December 20, 2017

امریکا کی بیت المقدس سے متعلق فیصلے کی مخالفت کرنے والے ممالک کو دھمکی

نیویا رک جدت ویب ڈیسک :اقوام متحدہ کے لئے امریکی نمائندہ خصوصی نکی ہیلے نے خبردار کیا ہے کہ جنرل اسمبلی اجلاس کے دوران مقبوضہ بیت المقدس سے متعلق امریکی فیصلے کی مخالفت کرنے والے ممالک کے نام لیے جائیں گے اور ایک ایک ووٹ کا حساب رکھا جائے گا۔امریکا کی جانب سے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کیے جانے کے اعلان کے حوالے سے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں آ ج جمعرا ت کو ووٹنگ ہوگی تاہم اس سے قبل امریکی نمائندہ خصوصی نے مختلف سفیروں کو دھمکی آمیز خطوط لکھے ہیں۔نکی ہیلی نے اپنے خطوط میں لکھا کہ جنرل اسمبلی میں قرارداد کی حمایت کرنے و الے ممالک کے نام صدر ٹرمپ کو بتاو¿ں گی اور بیت المقدس سے متعلق قرارداد پر ایک ایک ووٹ کا حساب رکھا جائے گا۔نکی ہیلے نے اس حوالے سے ٹوئٹ بھی کیا جس میں ان کا کہنا تھا کہ ہم نے امریکی عوام کی خواہشات کے مطابق بیت المقدس میں سفارتخانہ منتقل کرنے کا فیصلہ کیا۔انہوں نے لکھا کہ جن ممالک کی ہم مدد کرچکے ہیں ان سے امریکا کو نشانہ بنانے کی توقع نہیں رکھتے، جمعرات کو ہمارے انتخاب پر تنقیدی ووٹ ڈالا جائے گا اور امریکا ایسے ممالک کے نام لے گا۔خیال رہے کہ 18 دسمبر کو سلامتی کونسل میں بیت المقدس سے متعلق متنازع امریکی فیصلہ مسترد کرنے کی درخواست امریکا نے ویٹو کردی تھی۔جب کہ امریکا کے اہم اتحادی ممالک برطانیہ، فرانس، جاپان، اٹلی اور یوکرین نے اس قرارداد کے حق میں ووٹ ڈالے، جس میں کہا گیا تھا کہ مقبوضہ بیت المقدس سے متعلق کسی بھی فیصلے کی قانونی حیثیت نہیں ہوگی۔یاد رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے 6 دسمبر کو مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے اور امریکی سفارتخانہ وہاں منتقل کرنے کا اعلان کیا تھا۔امریکی صدر کے اس اعلان پر نہ صرف مسلم ممالک میں شدید ردعمل دیکھنے میں آیا بلکہ یورپی اور مغربی ممالک میں بھی اس فیصلے کے خلاف مظاہرے دیکھنے میں آئے۔ڈونلڈ ٹرمپ کے فیصلے کے خلاف اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) کا ہنگامی اجلاس ترکی میں ہوا جس میں امریکی صدر کے فیصلے کی شدید مذمت کی گئی اور ڈونلڈ ٹرمپ سے فیصلہ فی الفور واپس لینے کا مطالبہ کیا گیا۔ ( صدام۔۔عا مر عبا سی )#/s#

December 20, 2017

بہادر فلسطینی لڑکی احید تمیمی نےاسرائیلی فوجیوں کی درگت بنادی ویڈیو وائرل ہونے کے بعد گرفتار

جدت ویب ڈیسک :اسرائیلی افواج نے دنیا بھر میں مشہور ہونے والی بہادر فلسطینی لڑکی احید تمیمی کو گرفتار کرلیا، قبل ازیں احید بے خوف ہوکر اسرائیلی افواج سے الجھتی رہی ہے اور اس کی بہادری کے اعتراف میں ترک حکومت نے اسے ایوارڈ بھی دیا ہے۔عرب میڈیا کے مطابق اسرائیلی افواج نے اسے ایک ویڈیو وائرل ہونے کے بعد گرفتار کیا جس میں احید ایک مسلح فوجی اہلکار کے سامنے مکا لہرارہی ہے تاہم اس سے قبل ایک ویڈیو میں احید کو ایک اسرائیلی سپاہی کے ہاتھ پر تھپڑ مارتے دیکھا جاسکتا ہے جو غالباً اس کی گرفتاری کی وجہ بنی۔احید کی تصاویر اور ویڈیو نے ایک جانب تو اسے فلسطینی حریت کی ایک لازوال مثال بنادیا ہے تو دوسری جانب اس کی بے چارگی اور غصے کی وجہ اس کا وہ بھائی ہے جو اسرائیلی افواج کے ظلم و ستم کی وجہ سے کئی سال سے کوما کی حالت میں موت و حیات کی کشمکش میں مبتلا ہے

December 20, 2017

ویرات کوہلی کو اٹلی میں شادی کرنا مہنگا پڑ گیا،ہندو انتہا پسندوں نے ایسی تیسی کردی

جدت یب ڈیسک :بھارتی میڈیا کے مطابق بھارتی حکمراں اور ہندو انتہا پسندجماعت بھارتیہ جنتا پارٹی(بی جے پی) کی ریاست مدھیہ پردیش کے ایم ایل اے پنا لال سکھیانےویرات کوہلی کی حب الوطنی پر سوالات اٹھاتے ہوئے کہا ہے کہ کوہلی نے بھارت کے بجائےاٹلی میں شادی کرنے کو کیوں ترجیح دی۔پنالال نے کوہلی کو مزید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا آپ ایک منٹ کے لیے سوچیں کہ آپ نے یہاں سے کمایا ہوا پیسہ اٹلی میں خرچ کردیا تو آپ نے اپنے ملک کو کیا دیا ویرات کوہلی اب ہمارے لیے متاثر کن شخصیت نہیں رہے بلکہ ہمارے لیے آئیڈیل انسان وہ ہوگا جو اپنے ملک سے ایماندارہوگا اور بھارت میں کمائے ہوئے پیسے اپنے ملک میں خرچ کرے گا۔ اسکل انڈیا سینٹر کی افتتاحی تقریب کے دوران پنالال نے کہا ویرات بھارت میں رہتے ہیں اور یہیں سے پیسے کماتے ہیں لیکن انہیں شادی کرنے کرنے کے لیے اپنے ملک میں کوئی جگہ نہیں ملی یہ ناقابل یقین ہے۔ پنالال کا مزید کہنا تھا کہ ہمارے دیوی دیوتاؤں نے یہاں شادی کی لہٰذا ویرات کوبھی یہیں شادی کرنی چاہئے تھی نہ کہ کسی اور ملک میں۔ کوہلی یہاں(بھارت)سے پیسےکماتے ہیں اور اپنی شادی کے لیے انہوں نے بھارت سے کمائے ہوئے لاکھوں روپے اٹلی میں خرچ کردئیے کیاوہ اپنے ملک کی عزت نہیں کرتے ان کی یہی بات ثابت کرتی ہے کہ وہ بالکل بھی حب وطن نہیں ہیںتے ہیں اور یہیں سے پیسے کماتے ہیں لیکن انہیں شادی کرنے کرنے کے لیے اپنے ملک میں کوئی جگہ نہیں ملی یہ ناقابل یقین ہے۔ پنالال کا مزید کہنا تھا کہ ہمارے دیوی دیوتاؤں نے یہاں شادی کی لہٰذا ویرات کوبھی یہیں شادی کرنی چاہئے تھی نہ کہ کسی اور ملک میں۔ کوہلی یہاں(بھارت)سے پیسےکماتے ہیں اور اپنی شادی کے لیے انہوں نے بھارت سے کمائے ہوئے لاکھوں روپے اٹلی میں خرچ کردئیے کیاوہ اپنے ملک کی عزت نہیں کرتے ان کی یہی بات ثابت کرتی ہے کہ وہ بالکل بھی حب وطن نہیں ہیں۔

 

December 19, 2017

گجرات میں نریندر مودی کی پارٹی پھر جیت گئی،تین مسلم امیدواربھی کامیاب

احمدآباد جدت ویب ڈیسک :مغربی بھارتی ریاست گجرات میں وزیراعظم نریندر مودی کی سیاسی پارٹی کو کامیابی حاصل ہوئی ہے جبکہ تین مسلم امیدواربھی کامیاب قرارپائے ہیں۔میڈیارپورٹس کے مطابق الیکشن کمیشن نے کہاکہ گجرات اسمبلی میں بی جے پی کو ننانوے نشستیں حاصل ہوئی ہیں۔بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کی آبائی ریاست گجرات میں حکمران پارٹی بی جے پی کو ریاستی انتخابات میں کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ یہ قوم پرست سیاسی جماعت اِس ریاست پر گزشتہ بائیس برسوں سے حکومت کر رہی ہے۔ تاہم اس مرتبہ کے انتخابات میں مجموعی طور پر قوم پرست ہندو جماعت کے ووٹ بینک میں کمی کا رجحان سامنے آیا ہے۔گجرات اسمبلی کی کل نشستیں 182 ہیں۔ سابقہ اسمبلی میں بھارتیہ جنتا پارٹی کے پاس 114 سیٹیں تھی۔ رواں برس کے الیکشن میں ا±سے پندرہ نشستیں کم ملی ہیں۔وزیراعظم نریندر مودی نے اس کامیابی کو ایک بڑی جیت قرار دیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ دو ریاستوں میں بھارتیہ جنتا پارٹی کی کامیابی اس بات کا ثبوت ہے کہ عوام ا±ن کی حکومتی پالیسیوں کو پسند کرتے ہیں۔ گجرات کی ریاستی اسمبلی کے الیکشن مہم کی قیادت نریندر مودی خود کر رہے تھے۔ وزیراعظم بننے سے قبل وہ بارہ برس تک اس ریاست کے وزیراعلیٰ رہے تھے۔مرکزی اپوزیشن جماعت کانگریس نے ریاستی الیکشن میں اپنی شکست تسلیم کر لی ہے۔ گجرات اسمبلی میں کانگریس نے 77 نشستیں حاصل کی ہیں۔ سابقہ الیکشن کے مقابلے میں کانگریس کو سترہ نشستیں زیادہ حاصل ہوئی ہیں۔ اس پر کانگریسی لیڈروں کا خیال ہے کہ یہ ایک حوصلہ افزا رجحان ہے اور سن 2019 کے پارلیمانی انتخابات کے وقت عوامی سوچ میں واضح تبدیلی پیدا ہو جائے گی۔