December 29, 2017

بتایاجائے شریف برادران سعودی عرب کیوں گئے،خورشیدشاہ

لاہور جدت ویب ڈیسک : قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ نے کہا ہے کہ دوسرے کے دروازے کو کھٹکھٹانا بڑا تکلیف دے رہا ہے،ہمارا اپنا آئین ہے، ہمیں اپنے فیصلے بھی خود کرنے چاہئیں، عمران خان اور نوازشریف لاڈلے ہیں، کھیلنے کو مانگے چاند،ہماری سیاست دھرنوں کی نہیں، جمہوریت کی ہے، کسی سیاسی جماعت سے دوریاں نہیں چاہتے، ملک میں سیاست، سیاسی عمل، جمہوریت اور پارلیمان چاہتے ہیں،اس میں انتقام اور دشمنی نہیں ہونی چاہیے،خواہش ہے حکومت مدت پوری کرے اور اسے کرنی بھی چاہیے، اگر حکومت مدت پوری نہیں کرتی تو آئین کے ساتھ زیادتی ہوگی،خواجہ سعد رفیق کے بیان میں ایسی کوئی بات نظر نہیں آئی جس پر آئی ایس پی آر کا اتنا بڑا رد عمل آیا لہٰذا یہ رد عمل اتنی جلدی نہیں آنا چاہیے تھا۔لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خورشید شاہ نے کہا کہ طاہرالقادری سے ملاقات کوئی نئی بات نہیں، اس سے پہلے بھی ملاقات ہوئی ہے، جب ماڈل ٹاﺅن کا قتل عام ہوا تو بھی ہم آئے، جنازوں اور احتجاج میں بھی شریک ہوئے تھے، ماڈل ٹاﺅن والوں کے حق و انصاف کے لیے کھڑے ہوئے تھے اور آج بھی اس پر قائم ہیں۔انہوں نے کہا کہ فاٹا انضمام کے حق میں ہیں، اس معاملے پر پہلے دن سے پوزیشن لیے ہوئے ہیں، یہ ہمارے منشور کا حصہ ہے کہ فاٹا کو خیبرپختونخوا میں ضم ہونا چاہیے، اگر ہمار پاس دو تہائی اکثریت ہوتی تو ہم یہ کام کر جاتے۔انہوں نے کہا کہ فاٹا معاملے پر حکومت کے ساتھ کھڑے ہیں، حکومت کسی مجبوری کی وجہ سے اس معاملے کو روکے ہوئے ہے، سب کو پتا ہے اس میں کیا مسئلہ ہے، مولانا فضل الرحمان کا واضح موقف ہے اور بھی کچھ جماعتیں ہیں جن کا نام نہیں لینا چاہتا لیکن یہ تھوڑے دن کا ہی مسئلہ ہے۔خورشید شاہ نے کہا کہ ہماری سیاست دھرنوں کی نہیں، جمہوریت کی ہے، چاہتے ہیں ملک میں جمہوریت چلے اور الیکشن وقت پر ہوں جبکہ ہم کسی سیاسی جماعت سے دوریاں نہیں چاہتے، ملک میں سیاست، سیاسی عمل، جمہوریت اور پارلیمان چاہتے ہیں۔ہم لڑائی، مارا ماری نہیں چاہتے، پیپلزپارٹی سمجھتی ہے کہ ملک میں سیاست کیسے ہونی چاہیے، اس میں انتقام اور دشمنی نہیں ہونی چاہیے۔سعد رفیق کے بیان پر ڈی جی آئی ایس پی آر کے رد عمل پر اپوزیشن لیڈر نے کہا کہ سعد رفیق کا بیان تفصیل سے پڑھا اس میں ایسی کوئی بات نظر نہیں آئی جس پر آئی ایس پی آر کا رد عمل آیا، یہ نہیں آنا چاہیے تھا۔

December 29, 2017

ضروری نہیں کہ سعودی عرب جاکر ہر کوئی سیاست کرے، احسن اقبال

کوئٹہ جدت ویب ڈیسک :وفاقی وزےر داخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ سیاسی جماعتوں کو پیغام دیتا ہوں کہ ملک میں عدم استحکام کا فائدہ دشمنوں کو ہوگا، دھرنے یا انتشار کی سیاست کا فائدہ دہشت گردوں کو ہوگا جو بے یقینی پیدا کرنا چاہتے ہیں۔احسن اقبال کا کہنا تھا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ ابھی ختم نہیں ہوئی، یہ جنگ جاری رہے گی ضروری نہیں کہ سعودی عرب جاکر ہر کوئی سیاست کرے جب کہ ترجمان پاک فوج کے بیان پر سعد رفیق کی وضاحت کے بعد معاملہ ختم ہوگیاان خےالات کا اظہار انہوں نے زرغون روڈ پر واقع میتھوڈےسٹ چرچ کے دورے کے موقع پر اور سابق ڈی آئی جی کوئٹہ حامد شکےل شہےد کے گھر جاکر ان کے اہل خانہ سے تعزےت کے بعد مےڈےا سے بات چےت کرتے ہوئے کےا اس موقع پر وفاقی وزےر مذہبی امور سردار ےوسف ، اےم اےن اے خلےل بھٹو،صوبائی وزےر حامد خان اچکزئی اور دےگر بھی موجود تھے احسن اقبال نے کہا کہ سیاسی جماعتوں کو پیغام دیتا ہوں کہ ملک میں عدم استحکام کا فائدہ دشمنوں کو ہوگا، دھرنے یا انتشار کی سیاست کا فائدہ دہشت گردوں کو ہوگا جو بے یقینی پیدا کرنا چاہتے ہیں دہشت گردی کے خلاف جنگ ابھی ختم نہیں ہوئی، یہ جنگ جاری رہے گی۔انہوں نے کہا کہ دشمن بلوچستان میں کارروائیاں کرکے پاکستان کو عدم استحکام کا شکار کرنا چاہتا ہے اور فرار ہونے والے دہشت گرد مغربی سرحد سے دوبارہ ملک میں داخل ہوکر دہشتگردی کررہے ہیں۔مسلم لیگ (ن)کی اعلی قیادت کی سعودی عرب روانگی سے متعلق سوال پر وفاقی وزیر داخلہ نے کہا کہ ضروری نہیں کہ سعودی عرب جاکر ہر کوئی سیاست کرے، کوئی نہ کوئی ایم این اے یا ایم پی اے یا وزیر سعودی عرب گیا ہوا ہوتا ہے جب کہ گزشتہ ہفتے وہ بھی سعودی عرب گئے ہوئے تھے وفاقی وزیر داخلہ نے کہا کہ ڈی جی آئی ایس پی آر کے بیان پر وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کی وضاحت سامنے آچکی ہے جس کے بعد معاملہ ختم ہوگیا ہے، اس لئے اسے طول دینے کی ضرورت نہیںانہوں نے کہا کہ مسےحی برادری سے اظہار ےکجہتی کے لئے آےا ہوں ملک کے لئے ان کی قربانےاں ناقابل فراموش ہے دہشتگردوں نے ہمارے کسی جگہ کو نہےں چھوڑا اور ہم اس کی مذمت کرتے ہےں دہشتگردوں نے مسجدوں، ہسپتالوں اور شہروں پر حملے کئے ہےں گزشتہ چار سالوں مےں ملک مےں دہشتگردی کی کمر توڑ دی ہماری کمےونےٹز اور قانون نافذ کرنےوالے اداروں مےں جذبہ پےدار ہوچکا ہے دہشتگرد کارروائےوں کا مقصد سی پیک کو ناکام بنانا ہے ہمارا فرض ہے کہ ملک مےں امن اور استحکام کو برقراررکھےں اور مذاہب امن سلامتی اور بھائی چارے کا پےغام دےتے ہےں فرار دہشتگرد مغربی سرحد سے دوبارہ ملک مےں داخل ہوکر دہشتگردی کررہی ہے دشمن بلوچستان مےں کارروائےاں کرکے پاکستان کو عدم استحکام کا شکار کرنا چاہتے ہےں اس موقع پر وفاقی وزےر برائے مذہبی امور سردار ےوسف نے کہا کہ مسےحی برادری سے اظہار ےکجہتی کے لئے ےہاں پہنچے ہےں پاکستان کی تحفظ کےلئے دی گئی قربانےاں رائےگاں نہےں جائےگی جو جانےں ضائع ہوچکی ہے ان کی تلافی ممکن نہےں دہشتگردوں کا کوئی مذہب نہےں وہ انسانےت کے دشمن ہے #/s#

December 29, 2017

نواز شریف دراصل نظریہ کرپشن کا نام ہے, چیئرمین تحریک انصاف

اسلام آبادجدت ویب ڈیسک: شریف خاندان کو ڈر تا کہ اسحق ڈار راز نہ اگل دے اس لئے بیرون ملک فرار کرادیا گیا اور شاہد خاقان عباسی نے اپنی خصوصی طیارہ فراہم کیا ،سائیکل کی دکان والا آج ارب پتی بن گیا ۔ ان خیالات کا اظہار چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے اسلام آباد میں میڈیا نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔چند لوگ ملک پر راج کررہے ہیں جبکہ عوام قرضوں کے بوجھ تلے دبتے چلے جارہے ہیں اور ایسے میں شریف خاندان ایک بار پھر این آر او لینے کی تگ و دو میں ہے تاہم اگر ایسا ہوا تو ہم سڑکوں پر ہوں گے۔نواز شریف کہتے ہیں کہ جمہوریت بچانی ہے اس کا مطلب یہ ہے کہ چوری بچانی ہے ۔ترکی سمیت پوری دنیا سے لاکھوں ڈالر ان کی کمپنیوں میں آرہے ہیں صرف اسحق ڈار کی کمپنی کے 52ولاز ہیں ۔ایل این جی کے متعلق کہا جاتا ہے کہ یہ خفیہ معاہدہ ہےمیں پوچھتا ہوں کہ عوامی پیسے میں کونسا خفیہ معاہدہ ہوتا ہے ۔انہوں نے مزید کہا کہ نواز شریف دراصل نظریہ کرپشن کا نام ہے ۔ یقین دلاتا ہوں کہ ساری قوم سپریم کورٹ کے ساتھ کھڑی ہے۔انہوں نے جو زبان عدلیہ کے خلاف استعمال کی پہلے کسی نے نہیں کی کیا توہین عدالت کا قانون صرف کمزوروں پر لاگو ہوتا ہے۔ عدالت یا تو ان کے خلاف بھی ایکشن لے یا پھر یہ قانون ہی ختم کیا جائے۔