانے والے انفرادی ٹیکس دہندگان کے لیے 10 ہزار روپے تک کی فیس مقرر کی گئی ہے اور مقررہ مدت کے بعد 31 دسمبر تک ٹیکس گوشوارے جمع کرانے والے انفرادی ٹیکس دہندہ کو 5 ہزار روپے فیس جمع کرانا پڑتی ہے جبکہ 31دسمبر کے بعد ٹیکس گوشوارے جمع کرانے پر 10ہزار روپے فیس جمع کرانا پڑتی ہے لیکن انڈین ریونیو سروس 5 لاکھ روپے تک کی آمدنی رکھنے والے انفرادی ٹیکس دہندگان کو ریلیف فراہم کرتی ہے، ان ٹیکس دہندگان کو تاخیر سے گوشوارے جمع کرانے پر 1ہزار روپے فیس دینا پڑتی ہے۔ریونیو اینڈ کسٹمز برطانیہ کی جانب سے نافذ کئے جانیوالے نظام کے تحت انکم ٹیکس گوشوارے جمع کرانے میں ایک دن کی تاخیر پر 100پاؤنڈ جرمانہ عائد کیا جاتا ہے، 3 ماہ کی تاخیر پر مزید 100 پاؤنڈ جرمانہ عائد کیا جاتا ہے اور 6ماہ کی تاخیر پر لیٹ فائلر کو کارپوریشن ٹیکس بل بھجوایا جاتا ہے جس میں واجب الادا ٹیکس واجبات کے 10 فیصد کے برابر جرمانہ کی رقم بھی شامل کی جاتی ہے اور اس کے خلاف اپیل کا بھی حق نہیں ہوتا، اس کے بعد بھی اگر ٹیکس دہندہ ٹیکس گوشوارہ جمع نہ کرائے تو 12 ماہ بعد واجب الادا ٹیکس کی رقم کے مزید 10فیصد کے برابر جرمانہ عائد کردیا جاتا ہے اور اگر 3 مرتبہ مہلت کے بعد بھی ٹیکس دہندہ انکم ٹیکس گوشوارہ جمع نہیں کراتا تو اس کے لیے جرمانہ بڑھا کر 500 پاؤنڈ کردیا جاتا ہے۔ان جرمانوں کی وجہ سے دیر سے ٹیکس گوشوارے جمع کرانے کا رجحان انتہائی کم ہے جبکہ امریکا میں تو جس ٹیکس دہندہ کی جانب سے ٹیکس واجبات بروقت جمع نہیں کرائے جاتے ان سے ٹیکس واجبات پر سود بھی وصول کیا جاتا ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ فیڈرل بورڈ آف ریونیو مذکورہ ممالک کے ٹیکس ماڈلز کا جائزہ لے رہا ہے اور آئندہ بجٹ میں اس حوالے سے اہم فیصلے متوقع ہیں تاکہ تاخیر سے گوشوارے جمع کرانے کے رجحان کو ختم کیا جا سکے اور نان فائلرز کو ٹیکس گوشوارے جمع کرانے کی جانب مائل کیا جاسکے۔

February 18, 2018

فاروق ستار نے ایم کیو ایم انٹرا پارٹی الیکشن میں باغی ارکان کو باہر کردیا

کراچی جدت ویب ڈیسک : ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ ڈاکٹرفاروق ستار نے انٹراپارٹی الیکشن میں باغی ارکان کو باہر کردیا‘ذرائع کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان فاروق ستار گروپ کے انٹراپارٹی الیکشن آج ہورہے ہیں۔ الیکشن کے لیے پولنگ کراچی اور حیدرآباد میں ہوگی اور پولنگ کا وقت دوپہر ایک بجے سے شام 6 بجے تک مقرر کیا گیا ہے ۔ الیکشن میں کنوینئر، ڈپٹی کنوینئرز، رابطہ کمیٹی اور سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی سمیت دیگر عہدوں کے لئے افراد کا انتخاب کیا جائے گا۔ایم کیو ایم کے کارکنان پولنگ کے ذریعے رابطہ کمیٹی کے 35 اراکین اور سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی سی ای سی کے 40 سے زائد ممبران کا انتخاب کریں گے ۔ رابطہ کمیٹی اراکین میں جس رکن نے سب سے زیادہ ووٹ حاصل کیے وہ کنونیر شپ یعنی پارٹی کی سربراہی سنبھالے گا۔ الیکشن کے نتائج کا اعلان رات کو پریس کانفرنس میں کیا جائے گا اور نتیجہ الیکشن کمیشن آف پاکستان میں جمع کرایا جائے گا۔فاروق ستارنے انٹراپارٹی الیکشن میں باغی ارکان کو انتخاب سے باہر کردیا۔ انٹراپارٹی الیکشن میں رابطہ کمیٹی کے لیے 35 امیدوار حصہ لیں گے ، جن میں خواجہ سہیل منصور، قمر منصور، مزمل قریشی، علی رضا عابدی ، شاہد پاشا، ساجد احمد، صلاح الدین شیخ کے نام بالتریب موجود ہیں۔بیلٹ پیپرزمیں رہنما عامرخان اور خالد مقبول صدیقی کا نام موجود نہیں جب کہ کنور نوید جمیل، نسرین جلیل اور وسیم اخترسمیت تمام ارکان مائنس کردیے گئے ۔ انٹرا پارٹی الیکشن کے لیے ڈاکٹر فاروق ستار تمام تر مخالفت کے باوجود کامران ٹیسوری کو بھول نہ سکے ، بیلٹ پیپر میں پہلا نام فاروق ستار اور دوسرا نام کامران ٹیسوری کا درج ہے ۔

February 17, 2018

اب افغان مہاجرین کو واپس بھیجنے کا وقت آ گیا ہے: آرمی چیف

میونخ جدت ویب ڈیسک :پاک فوج کے سربراہ جنر ل قمر جاوید باجوہ نے جنرمنی کے شہر میونخ میں ہونے والی سکیورٹی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان کا موقف پوری دنیا کے سامنے واضح کر دیا ہے ،انہوں نے دبنگ اعلان کرتے ہوئے کہا ہم فخر سے کہہ سکتے ہیں کہ پاکستان میں دہشتگردوں کا کوئی ٹھکانہ نہیں ،جہاد کا حکم دینے کا اختیار ریاست کے پاس ہے ،انتہا پسندی کو جہاد نہیں کہنا چاہیے ،پاکستان میں تاحال 27 لاکھ افغان مہاجرین موجود ہیں اور وقت آ گیاہے کہ انہیں واپس بھیجا جائے‘میونخ میں ’خلاف کے بعد جہاد ازم ‘کے موضوع پر تقریر کرتے ہوئے جنر ل قمر جاوید باجوہ کا کہناتھا کہ جہاد کا حکم دینے کا اختیار صرف ریاست کو ہے ،خود پر قابو رکھنا بہترین جہاد ہے ، انتہا پسندی کو جہاد نہیں کہنا چاہیے ،پاکستا ن نے دہشتگردی کے خلاف جنگ میں بھاری قیمت ادا کی ہے ، ہم نے 2018 میں آپریشن رد الفساد شروع کیا ، پوری قوم کی مشترکہ کوششوں سے دہشتگردی کا خاتمہ کیاہے۔

February 17, 2018

لودھراں میں فیصلہ امپائر کی انگلی نے نہیں عوام کے انگوٹھوں نے کیا ہے

جدت ویب ڈیسک ::لودھراں میں خطاب کرتے ہوئے نواز شریف نے کہا  کہ لاڈلے اب تم کو لودھراں والے  سبق سکھائیں گے میں بہت خوش ہوں آپ نے مجھے خرید لیا ، لوڈشیڈنگ ختم کرنے میں سب سے بڑا ہاتھ شہباز شریف کا ہے فیصلہ امپائر کی انگلی نے نہیں عوام کے انگوٹھےنے کیا ہے لیڈ کی بات کرنے والے نے کہا ، لاڈلا کہتےہے 27ہزار ورٹوں سے جیتا ہوں اب خلق خدا تمہیں سبق سکھائے گیا، دنیا بھر میںہونے والا لودھراں کا فیصلہ گونج رہا ہے 27ہزار ووٹوں سے ہار گئے اللہ کا خوف کرو ۔ لاڈلا کہےتا ہیں تمہیں لودھراں سے سبق سکھنا چاہیے، آج وزیر عظم نہیں ہوں ، مجھے نکال دیا گیا ہے کھاد کی قیمت میں بھی کمی کی ، بجلی آئی بھی اور سستی بھی کی گئ..لودھراں میں ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیراعظم نوازشریف نے عدلیہ اور سیاسی مخالفین پر پھر چڑھائی کی ۔ انہوں نے کہا کہ لاڈلا کہتا ہے ہمیں لودھراں کی شکست سے سبق سیکھنے کا خیال آ گیا ہے، پانچ سال کے بعد تمہیں لودھراں کا خیال آ گیا ہے، اب تمہیں خلق خدا سبق سکھائے گی ۔
نوازشریف نے کہا کہ لودھراں کے عوام نے ووٹ کے احترام کو بحال کیا ۔

February 17, 2018

بھارت کے جابرانہ قبضے کی وجہ سے کشمیری سخت مشکلات کا شکار ہیں، میر واعظ

سرےنگر جدت ویب ڈیسک :مقبوضہ کشمیر میںحریت فورم کے چیئرمین میر واعظ عمر فاروق نے جامع مسجد سرینگر کو با ر بار سیل کر کے لوگوں کو وہاں جمعہ کی نماز پڑھنے سے روکنے پر قابض انتظامیہ کی شدید مذمت کی ہے۔ کشمیر میڈیاسروس کے مطابق میر واعظ عمر فاروق نے سرینگر میں ایک عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اظہار رائے پر پابندی اور احتجاج کے تمام راستوں کو رکاوٹوں کے ذریعے بند کرنے سے مسئلہ کشمیر ختم نہیں ہو گا۔ انہوںنے کہا کہ بھارت کے جابرانہ قبضے کی وجہ سے کشمیری گزشتہ ستر برس سے باالعموم اور گزشتہ تیس برس سے باالخصوس سخت مشکلات کا شکار ہیں ۔ میرواعظ نے کہا کہ جب تک مسئلہ کشمیر کے حل کا جائز مطابہ تسلیم نہیں کیا جاتا مساجدکے ممبر و محراب سے بھی یہ مطالبہ سامنے آتا رہے گا ۔انہوں نے کہا یہ انتہائی دکھ کی بات ہے کہ اس مسئلے کی وجہ سے روزانہ قیمتی انسانوں جانیں ضائع ہو رہی ہیں لیکن اگربھارت ہٹ دھرمی پر مبنی پالیسی ترک کر کے مثبت روش اپنائے تو یہ المناک صورتحال اسی صورت تبدیل ہوسکتی ہے۔۔ میرواعظ نے کہاکہ گذشتہ70 برس کے تجربے سے ظاہر ہے کہ مسئلہ کشمیر کوفوجی طاقت سے ہرگز حل نہیں کیا جاسکتا لہذا بھارت اور پاکستان بالغ نظری اور سمجھداری کا مظاہرہ کرکے مسئلہ کشمیر کو کشمیری عوام کی خواہشات کے مطابق حق خود ارادیت کے اصول کی بنیاد پر حل کریں۔دریں اثنائ میرواعظ نے صورہ اسپتال جاکر لبریشن فرنٹ کے علیل چیئرمین جناب محمد یاسین ملک کی عیادت کی اور ان کی جلد صحت یابی کےلئے دعا کی۔

February 17, 2018

امریکا کا پاکستان کو دہشت گردوں کی فنانسنگ لسٹ میں ڈالنے کاعندیہ

واشنگٹن جدت ویب ڈیسک :امریکا کے محکمہ خارجہ کی ترجمان نے عندیہ دیا ہے کہ پاکستان میں منی لانڈرنگ قوانین میں سختی اور انسداد دہشت گردی کے خاتمے کے لیے غیر موثر حکمت عملی ہونے کی وجہ سے امریکا فنانشل ایکشن ٹاسک فورس âایف اے ٹی ایفá میں پاکستان کو عالمی دہشت گردی کی فنانسنگ فہرست میں شامل کرنے کی قرارداد پیش کرے گا۔ پاکستان کے خلاف امریکی قرارداد کو برطانیہ، فرانس اور جرمنی کی حمایت بھی حاصل ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق امریکہ کے اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ کی ترجمان ہیتھر نوریٹ نے ہفتہ وار پریس بریفنگ میں بتایا کہ اگلے ہفتے پیرس میں ایف اے ٹی ایف کے اجلاس میں قرارداد پیش کی جائےگی جس میں پاکستان کو عالمی دہشت گردی کی فنانسنگ کی فہرست میں شامل کیا جائےگا۔کیا امریکا نے قرارداد ایف اے ٹی ایف میں داخل کردی ہے؟ اس سوال پر انہوں نے بتایا کہ وہ اس امر کی تصدیق یا تردید نہیں کر سکتیں کیونکہ ایف اے ٹی ایف کے امور انتہائی نجی نوعیت کے ہوتے ہیں لیکن یہ واضح کروں کہ عالمی ممالک پاکستان کے حوالے سے تحفظات کا شکار ہیں۔انہوں نے بتایا کہ بنیادی طور پر عالمی کمیونٹی کو حکومت پاکستان میں جاری منی لانڈرنگ اور دہشت گردی سمیت دیگر مذموم سرگرمیوں سے متعلق غیر موثر اقدامات پر طویل عرصےسے سخت تحفظات ہیں۔