August 10, 2020

پارک لین ریفرنس، آصف زرداری سمیت 13 ملزمان پر فرد جرم عائد

اسلام آباد: ویب ڈیسک :: پارک لین ریفرنس میں احتساب عدالت نے سابق صدر آصف علی زرداری سمیت 13 ملزمان پر فرد جرم عائد کر دی، تمام ملزمان نے صحت جرم سے انکار کر دیا۔
تفصیلات کے مطابق پارک لین ریفرنس میں آصف زرداری، انور مجید سمیت 13 ملزمان پر وڈیو لنک کے ذریعے فرد جرم عائد کر دی گئی، 17 ملزمان میں سے 3 یونس قدوائی، عزیر نعیم اور اقبال میمن کو اشتہاری قرار دیا جا چکا ہے، جب کہ ایک ملزم اسلم مسعود وعدہ معاف گواہ بن گیا تھا۔آصف زرداری پر بلاول ہاؤس کراچی میں وڈیو لنک کے ذریعے فرد جرم عائد کی گئی ہے، جب کہ انور مجید پر کراچی کے اسپتال میں وڈیو لنک کے ذریعےفرد جرم عائد کی گئی۔
سماعت کے لیے تین ملزمان فاروق عبداللہ، محمد حنیف اور سلیم فیصل رجسٹرار آفس کراچی سے وڈیو لنک پر موجود تھے، جب کہ اقبال خان نوری، محمد حنیف، حسین لوائی اور طٰہ رضا کے لیے اڈیالہ جیل میں انتظامات کیے گئے تھے، احتساب عدالت نے تمام ملزمان کی وڈیو لنک پر حاضری یقینی بنانے کا حکم دے رکھا تھا۔
کیس کی سماعت احتساب عدالت کے جج اعظم خان نے کی، وکیل نے ملزم طہٰ رضا سے ملاقات کے لیے درخواست دائر کی تام جج نے کہا کہ فرد جرم عائد ہونے دیں پھر اس پر دلائل سن لیتے ہیں، دوسری طرف آصف زرداری ویڈیو لنک پر موجود رہے۔
واضح رہے کہ آصف علی زرداری کی ریفرنس خارج کرنے کی درخواست مسترد ہونے پر ان پر فرد جرم عائد کی گئی، درخواست عدالتی دائرہ اختیار سے متعلق تھی، احتساب عدالت نے آئندہ سماعت پر گواہان بھی طلب کر لیے۔دوران سماعت آصف علی زرداری ویڈیو لنک پر خود بول اٹھے، انھوں نے اپنے مؤقف میں کہا کہ میرے وکیل فاروق ایچ نائیک سپریم کورٹ میں مصروف ہیں، مجھ پر فرد جرم عائد نہیں کی جا سکتی، جج نے کہا ملزم کا چارج فریم ہوتا ہے، آپ سن لیں، آپ کو پڑھ کر سناؤں گا، آپ سے 2 سوال پوچھوں گا کہ آپ تسلیم کرتے ہیں یا انکار، فرد جرم انگریزی میں ہو گی امید ہے آپ سمجھیں گے۔ زرداری نے کہا میں 30 سال سے کیسز کا سامنا کر رہا ہوں، آپ مجھے رولنگ دے دیں۔جج اعظم خان نے کہا کورٹ رولنگ دے گی، ہم کورٹ آرڈر میں لکھوائیں گے کہ آپ کا وکیل موجود نہیں تھا، اب آپ پر منحصر ہے کہ آپ مانتے ہیں یا انکار کرتے ہیں۔ بعد ازاں، سابق صدر آصف علی زرداری پر فرد جرم کی تحریر پڑھ کر سنائی گئی، عدالت نے پوچھا کیا آپ نے کمپنی پارتھینن کے ذریعے غیر قانونی 1.5 ارب کا قرض حاصل کر کے فراڈ کیا؟ جواب میں آصف زرداری نے کہا میں تمام الزامات کو رد کرتا ہوں، آپ کراچی آ کر عمارت کو بھی دیکھ لیں۔
سماعت کے دوران آصف علی زرداری نے ایک بار پھر ویڈیو لنک پر آ کر کہا مجھے فرد جرم عائد کرتے وقت وکیل کی سہولت نہیں دی گئی، جس پر جج نے کہا ہم آرڈر میں لکھ دیں گے کہ آپ کے وکیل سپریم کورٹ میں تھے۔ بعد ازاں، عدالت نے ملزمان کو لگائی گئی دفعات سے بھی ویڈیو لنک کے ذریعے آگاہ کیا، عدالت نے کہا ملزمان پر کرپشن اور کرپٹ پریکٹسز کے سیکشن 9 اے 3، 4،6،12 کے تحت کیس چلے گا۔
آصف زرداری نے ایک بار پھر ویڈیو لنک پر آ کر کہا میں کچھ کہنا چاہتا ہوں، احتساب عدالت کے جج نے کہا کہ آپ کچھ بھی کہہ سکتے ہیں، زرداری نے کہا میں نے 18 ویں ترمیم دی اس لیے مجھ پر دباؤ ڈالنے کے لیے مقدمات بنائے جا رہے ہیں، عدالتوں کو غیر جانب دار رہ کر فیصلہ دینا چاہیے۔ جج نے اس پر کہا کہ اسی لیے ہم نے یکم ستمبر کو گواہوں کو بلایا ہے، دودھ کا دودھ پانی کا پانی ہو جائے گا۔یاد رہے پارک لین ریفرنس میں نیشنل بینک کے 2 سابق صدور علی رضا اور سید قمر حسین آصف زرداری کے خلاف وعدہ معاف گواہ بن گئے تھے، نیب نے ان کو قانون کے مطابق گواہی دینے پر معاف کر دیا تھا۔نیب نے آصف علی زرداری کے خلاف پارک لین ریفرنس میں 61 گواہان تیار کر لیے ہیں، جن میں نیشنل بینک کریڈٹ کمیٹی کے تمام افسران، نیب راولپنڈی تفتیشی ٹیم کے 9 افسران، جعلی اکاؤنٹس کی ابتدائی تفتیش کرنے والے ایف آئی اے کے محمد علی ابڑو بھی گواہان میں شامل ہیں، جب کہ قرض لینے والی مبینہ فرنٹ کمپنی پارتھینون کے کمپیوٹر آپریٹر کی گواہی بھی شواہد کا حصہ ہے۔
اس کیس میں ملزمان پر پارک لین کی کمپنی کے نام پر نیشنل بینک سے ڈھائی ارب سے زیادہ کے قرض غبن کا الزام ہے جب کہ آصف زرداری کو پارک لین کا 25 فی صد شیئر ہولڈر ہونے پر ملزم نامزد کیا گیا تھا۔

August 10, 2020

وزیر اعظم عمران خان کے معاونین خصوصی کی تقرریوں کے خلاف،وفاق سمیت دیگر فریقین کو نوٹس جاری

ویب ڈیسک ::لاہور: وزیر اعظم عمران خان کے معاونین خصوصی کی تقرریوں کے خلاف درخواست لاہور ہائی کورٹ میں سماعت کے لیے منظور ہو گئی۔
چیف جسٹس ہائی کورٹ قاسم خان نے معاونین خصوصی کی تقرریوں کے خلاف درخواست پر سماعت کی، عدالت نے وفاق سمیت دیگر فریقین کو نوٹس جاری کر کے جواب طلب کر لیا۔
عدالت نے وزیر اعظم کے معاونین خصوصی کی تعیناتی کا طریقہ کار، ان کی خدمات اور ان کے اثاثوں کی تفصیلات بھی مانگ لیں، وزیر اعظم کے تمام ایڈوائزرز کو بھی نوٹس جاری کر دیے گئے۔
چیف جسٹس ہائی کورٹ نے کہا کہ یہاں اثاثے 25 ہزار ہیں اور بیرون ملک 25 ہزار ڈالرز ہوتے ہیں، بد قسمتی ہے کہ لوگ بریف کیس لے کر آتے ہیں اور بھر کر چلے جاتے ہیں۔
ایڈوائزرز سے متعلق چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ کیا کسی کو بھی اٹھا کر ایڈوائزر لگایا جا سکتا ہے؟ کیا اسپیشلسٹس، ٹیکنیکل ایکسپرٹس لوگوں کو ایڈوائزر لگایا جا سکتا ہے، اور آئین میں کہاں ذکر ہے کہ وزیر اعظم کے ایڈوائزر تعینات کیے جا سکتے ہیں؟
ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایا کہ آئین کے تحت وزیر اعظم معاون خصوصی تعینات کر سکتا ہے، آئین ایڈوائزرز کو پارلیمنٹ میں تقریر کی اجازت بھی دیتا ہے۔ چیف جسٹس نے کہا معاون خصوصی کا عہدہ وفاقی وزیر کے برابر ہوگا، یہ کہاں سے لیتے ہیں اور معاون خصوصی کیسے کابینہ کی میٹنگ میں بیٹھ سکتے ہیں؟ اٹارنی جنرل اشتیاق اے خان نے کہا کہ معاون خصوصی کابینہ میں نہیں بیٹھ سکتے، وہ خاص طور پر بلائے جاتے ہیں۔چیف جسٹس قاسم خان نے کہا کہ اگر وزیر اعظم کہے کہ یہ میرا بڑا قریبی دوست ہے تو کیا اسے معاون خصوصی لگا دیتے ہیں، آپ بتا سکتے ہیں کہ کتنے معاون خصوصی ہیں؟ اوران کی کیا خصوصیت ہے؟ اکثر اوورسیز پاکستانیز باہر سے پیسہ بھیجنے والے سفید ہوش لوگ ہیں، یہ بزنس ٹائیکون ہیں، لیکن کبھی سامنے نہیں آیا کہ بہت بڑی رقم پاکستان بھیجی ہے، 25 یا 30 کروڑ کی سرمایہ کاری لائے ہوں تو پھر بات ہے، اگر وہ یہاں آ کر ہوٹلز میں ٹھہرتے ہیں اور دوستوں پر کچھ خرچ کر دیتے ہیں تو ایسا تو روٹین ہوتا ہے، ہمارا کلچر ہے کہ اس قسم کے خرچے کر کے چلے جاتے ہیں۔
ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے کہا کہ جی سفید پوش لوگوں کی وجہ سے ملک میں غیر ملکی سرمایہ آتا ہے۔

August 10, 2020

وزیر اعظم عمران خان نے بلوچستان کے شہر چمن میں بم دھماکے کی شدید مذمت کر دی

اسلام آباد ویب ڈیسک ::: وزیر اعظم عمران خان نے بلوچستان کے شہر چمن میں بم دھماکے کی شدید مذمت کر دی ہے۔تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے چمن میں مال روڈ پر موٹر سائیکل بم دھماکے میں جانی نقصان پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے دھماکے کی شدید مذمت کی ہے، وزیر اعظم عمران خان نے زخمیوں کی جلد صحت یابی کے لیے دعا بھی کی۔گورنر بلوچستان امان اللہ یاسین زئی نے بھی چمن دھماکے کی مذمت کی ہے، انھوں نے قیمتی جانی نقصان پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا، اور کہا دہشت گردوں کے ناپاک عزائم کو ناکام بنائیں گے، اور واقعے میں ملوث عناصر کو جلد گرفتار کر کے کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا۔
واضح رہے کہ بلوچستان کے شہر چمن میں مال روڈ پر دھماکا ہوا ہے، جس کے نتیجے میں 5 افراد جاں بحق اور 10 زخمی ہوئے، زخمیوں میں اے این ایف اہل کار بھی شامل ہیں۔
ضلع قلع عبداللہ کے شہر چمن میں مال روڈ پر دھماکے سے متعلق پولیس کا کہنا ہے کہ دھماکا ریمورٹ کنٹرول تھا، اور بم ایک موٹر سائیکل میں نصب کیا گیا تھا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ دھماکے میں اے این ایف کی گاڑی کو نشانہ بنایا گیا، دھماکے میں اے این ایف کی گاڑی تباہ ہو گئی اور 3 اہل کار زخمی ہو گئے، جنھیں کوئٹہ منتقل کر دیا گیا ہے۔
ریسکیو ذرایع کا کہنا تھا کہ دھماکے میں زخمی ہونے والے افراد کو ڈی ایچ کیو اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے، جن میں 8 افراد کی حالت تشویش ناک ہے۔ دھماکے کے بعد سیکورٹی اداروں نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا، شہر کے داخلی و خارجی راستوں پر سیکورٹی ہائی الرٹ کر دی گئی ہے، دھماکے کی نوعیت جاننے کے لیے شواہد بھی اکٹھے کیے جا رہے ہیں۔
دھماکا اتنا شدید تھا کہ اس سے قریبی عمارتوں کے شیشے بھی ٹوٹ گئے، موٹرسائیکلوں اور گاڑیوں کو بھی نقصان پہنچا، ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔

August 10, 2020

ڈاکٹر رتھ فاؤ کی تیسری برسی پروزیر اعلیٰ، عثمان بزدار کا خراج تحسین، دکھی انسانیت کی خدمت ہمیشہ یاد رکھی جائے گی

لاہور ویب ڈیسک ::: وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے ڈاکٹر رتھ فاؤ کی تیسری برسی پر کہا ہے کہ ڈاکٹر رتھ فاؤ کی ٹی بی اور جذام کے خاتمے کے لیے خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔
ان خیالات کا اظہار انہوں نے جذام کے مریضوں کی مسیحا ڈاکٹر رتھ فاؤ کی تیسری برسی کے موقع پر انہیں خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ پاکستان سے جذام کے خاتمے کا سہرا ڈاکٹر رتھ فاؤ کی کاوشوں کے سر ہے۔
سردار عثمان بزدار نے کہا کہ ڈاکٹر رتھ فاؤ نے بلا رنگ و نسل دکھی انسانیت کی خدمت کی، ڈاکٹر رتھ فاؤ کی ٹی بی اور جذام کے خاتمے کے لیے خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔لاکھوں مریضوں کے چہروں پر مسکراہٹ بکھیرنے والی ڈاکٹر رتھ فاؤ 10 اگست 2017 کو طویل علالت کے بعد انتقال کر گئیں تھیں۔ ان کی تدفین ان کی وصیت کے مطابق سرخ جوڑے میں قومی اعزاز کے ساتھ کراچی کے مسیحی قبرستان میں کی گئی۔یاد رہے کہ پاکستان میں جذام کے مریضوں کے لیے مسیحا ڈاکٹر رتھ فاؤ کی آج تیسری برسی منائی جارہی ہے، جرمنی میں پیدا ہونے والی یہ عظیم خاتون57 سال پاکستان میں مقیم رہیں اور جذام کا مرض مملکت خداد سے ختم کرنے میں سب سے کلیدی کردار ادا کیا۔
انسانیت کی اس عظیم خادمہ کو 1998 میں اعزازی پاکستانی شہریت دی گئی جبکہ انہیں ہلال امتیاز، ستارہ قائد اعظم، ہلال پاکستان اور لائف ٹائم اچیومنٹ ایوارڈ سے بھی نوازا گیا۔

August 10, 2020

چمن: مال روڈ پر دھماکا، 5 افراد جاں بحق، 10 زخمی،ہلاکتوں کا خدشہ

چمن ویب ڈیسک ::: بلوچستان کے شہر چمن میں مال روڈ پر دھماکا ہوا ہے، جس کے نتیجے میں 5 افراد جاں بحق اور 10 زخمی ہو گئے، زخمیوں میں اے این ایف اہل کار بھی شامل ہیں۔
تفصیلات کے مطابق ضلع قلع عبداللہ کے شہر چمن میں مال روڈ پر دھماکے میں پانچ افراد جاں بحق جب کہ دس شدید زخمی ہو گئے ہیں، پولیس کا کہنا ہے کہ دھماکا ریمورٹ کنٹرول تھا، اور بم ایک موٹر سائیکل میں نصب کیا گیا تھا۔پولیس کا کہنا ہے کہ دھماکے میں اے این ایف کی گاڑی کو نشانہ بنایا گیا، دھماکے میں اے این ایف کی گاڑی تباہ ہو گئی اور 3 اہل کار زخمی ہو گئے، جنھیں کوئٹہ منتقل کر دیا گیا ہے۔ بڑی تعداد لوگ بھی زخمیوں کو خون دینے کے لیے اسپتال پہنچ گئے۔ دھماکے کی شدت سے قریبی عمارتوں کے شیشے بھی ٹوٹ گئے، موٹرسائیکلوں اور گاڑیوں کو بھی نقصان پہنچا، ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔
مال روڈ، ندا مارکیٹ جس کے سامنے موٹر سائیکل میں نصب بم دھماکا کیا گیا، پولیس کا کہنا ہے کہ نشانہ اے این ایف کی گاڑی تھی
ریسکیو ذرایع کا کہنا ہے کہ دھماکے میں زخمی ہونے والے افراد کو ڈی ایچ کیو اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے، جن میں 8 افراد کی حالت تشویش ناک ہے، پولیس نے بتایا کہ ریموٹ کنٹرول بم موٹر سائیکل میں نصب تھا۔دھماکے کے بعد سیکورٹی اداروں نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا، شہر کے داخلی و خارجی راستوں پر سیکورٹی ہائی الرٹ کر دی گئی ہے، دھماکے کی نوعیت جاننے کے لیے شواہد اکٹھے کیے جا رہے ہیں۔

August 9, 2020

مودی اجیت ڈوول اور جنرل راوت سے سخت ناراض

نئی دہلی:جدت ویب ڈیسک:اطلاعات ہیں کہ بھارتی وزیر اعظم مودی نے چین سے سرحدی تنازع پر قومی سلامتی کے مشیر اجیت ڈوول اور چیف آف ڈیفنس سٹاف جنرل بپن راوت کی کارکردگی سے شدید ناراضی کا اظہار کیا ہے۔ برطرفی اور تبادلوں جیسے صاف دکھائی دینے والے اقدامات سے گریز کیا گیا ہے کیونکہ ایسے اقدامات اس بات کا ثبوت ہونگے کہ چین سے معاملات میں کوتاہی کا باضابطہ اعتراف کرلیا گیا ہے۔ بھارتی دفاعی تجزیہ کار اجے شکلا نے اپنے مضمون میں لکھا ہے کہ اپریل کے وسط میں بھارتی سیٹلائٹ امیجری کے علاوہ سگنلز اور ہیومن انٹیلی جنس کے ذریعے اس بات کی تصدیق ہوئی کہ ایل اے سی کے پار چین بڑی فوجی شق کر رہا ہے جس میں پیپلز لبریشن آرمی کے ہزاروں سپاہی شریک ہیں۔ لداخ میں ریزرو فارمیشنز کو متحرک کرنے کا عمل اس سال کورونا کی وباکے پیش نظر منسوخ کردیا گیا جس کا چین کی پیپلز لبریشن آرمی نے خوب فائدہ اٹھایا۔ سی ڈی ایس اور این ایس اے نے مبینہ طور پر وزیر اعظم نریندر مودی کو بتایا کہ سرحد عبور کرنے کے انفرادی نوعیت کے اکا دکا واقعات سے وہ خود نمٹ لیں گے۔ یہ سب کچھ 12 مئی تک ہوتا رہا جب چین کے دو فوجی ہیلی کاپٹرز نے پنگانگ جھیل کے پار بھارتی کمانڈنگ جنرل کو لے جانیوالے ہیلی کاپٹر کا تعاقب کیا۔ بحران کو پہلی بار اس وقت باضابطہ طور پر تسلیم کیا گیا جب 17 یا 18 مئی کو چینی فوجیوں کے ایک جتھے نے پنگانگ جھیل کے مشرقی کنارے پر بھارتی علاقے میں آٹھ کلو میٹر تک گھس کر بھارتی فوجیوں کو دوبدو لڑائی میں بہت مارا، ان میں سے 72 فوجیوں کو ہسپتال میں داخل کرایا گیا۔ یوں لیہ میں واقع چودھویں کور کے ہیڈ کوارٹرز میں پلاننگ شروع ہوئی۔ ایک سینئر افسر نے اس موقع کہا جو کچھ کارگل میں ہوا وہ اپنے آپ کو دوہرا رہا ہے۔ چار دن بعد 22 مئی کو آرمی چیف جنرل ایم ایم نروانے نے لیہ کا دورہ کیا۔ 24مئی کو مشرقی لداخ کیلئے کمک کی منظوری دی گئی۔

August 9, 2020

ہم نے غلط کام کیا نہ کسی اور کو کرنے دیں گے: وزیراعلیٰ پنجاب

لاہور:جدت ویب ڈیسک: وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے کہا ہے کہ ہم نے ہمیشہ قانون کی پاسداری کی، نیب کے علاوہ ایف آئی اے اور عدالتوں میں بھی پیش ہوا، تمام امور قانون کے مطابق چلا رہے ہیں، ہم نے نہ غلط کام کیا نہ کسی کو کرنے دیں گے۔ وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار کا کہنا تھا کہ اسلام آباد کے بعد ہم ایک نیا لاہور بسانے جا رہے ہیں، راوی ریور پروجیکٹ پاکستان کا سب سے بڑا منصوبہ ہے جو گیم چینجرثابت ہو گا۔ عثمان بزدار نے کہا کہ تمام چیزیں قوانین وضوابط کے تحت کی جاتی ہیں، جب بھی کسی عدالت یا تحقیقاتی ایجنسی نے بلایا پیش ہوا، ہمیشہ قانون کی پاسداری کی، پروپیگنڈا کرنے والوں کو روز جواب دیتے ہیں، مخالفین اپناکام کریں، ہم بھی اپنا کام کرتے رہیں گے۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب بڑاصوبہ ہے یہ نہیں کہہ سکتا کہ سب اچھاہے، اوپر کی سطح پرتبدیلی آئی ہے، مخالفین کردارکشی کے بجائے خرابیوں کی نشاندہی کریں،غلط کام کیا نہ کسی کوکرنیدیں گے، جب دامن صاف ہے توڈرنے کی کیا ضرورت ہے۔

August 9, 2020

ملک قرضوں کی دلدل میں، راوی منصوبے کیلئے 5 ہزار ارب کہاں سے آئینگے؟ احسن اقبال

لاہور:جدت ویب ڈیسک: پاکستان مسلم لیگ ن کے سیکرٹری جنرل احسن اقبال نے کہا ہے کہ حکومت نے ملک کو قرضوں کے دلدل میں پھنسادیا، بتایا جائے راوی منصوبیکے لیے 5 ہزار ارب کہاں سے آئیں گے؟ لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے لیگی رہنما کا کہنا تھا کہ کل حکومت نے 5 ہزارارب روپیکے راوی اربن پراجیکٹ کی تختی لگادی، سوال یہ ہیکہ یونیورسٹیز کے لیے 10 ارب روپے نہیں، 5 ہزار ارب کہاں سے آئیں گے۔ احسن اقبال کا کہنا تھا کہ دیامربھاشاڈیم کے لیے28 ارب درکارہیں اور حکومت نے16 ارب روپے رکھے ہیں، حکومت کے پاس تو ہائر ایجوکیشن کو دینے کے لییکچھ نہیں ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ حکومت قومی منصوبوں کے لیے رقوم فراہم نہیں کر رہی، راوی فرنٹ منصوبے کے لیے اربوں روپے کہاں ہیں؟حکومت عوام کو دکھانے کے لیے ہوائی قلعے بنا رہی ہے۔ سیکرٹری جنرل ن لیگ کا کہنا تھا کہ کیا آپ لوگوں کو بے وقوف سمجھتے ہیں؟ بجلی، گیس مہنگی کرکے اور تنخواہوں میں کٹوتی کرکے آپ خوشحالی نہیں لاسکتے اور نہ ہی حکومت کا اچھا تاثر ابھار سکتے ہیں۔