August 30, 2017

ٹیکساس میں طوفان ہاروی کی تباہ کاریوں کا سلسلہ جاری ،کرفیو نافذ

جدت ویب ڈیسک :ریاست ٹیکساس کے شہر ہیوسٹن میں سمندری طوفان کی تباہ کاریاں جاری ہیں اور ہیوسٹن میں مزید 3 افراد ہلاک ہوگئے جس کے بعد ہلاکتوں کی تعداد 18 ہوگئی، لوگوں کو محفوظ مقامات پر پہنچانے کے لئے کشتیوں کی مدد لی جارہی ہے اور رضا کار پانی میں پھنسے لوگوں کو محفوظ مقام پر پہنچانے کا کام انجام دے رہے ہیں۔شہر میں 2 فٹ سے زائد بارش ریکارڈ کی گئی ہے جس کے بعد گلیاں سڑکیں انڈر پاسز سب پانی میں ڈوبے ہیں۔ کئی مقامات پر 10 فٹ تک پانی جمع ہے اور مسلسل بارش کے باعث اس میں مزید اضافے کا خدشہ ظاہر کیا جارہا ہےدوسری جانب طوفان ہاروی کی وجہ سے کیمیکل پلانٹ میں دھماکے کا خدشہ ہے جس کے پیش نظر ارد گرد کی آبادی کو خالی کرالیا گیا ہے۔سمندری طوفان سے متاثر امریکی شہر ہیوسٹن میں رات کو کرفیو نافذ کردیا گیا ہے اور میئر کا کہنا ہے کہ چوری، ڈکیتی، لوٹ مار اور رات کے وقت ڈرائیونگ کے واقعات کی روک تھام کے لئے کرفیو نافذ کیا گیا ہے۔

 

August 30, 2017

فوجی مراکز کے معائنے کا امریکی خواب کبھی پورا نہیں ہوگا، ایران

تہران جدت ویب ڈیسک ایران نے کہا ہے کہ اس کے فوجی مراکز کے معائنے کا امریکی خواب کبھی پورا نہیں ہوگا۔ارنا نیوز کے مطابق اقوام متحدہ میں امریکی مندوب نکی ہیلی نے 23 اگست کو ویانا میں آئی اے ای اے کے سربراہ یوکیا آمانو سے ملاقات کے بعد دعوی کیا تھا کہ جامع ایٹمی معاہدے میں ایرانی فوجی اور غیر فوجی دونوں تنصیبات کے معائنے کے لیے کسی فرق کا لحاظ نہیں رکھا گیا ہے۔ ایرانی حکومت کے ترجمان محمد باقر نوبخت نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے دو ٹوک الفاظ میں کہا کہ ایران قانونی دائرہ کار سے ہٹ کسی بھی چیز کو ہرگز قبول نہیں کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ امریکا کی جانب سے فوجی مراکز کے معائنے کی بات کو قبول کرنے کا تو سوال ہی پیدا نہیں ہوتا کیونکہ فوجی مراکز کے بارے میں معلومات ہر ملک کے لیے انتہائی حساس اور خفیہ ہوتی ہیں۔دوسری جانب عالمی امور میں رہبر انقلاب کے مشیر ڈاکٹر علی اکبر ولایتی نے کہا ہے کہ ایران کسی بھی ملک کو اپنے حساس اور اسٹریٹیجک فوجی مراکز کے معائنے کی ہرگز اجازت نہیں دے گا۔

August 29, 2017

پا کستا ن نہیں امریکہ پا کستا ن کا محتا ج ہے ،سا بق سی آ ئی اے سر براہ

نیویارک جدت ویب ڈیسک امریکی سی آئی اے کے سابق سربراہ مائیکل موریل نے واضح کیا ہے کہ پاکستان کی امداد بند یا کم کرکے اس پر دباؤ نہیں ڈالا جاسکتا امریکہ کا پاکستان پر ناجائز دباؤ کا حربہ کارگر نہیں ہوگا البتہ اس دباؤ سے امریکہ کو نقصان پہنچ سکتا ہے پاکستان کو نہیں کیونکہ پاکستان امریکی امداد سے آزاد ہوچکا ہے،چین جیسے دوست کی امداد اسے حاصل ہے اور امریکہ پاکستان کی فضائی اور زمینی راستوں کا محتاج ہے جس کے تعاون کے بغیر یہ جنگ امریکہ جیت نہیں سکتا۔سی آئی اے کے سابق قائم مقام سربراہ مائیکل موریل نے ایک حالیہ انٹرویو میں صدر ٹرمپ کی تقریر پر اپنا رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کو ہم کس قدر پالیسی میں تبدیلی پر آمادہ کرسکتے ہیں کہ وہ طالبان کی حمایت سے کنارہ کش ہوجائے تاہم ایران اور روس کی امداد سے طالبان میں ایک نئی قوت پیدا ہوچکی ہے ان میں نظریاتی عنصر ایسا ہے جسے شکست دینا ناممکن ہے وہ ہتھیار نہیں ڈالیں گے۔انہو ں نے کہا کہ صدر ٹرمپ کی پالیسی واضح نہیں ہے نہ ہی انہوں نے کوئی پلان دیا ہے کہ کتنی فوج بھیجی جائیگی اور اس کا رول کیا ہوگا جبکہ انہوں نے افغان حکومت کے کردارکی بھی وضاحت نہیں کی ۔انہوں نے افغانستان سے امریکی فوج کے مکمل انخلائ کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ طالبان کے لئے اس سے آسانیاں پیدا ہوں گی تاہم انہوں نے یہ بھی کہا کہ اگر امریکی افواج کی زمین پر موجودگی میں اضافہ ہوتا ہے تو طالبان کی کارروائیوں سے امریکی فوجیوں کے تابوت پہنچنے پر امریکہ میں سیاسی عدم استحکام پیدا ہوسکتا ہے۔مائیکل موریل نے مزےد کہا کہ طالبان کے اثرورسوخ کو روکنے کیلئے افغان حکومت کی کرپشن کے خاتمے اور افغان فوج کی کارکردگی بہتر بنانا ہوگی۔انہوں نے کہا کہ امریکہ اگر ہارے نہ بھی تو جنگ جیت نہیں سکتا۔انہوں نے کہا کہ طالبان کی جنگ نظریاتی ہے ایران اور روس کی پالیسیوں کا جائزہ لینا ضروری ہے جبکہ پاکستان کو آمادہ کیا جاسکتا ہے کہ وہ طالبان کی حمایت سے دست کش ہوجائے پاکستان پر دباؤ کارگر نہیں ہوگا وہ امریکی امداد سے آزاد ہوچکا ہے،چین اسکی ہر قسم کی مدد کر رہا ہے،ماضی میں بھی امریکہ امداد بند کرکے دیکھ چکا ہے لہٰذا طالبان کو مذاکرات کی میز پر لانے کیلئے اس کا سیاسی حل تلاش کرنا ہوگا،پاکستان کو دباؤ میں لاکر اسے غیر مستحکم کرنا کسی طرح بھی سود مند نہیں ہے،واحد حل سیاسی ہے کہ طالبان سے مذاکرات کئے جائیں۔انہوں نے افغانستان میں نیٹو اور امریکی افواج کے کمانڈر جنرل نکلسن کے انٹرویو کا بھی حوالہ دیا جس میں انہوں نے بھی افغان مسئلے کے سیاسی حل پر زور دیا ہے،کمانڈر کا بھی خیال ہے کہ مذاکرات کے ذریعے ہی مسئلہ حل ہوگا،طالبان کو بھی یہ احساس ہے کہ وہ جنگ جیت نہیں سکتے۔

August 28, 2017

بھارتی حکمران ’این آئی اے‘ کو بطور ہتھیار استعمال کر رہے ہیں‘یاسین ملک

سرینگر جدت ویب ڈیسک مقبوضہ کشمیر میں جموں وکشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین محمد یاسین ملک نے کہا ہے کہ بھارتی حکمران اور مقبوضہ علاقے میں ان کے کٹھ پتلی کشمیریوں کی تحریک آزادی کو کچلنے کے لیے’ این آئی اے‘ کوایک ہتھیار کے طور پر استعمال کررہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ بھارتی تحقیقاتی ادارہ حریت رہنمائوں ، کشمیری تاجروں کو نئی دلی طلب کر کے انہیں اعصابی تشدد سے گزار رہا ہے ۔ میڈیارپورٹ کے مطابق محمد یاسین ملک نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں این آئی اے کی طرف سے پارٹی رہنما نورمحمد کلوال کو پوچھ تاچھ کے لیے نئی دلی طلب کرنے کے اقدام پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ نور محمد کلوال ایک سیاسی و مزاحمتی رہنما ہیں جن کی سماجی اور سیاسی زندگی کھلی کتاب کی مانند ہے۔انہوںنے کہا کہ نور محمد کلوال انتہائی سادہ زندگی بسر کرنے والے انسان ہیں جن کی دیانت،شرافت،سادگی،بے غرضی اور پرامن مزاحمت کے ساتھ گہری وابستگی کے سبھی لوگ معترف ہیں۔یاسین ملک نے کہا کہ بھارتی حکمران چاہتے ہیں کہ کشمیری مزاحمتی قائدین اور پوری تحریک آزادی کو داغدار کیا جائے اور اسکے لیے میڈیا کا بھی بھر پور استعمال کیا جا رہا ہے لیکن انہیں ناکامی کے سوا کچھ نہیں ملے گا۔ محمد یاسین ملک نے کہا کہ لاکھوں افراد کی قربانیاں کشمیریوں کے لیے ایک مقدس امانت کی حیثیت رکھتی ہیں اور وہ ان قربانیوں کی ہر قیمت پر حفاظت کریں گے۔ انہوںنے کہا کہ بھارت کی یہ غلط فہمی ہے کہ وہ اوچھے ہتھکنڈوں کے ذریعے کشمیریوں کے جذبہ آزادی کو دبا سکے گا۔ بھارتی تحقیقاتی ادارے ’ نیشنل انویسٹی گیشن ایجنسی‘نے نور محمد کلوال کو 28اگست بروز پیر کو پوچھ تاچھ کے لیے نئی دلی بلا لیا ہے ۔