January 18, 2020

مقبوضہ کشمیر ‘:شدید برف باری کیوجہ سے درجنوں دیہات کے سڑک رابطے معطل ، بجلی اور پانی کا نظام ٹھپ

سرینگر جدت ویب ڈیسک :مقبوضہ وادی کشمیر میں شدید برف باری کی زد میں آنے والے درجنوں دیہات کے سڑک رابطے معطل ہوچکے ہیں جبکہ بجلی اور پانی کا کا نظام ٹھپ پڑا ہے۔ کشمیر میڈیاسروس کے مطابق منگل کی شب سے جمعرات کی صبح تک وادی کشمیر کے جنوبی اور وسطی علاقوں میں بھاری اور دیگر علاقوں میں درمیانہ درجے کی متواتر برف باری سے سرینگر سمیت پوری وادی سفید چادر میں ڈھک گئی ۔ برف باری کے باعث اگر چہ سردی کی سخت لہر سے لوگوں کو قدرے راحت مل گئی تاہم راستے بند ہونے اور بجلی کے بریک ڈائون سے انہیں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ بھاری برف کے سبب سرینگر میں ڈرینج سسٹم بیکار ہوچکا ہے اور اکثر سڑکیں اور گلی کوچے زیر آب آئے گئے۔ جنوبی کشمیر اور وسطی کشمیر کے ضلع بڈگام کے مختلف علاقوں میں بجلی کا نظام بھی متاثر ہوا جبکہ پانی کی سپلائی پر بھی اثر پڑا۔ مختلف مقامات پر بجلی کے کھمبے اور ترسیلی لائنیں زمین پر آگئی ہیں جسکے نتیجے میں متعد د علاقے اندھیرے میں ڈوب گئے ہیں۔

January 18, 2020

ادلب میں حملے اورجھڑپیں،حکومتی ملیشیاکے جنگجوئوں سمیت 84افرادہلاک

ادلب جدت ویب ڈیسک :شام کے صوبہ ادلب میں حکومت کے فضائی حملوں اورجھڑپوں میں حکومت مخالف جنگجو،سرکاری فوجی اوراتحادی ملیشیاکے اہلکار اورعام شہریوں سمیت 84افرادہلاک ہوگئے،میڈیارپورٹس کے مطابق انسانی حقوق کے شامی مبصر گروپ کے سربراہ رامی عبدالرحمٰن نے بتایا کہ گزشتہ روز نصف شب کو حملہ ہوا۔تازرہ ترین پرتشدد حملوں کے بعد روس کی طرف سے جنگ بندی معاہدہ بھی سبوتاڑ ہوگیا۔ان کے مطابق حملے میں کم از کم 26 حکومت مخالف جنگجو مارے گئے جن میں سے بیشتر حیات تحریر الشام کے رکن تھے۔مبصر گروپ نے کہا کہ مذکورہ لڑائی میں 29 سرکاری فوجی اور اتحادی ملیشیا کے اہلکار بھی مارے گئے۔حکومتی فورسز کے فضائی حملوں میں 19 شہری ہلاک ہوگئے۔شام کی سرکاری خبر رساں ایجنسی کے مطابق حکومت کے زیر کنٹرول حلب شہر کے ایک رہائشی علاقے پر راکٹ فائر کیا گیا۔رپورٹ میں کہا گیا کہ دہشت گرد گروپ کی جانب سے فائر کیے گئے راکٹ سے 6 شہری ہلاک اور 15 دیگر زخمی ہوئے۔واضح رہے کہ اقوام متحدہ نے انکشاف کیا تھا کہ دنیا بھر میں جاری جنگی محاذوں پر بچوں پر حملوں اور ہلاکتوں کی تعداد میں 2010 کے مقابلے میں تین گنا اضافہ ہوا ہے۔گزشتہ 10سالوں کے دوران نت نئے جنگی محاذ کھلے ہیں اور ان محاذوں کے دوران سب سے زیادہ نقصان بچوں کا ہوا ہے جہاں ان ہولناک جنگی محاذوں میں ہزاروں بچے ہلاک اور لاکھوں معذور و بے گھر ہو گئے۔یونیسیف نے دنیا بھر میں جاری تنازعات میں تین ممالک کو سب سے زیادہ خطرناک قرار دیا اور خبردار کیا تھا کہ 2019 میں شام، یمن اور افغانستان میں بچے سب سے زیادہ خطرے کی زد میں ہوں گے۔خیال رہے کہ ترکی کا کئی برسوں سے یہ موقف ہے کہ شام میں موجود کرد جنگجو ‘دہشت گرد’ ہمارے ملک میں انتہا پسند کارروائیوں میں ملوث ہیں اور انہیں کسی قسم کا خطرہ بننے سے روکنا ہے۔

January 18, 2020

ادلب میں لڑائی کے باعث ساڑھے تین لاکھ افراد نے نقل مکانی کی،اقوام متحدہ

نیویارک جدت ویب ڈیسک :اقوام متحدہ نے کہاہے کہ گذشتہ برس دسمبر سے شام کے ادلب صوبے میں روسی حمایت سے جاری اسد رجیم کی فوجی کارروائیوں کے نتیجے میں ساڑھے تین لاکھ افراد بے گھر ہوئے ہیں۔عرب ٹی وی کے مطابق ایک بیان میںاقوام متحدہ کی طرف سے کہا گیا کہ ادلب میں دو ماہ سے کم عرصے کے دوران ساڑھے تین لاکھ افراد ترکی کی سرحد کی طرف نقل مکانی کرچکے ہیں۔ نقل مکانی کرنے والوں میں زیادہ تر بچے اور عورتیں شامل ہیں۔اقوام متحدہ کے رابطہ کار برائے انسانی حقوق کے دفتر سے جاری تازہ رپورٹ میں کہا کہ لڑائی میں شدت کے نتیجے میں انسانی صورتحال بدستور خراب ہوتی جارہی ہے۔شامی اپوزیشن کے زیرکنٹرول ادلب کے جنوبی علاقوں میں شامی رجیم اور اس کی معاون روسی افواج کی طرف سے گذشتہ برس دسمبر سے مسلسل فضائی حملے جاری ہیں۔ ادلب میں معرہ النعمان اور دوسرے علاقوں پرسابقہ النصرہ فرنٹ اور موجودہ ‘تحریر الشام’ محاذ کا کنٹرول ہے۔شامی اور روسی فوج کی بمباری کے باعث نقل مکانی کرنے والے زیادہ تر شہری شمالی ادلب، سراقب، اریحا اور ترکی کی سرحد کے قریب قائم پناہ گزین کیمپوں کا رخ کررہے ہیں۔ ان پناہ گزین کیمپوں میں پہلے ہی بڑی تعداد میں لوگ رہ رہے ہیں۔

January 17, 2020

ٹرمپ انتظامیہ کا جھوٹ ایک بار پھر بے نقاب ہو گیا،ایرانی راکٹ حملوں میں گیارہ امریکی فوجی زخمی ہوئے ہیں اور کوئی ہلاک نہیں ہوا۔

جدت ویب ڈیسک ::امریکی فوج کی سینٹرل کمانڈ کے ترجمان کیپٹن بل اربن نے کہا ایرانی راکٹ حملوں میں گیارہ امریکی فوجی زخمی ہوئے ہیں اور کوئی ہلاک نہیں ہوا۔
ٹرمپ انتظامیہ کا جھوٹ ایک بار پھر بے نقاب ہو گیا۔ امریکی فوج کی سینٹرل کمانڈ کے ترجمان کیپٹن بل اربن نے 8 جنوری کو ایران کی جانب سے عراق میں امریکی فوجی اڈوں پر راکٹ حملوں میں 11 فوجیوں کے زخمی ہونے کا اعتراف کر لیا۔
ترجمان امریکی سینٹرل کمانڈ کا کہنا تھا کہ زخمی فوجیوں کو عراق سے باہر لیجایا گیا جہاں انکا علاج ہوا۔ 8 فوجیوں کو جرمنی اور 3 کو کویت منتقل کیا گیا۔
کیپٹن بل اربن کا مزید کہنا تھا تمام فوجیوں کے صحتیابی کے بعد عراق واپس ڈیوٹی پر آنے کا امکان ہے جب کہ ایرانی حملے میں کوئی ہلاک نہیں ہوا۔
یاد رہے کہ امریکی صدر ٹرمپ اور ان کی انتطامیہ کا کہنا تھا کہ ایرانی حملے میں کوئی امریکی فوجی ہلاک یا زخمی نہیں ہوا۔ یہی نہیں امریکی صدر نے ٹویٹ میں سب ٹھیک ہے بھی لکھا تھا۔

ایرانی راکٹ حملوں ، گیارہ ، امریکی فوجی ، زخمی ہلاک ، ترجمان ، امریکی سنٹرل کمانڈ

January 16, 2020

ٹرمپ کے مواخذے کے آرٹیکلز سینیٹ کو بھجوانے کی قرارداد منظور

جدت ویب ڈیسک ::امریکی ایوان نمائندگان میں صدر ٹرمپ کے مواخذے کے آرٹیکلز سینیٹ کو بھجوانے کی قرارداد کو کثرت رائے سے منظور کر لیا گیا۔اسپیکر ایوان نمایندگان نینسی پلوسی نے صدارتی مواخذے کی قرارداد پر دستخط کر دیے، امریکی ایوان نمایندگان میں قرارداد کے حق میں 228 جب کہ مخالفت میں 193 ووٹ کاسٹ ہوئے۔
امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ باقاعدہ طور امریکی تاریخ کے تیسرے صدر بن گئے جن کا مواخذہ کیا جارہاہے ، 21جنوری سے امریکی سینٹ میں مواخذے کی کارروائی شروع ہوگی۔
ایوان نمایندگان کی اسپیکر نینسی پلوسی نے پاس کردہ قرار داد پر دستخط کر کے اسے سینیٹ چیمبر بھجوا دیا، صدر ٹرمپ کے مواخذے کی قرارداد گزشتہ ماہ ایوان نمائندگان میں منظور کی گئی تھی، ان پر اختیارات سے تجاوز اور کانگریس کو روکنے کے الزامات عائد کیے گئے تھے۔
اسپیکر نینسی پلوسی کا کہنا تھا کہ کوئی قانون سے بالا تر نہیں ہے، صدر ٹرمپ بھی جواب دہ ہیں۔ ایوان نمائندگان میں منظور مواخذے کی قرارداد سینیٹ بھیج دی گئی ہے۔
دوسری طرف امریکی صدر نے رد عمل میں اسپیکر نینسی پلوسی کو تاریخ کی بدترین اسپیکر قرار دیا، ان کا کہنا تھا کہ ڈیمو کریٹس نے ایوان میں امریکی تاریخ کا غیر شفاف ترین کام کیا ہے، مواخذے کی کوشش سے ڈیمو کریٹس کو کوئی فائدہ نہیں ملے گا۔

January 15, 2020

برطانیہ میں سمندری طوفان اور بارشیں، بجلی منقطع، پروازیں معطل

لندن جدت ویب ڈ یسک :برطانیہ کے مختلف حصوں میں سمندری طوفان برینڈن کے باعث تیز ہوائوں کے ساتھ شدید بارشوں نے تباہی مچا دی ،تیز ہواوں کی وجہ سے درخت اکھڑ گئے، چھتیں اڑ گئیں، بجلی کا نظام درہم برہم ہوگیا، جبکہ متعدد پروازیں بھی منسوخ کرنا پڑگئیں۔ طوفان سے آئرلینڈ اور اسکاٹ لینڈ کے شمال مغربی حصے زیادہ متاثر ہوئے، جہاں اسکول بند کردیے گئے ہیں اور فیری سروس بھی متاثر ہوئی ۔میڈیارپورٹس کے مطابق اسکاٹ لینڈ میں سمندر میں لہر 25 فٹ تک بلند ہوگئی۔ تیز ہواوں کی وجہ سے درخت اکھڑ گئے، چھتیں اڑ گئیں، بجلی کا نظام درہم برہم ہوگیا، جبکہ متعدد پروازیں بھی منسوخ کرنا پڑگئیں۔ طوفان سے آئرلینڈ اور اسکاٹ لینڈ کے شمال مغربی حصے زیادہ متاثر ہوئے، جہاں اسکول بند کردیے گئے ہیں اور فیری سروس بھی متاثر ہوئی ۔آئرلینڈ میں بجلی کا نظام درہم برہم ہونے سے 48 ہزار گھروں کو بجلی کی فراہمی منقطع ہوگئی ہے۔131 کلو میٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے چلنے والی ہواوں کے باعث ٹرین سروس اور مختلف ایئر پورٹس پر پروازوں کی آمدورفت بھی معطل ہے۔

January 15, 2020

تہران یونیورسٹی ایرانی پولیس اور طلباء کے درمیان میدان جنگ بن گئی

تہران جدت ویب ڈ یسک :ایران میں پاسداران انقلاب کی طرف سے یوکرین کا مسافرطیارہ مار گرائے جانے کے واقعے کے بعد عوامی غم وغصہ بدستورموجود ہے اور ملک میں کئی مقامات پر حکومت کے خلاف مظاہرے ہو رہے ہیں۔گزشتہ روز تہران یونیورسٹی میں طلباء اور پولیس کے درمیان کئی گھنٹے تک تصادم جاری رہا۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق تہران کی جامع امیرکبیر میں طلباء نے حکومت کے خلاف مظاہرے شروع کیے تو پولیس نے یونیورسٹی کا گھیرائو کرلیا۔ تہران یونیورسٹی کے طلباء اتحاد کی طرف سے ایک بیان جاری کیا گیا جس میں بتایا گیا کہ یونیورسٹی کے اطراف میں پولیس کی بھاری نفری تعینات کی گئی ہے۔ بیان میں مزید کہا گیا کہ پاسیج فورس اور طلباء کے درمیان کئی گھنٹے محاذ آرائی ہوئی۔سوشل میڈیا پر پوسٹ کردہ فوٹیج میں بتایا گیا کہ دارالحکومت تہران میں بڑی تعداد میں لوگوں نے یوکرین کا طیارہ مار گرائے جانے کے خلاف احتجاج جاری رکھا ہوا ہے۔خیال رہے کہ 8 جنوری 2020ء کو تہران میں یوکرین کا ایک مسافر ہوائی جہاز گرکرتباہ ہوگیا تھا۔ بعد ازاں ایران نے تسلیم کیا تھا کہ یوکرین کے ہوائی جہاز کو غلطی سے میزائل حملے سے نشانہ بنایا گیا تھا۔ طیارے پر 176 افراد سوار تھے جن میں سے کوئی زندہ نہیں بچ سکا تھا۔اس واقعے کے بعد ایران میں طلباء اور نوجواںوں بڑی تعداد سڑکوں پرنکل آئی تھی۔ طیارہ مار گرانے کے خلاف ایران میں احتجاج کل چوتھے روز بھی جاری رہا۔