July 15, 2017

امریکی صدر ٹرمپ کو پھر دھچکا

واشنگٹن جدت ویب ڈیسک امریکی ریاست ہوائی کی عدالت نے فیصلہ سنایا ہے کہ امریکا میں مقیم افرادکے دادا، دادی، نانا، نانی اور دیگر عزیز و اقارب کوصدر ٹرمپ کی سفری پابندیوں کے تحت ملک میں داخلے سے نہیں روکا جا سکتا۔ ریاست ہوائی کے ضلعی جج ڈیرک واٹسن کی جانب دیا جانے والا یہ فیصلہ صدر ٹرمپ کے امیگریشن کریک ڈائون کے مقابلے میں تازہ کارروائی ہے۔ گزشتہ ماہ سپریم کورٹ کے فیصلے میں کہا گیا کہ فقط انتہائی قریبی رشتے دار ہی امریکا میں آسکیں گے۔ تاہم ٹرمپ انتظامیہ نے فیصلہ کیا تھا کہ ان میں وہاں کے رہائشیوں کے دادا دادی یا نانا نانی، پوتے پوتیاں یا نواسے نواسیاں، بھائیوں یا بہنوں کی اولاد، شوہر اور بیوی کے بہن بھائی یا کزن وغیرہ شامل نہیں۔ تاہم جج نے قریبی رشتے داروں سے متعلق حکومتی وضاحت کو بہت محدود قرار دیا ہے۔فیصلے میں جج ڈیرک واٹسن کا کہنا تھا کہ مثال کے طورپر عقل سلیم یہ کہتی ہے قریبی خاندان کے افراد میں دادا اور دادی بھی شامل ہیں۔ اس فیصلے کے نہ صرف ہوائی بلکہ پورے امریکا میں دوررس اثرات مرتب ہونگے۔خیال رہے کہ تقریباً 3 ہفتے قبل امریکا کی سپریم کورٹ نے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مسلمان ملکوں پر سفری پابندیوں کے قانون کو جزوی طور پر بحال کر دیا تھا۔ اس حکم نامے میں 6 مسلمان ممالک پر 90 روز کی سفری پابندی اور پناہ گزینوں پر بھی120 روزہ پابندی عائد کرنے کاکہا گیا تھا۔

July 15, 2017

چلتی ٹرین :مسلم خاندان بھارتی انتہا پسند ہندوئوں کا شکار

نئی دہلی جدت ویب ڈیسک بھارتی ریاست اترپردیش میں ضلع فرخ آباد کے نزدیک ریل گاڑی میں سوار ایک مسلمان خاندان کو ہندو انتہا پسند ہجوم نے باقاعدہ شناخت کرکے ان کے ساتھ مارپیٹ اور لوٹ مار کی جبکہ ریلوے پولیس تماشائی بنی رہی۔ بھارتی اخبار ’’دی ہندو‘‘ کے مطابق شاکر نامی شخص اپنی اہلیہ اور معذور بیٹے کے ساتھ گڑگاؤں سے قائم گنج جارہا تھا جبکہ اس کے چار رشتہ دار بھی ہمراہ تھے۔ راستے میں فرخ آباد سے پہلے چند لڑکوں نے ریل گاڑی رکوائی اور ان کی بوگی میں چڑھ گئے۔ بوگی میں چڑھنے والے ہندو انتہا پسندوں نے خاتون کے برقع پوش ہونے کی وجہ سے مسلمان گھرانے کو شناخت کیا اور اس کے بعد ان پر حملہ کردیا۔ان لوگوں نے سب سے پہلے اس معذور لڑکے کو مارنا شروع کردیا اور جب انہیں روکا گیا تو وہ دوسرے مسافروں کے ساتھ بھی مارپیٹ کرنے لگے۔ مسافروں نے بڑی مشکل سے انہیں ٹرین سے نکال باہر کیا اور دروازے کھڑکیاں بند کرلیں لیکن پھر بھی وہ ایک کھڑکی توڑ کر دوبارہ بوگی میں گھس آئے۔حملہ آوروں نے شاکر اور اس کے خاندان والوں سے موبائل اور زیورات چھین لیے جبکہ انہیں جان سے مارنے کی دھمکیاں بھی دیں۔ واضح رہے کہ مودی سرکار کی خاموش حمایت کے باعث بھارت میں نام نہاد ’’گئو رکشکوں‘‘ کے ہاتھوں مسلمانوں پر تشدد اور قتل و غارت گری کے واقعات میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے اور ایسے بیشتر واقعات میں قانون نافذ کرنے والے ادارے خاموش رہتے ہیں۔ اس سے پہلے بھی عید کے موقعے پر دہلی کے نزدیک ایک ہندو جنونی ہجوم نے بس میں سفر کرنے والے 16 سالہ جنید پر گائے کا گوشت رکھنے کا الزام لگا کر اسے بدترین تشدد کرکے قتل کردیا تھا جبکہ اس کے بھائیوں کو شدید زخمی کردیا تھا۔ تب بھی دہلی پولیس نے خاصی دیر بعد ’’نامعلوم ہجوم‘‘ کے خلاف مقدمہ درج کرکے ایک شخص کو گرفتار کیا تھا اور فائل بند کردی تھی۔فرخ آباد واقعے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوجانے کے بعد بھارتی ریلوے پولیس نے اسی ویڈیو کی بنیاد پر 30 مشتبہ افراد سے پوچھ گچھ کی اور ان میں سے 3 افراد کو حراست میں بھی لیا جاچکا ہے۔واضح رہے کہ انتہا پسند ہجوم کی بڑھتی ہوئی دہشت گردی کے باعث مسلمانوں اور دیگر اقلیتوں کا گھروں سے نکلنا اور محفوظ طور پر سفر کرنا مشکل سے مشکل تر ہوتا جارہا ہے جبکہ سماجی مبصرین نے اس حوالے سے بھارتی سیاست دانوں کے ردِعمل کو ’’مجرمانہ خاموشی‘‘ قرار دیا ہے۔

July 14, 2017

ہندوستان مسلمانوں کا ملک نہیں ،گڈو راجپوت

نئی دہلی جدت ویب ڈیسک مقبوضہ کشمیر میں امرناتھ یاتریوں پر حملے کے بعد انتہائ پسند ہندو مسلمانوں کیخلاف سخت بیان بازی کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہیں۔ اب بھارتیہ جنتا پارٹی âبی جے پیá کے ایک ممبر اسمبلی گڈو راجپوت نے مسلمانوں کیخلاف ایک نفرت انگیز ویڈیو بیان دیا ہے جس میں انہوں نے اس تمام واقعے کا ذمہ دار مسلمانوں کو قرار دیتے انھیں ہندوستان سے نکالنے کی دھمکی دیدی ہے۔بی جے پی کے ممبر اسمبلی برج بھوشن عرف گڈو راجپوت نے فیس بک لائیو ویڈیو کے ذریعے اپنے متنازع بیان میں کہا کہ ہندوستان مسلمانوں کا ملک نہیں ہے۔ اگر 100 کروڑ ہندو اکھٹے ہو گئے تو 20 کروڑ مسلمانوں کو ملک سے بھگا دیں گے۔ انہوں نے اپنے مطالبات میں کہا کہ مسلمانوں کو ناصرف حج پر جانے سے روکا جائے بلکہ حج سبسڈی بھی ختم ہونی چاہیے۔ اس کے علاوہ ان کی ریزرویشن کو بھی ختم کیا جائے کیونکہ مسلمان اب اقلیت میں نہیں ہیں، مگر انہیں ریزرویشن کا فائدہ مل رہا ہے۔ بی جے پی کے لیڈر کا کہنا تھا کہ ہندوستان میں رام مندر ضرور بن کر رہے گا۔ اگر مسلمانوں نے مندر بنانے میں رکاوٹ پیدا کی تو ہم انھیں بھی مکہ اور مدینہ نہیں جانے دیں گے۔

July 14, 2017

شام،خودکش دھماکا، 37 افراد ہلاک، 52 زخمی

شام میں کیمیائی ہتھیاروں کااستعمال عالمی قوانین کیخلاف ورزی ہے،تمام ممالک عملدرآمدکویقینی بنائیں،اقوام متحدہ
ادلب / نیویارک جدت ویب ڈیسک شامی شہرادلب میں خودکش بمبار نے بارودسے بھری گاڑی باغیوں کے ایک اجتماع سے ٹکرادی جس کے نتیجے میں 37افرادہلاک اور 52 زخمی ہوگئے۔دھماکے سے ایک ٹیکسٹائل فیکٹری تباہ ہوئی جسے حیاہ تحریر الشام نامی باغی گروپ اپنے مرکزی دفترکے طورپراستعمال کر رہا تھا، یاد رہے کہ حیات تحریر الشام نامی تنظیم کا تعلق القاعدہ سے رہا ہے جو بعد میں النصرہ فرنٹ میں ضم ہو گیاتھا۔میڈیارپورٹ کے مطابق ادلب شہرکے زیادہ حصے پر عسکریت پسند جنگجوؤں کا قبضہ ہے جبکہ ترکی کی سرحد سے متصل اس صوبے میں کنڑول کے خواہش مند عسکری پسند گروپوں کے درمیان ایک عرصے سے لڑائی جاری ہے۔علاوہ ازیں اقوم متحدہ کے سیکریٹری جنرل انٹونیوگیوٹیریس نے کیمیائی ہتھیاروں کے امتناع کے لیے قائم کی گئی تنظیم یواین جوائنٹ انویسٹی گیشن میکینزم کے 3رکنی وفد سے نیویارک میںملاقات کی،اس موقع پرٹیم نے انھیں شام میں کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کے حوالے سے اپنی معلومات سے آگاہ کیا۔گیوٹیریس نے کہا کہ تمام ممالک شام میں کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کے حوالے سے جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم کا ساتھ دیں،شام میں جوہری ہتھیاروں کا استعمال عالمی قوانین کی سنگین خلاف ورزی ہے اور عالمی برادری کوان جرائم پرغورکرتے ہوئے کیمیائی ہتھیاروںکے استعمال پرعائدکی گئی عالمی پابندی کے احترام کویقینی بنانے کے لیے اپناکردار ادا کرناچاہیے۔

July 14, 2017

لندن تیز اب گردی : موٹرسائیکل سواروں نے عوام پر تیزاب پھینک دیا

لندن جدت ویب ڈیسک سکاٹ لینڈ یارڈ مشرقی لندن میں شہریوں کے چہروں پر تیزاب پھینکنے والے چار حملہ آوروں کے بارے میں تحقیقات شروع کر دی ہیں ۔میٹرو پولیٹن پولیس کا کہنا ہے کہ حملہ آور موٹر سائیکل پر سوار تھے۔حملے کا نشانہ بننے والے افراد کو ہسپتال منتقل کیا گیا۔ ایک زخمی کے بارے میں بتایا گیا ہے کہ وہ شدید زخمی ہوا ہے۔تاہم ابھی تک کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی۔ موٹر سائیکل پر سوار ایک 32 سالہ شخص کو ایک دوسرے موٹر سائیکل پر سوار دو حملہ آوروں نے نشانہ بنایا جس سے ان کا چہرہ زخمی ہو گیا۔پولیس کا کہنا ہے کہ دونوں افراد نے متاثرہ شخص کے چہرے پر تیزاب کا سپرے کیا اور اسے پرے دھکیل کر اس کی موٹر سائیکل بھی چھین لی۔پولیس کا کہنا ہے کہ وہ متاثرہ شخص کے زخموں کے بارے میں معلومات ملنے کا انتظار کر رہے ہیں۔اس میں نشانہ بننے والے شخص کو بھی ہسپتال لے جایا گیا تاہم پولیس کا کہنا ہے کہ اس شخص کو ایسے زخم نہیں آئے جو اس کی زندگی کے لیے خطرہ ہوں یا آنے والے وقت میں اس کی زندگی کو متاثر کرنے والے ہوں۔ پولیس کو سٹوک نٹوینگٹن میں کیزنیو روڈ پر ڈکیتی کی اطلاع ملی اور انھیں معلوم ہوا کہ اس واقعے میں بھی تیزابی مادے کا استعمال ہوا ہے۔ بتایا گیا کہ جس شخص کے چہرے پر یہ مادہ ڈالا گیا اس سے ان کا چہرہ بہت متاثر ہوا ہے۔پر کلیپٹن کے علاقے میں چیٹسورتھ روڈ پر ٹریفک میں موجود ایک شخص پر موٹر سائیکل پر آنے والے دو افراد نے تیزاب پھینکا اور پھر اسے پرے دھکیل کر اس کی بائیک بھی چھین لی۔متاثرہ شخص کو مشرقی لندن میں پولیس کے حوالے کر دیا گیا۔پولیس کا کہنا ہے کہ تحقیقات ہو رہی ہیں اور مبینہ حملہ آوروں کو تلاش کا سراغ لگانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

July 13, 2017

چین نے پاکستان ،بھارت کے درمیان مسئلہ کشمیر پر کشیدگی کم اور تعلقات بہتر کرنے کے لیے ’’تعمیری کردار‘‘ ادا کرنے کی پیشکش کردی

جدت ویب ڈیسک ؛چین کی طرف سے پاکستان اور بھارت کے درمیان کشیدگی کم کرنے کا بیان ایک ایسے وقت میں آیا ہے جب خود دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی عروج پر ہے۔وزارت خارجہ کی ترجمان نے مزید کہا کہ پاکستان اور بھارت جنوبی ایشیا کے اہم ممالک ہیں لیکن کشمیر کے کشیدہ حالات کے سبب اب اس تنازعے کی طرف سب ہی کی توجہ مبذول ہورہی ہے جب کہ یہ صورتحال اتنی کشیدگی ہے کہ اب عالمی برادری بھی اس جانب دھیان دینے لگی ہے۔وزارت خارجہ کی ترجمان نے کہا امید ہے کہ پاکستان اور بھارت ایسے اقدامات اٹھائیں گے جن سے دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی کم کرنے اور خطے میں امن و استحکام قائم کرنے میں مدد ملے گی۔ترجمان کا کہنا تھا کہ چین، بھارت اور پاکستان کے درمیان تعلقات معمول پر لانے اوربہتر بنانے میں اپنا تعمیری کردار ادا کرنے کے لیے تیار ہےبھارت اور چین کے فوجی سکّم کی سرحد کے نزیدک ڈوکلام خطے میں ایک دوسرے کے سامنے آنکھوں میں آنکھے ڈالے کھڑے ہیں۔برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق چینی وزارت خارجہ کی ترجمان گنگ شوانگ نے بیجنگ میں ایک نیوز کانفرنس کے دوران بڑھتی ہوئی پاک بھارت کشیدگی پر تشویش کا اظہار کیا۔انہوں نے کہا کہ کنٹرول لائن پر دونوں ملکوں کے درمیان جس طرح کا ٹکراؤ ہورہا ہے اس سے نہ صرف دونوں ملکوں کا امن و استحکام خطرے میں پڑے گا بلکہ یہ کشیدگی پورے خطے پر اثر انداز ہوگی۔