Browse Category

خصوصی انٹرویو

ریحان مرچنٹ

ریحان مرچنٹ تشہیری دنیا کا وہ پارس ہے جس کو چھو لینے والا سونا بن جاتا ہے،ایسے جوہری خال خال ہی ملتے ہیں جو خام کو تراش کر عمدہ بنائیں اور ان سے کوئی فائدہ حاصل کئے بنا ہی دوسروں کی جھولی میں ڈال دیں،انہوں نے کار آمد اور تجربہ کار فنکاروں کی ایک بڑی جماعت پیدا کی جو آج تشہیری اداروں کو سیراب کررہی ہے۔تشہیری صنعت ہر کاروبار کی ماں تصور کی جاتی ہے ۔ ایسے ماحول میں ریحان علی مرچنٹ 27برس سے ذاتی سرمایہ کاری کے ذریعے تشہیری صنعت کو کارآمد افراد فراہم کر رہے ہیں۔ مرچنٹ نےجوش،جذبے،

ڈاکٹر ہما بقائی

خاتون سمجھدار،تعلیم یافتہ،دور اندیش،ذہین،وسیع القلب،وسیع النظراورمعاملہ فہم ہو تو دنیا جنت بن جاتی ہے،ایسی خاتون گاڑی کا دوسرا پہیہ نہیں،گاڑی کی ماہر ڈرائیور ہوتی ہے۔ وہ قدم اٹھاتی ہے تو خاندان چلتا ہے،رکتی ہے تو خاندان ٹھہر جاتا ہے، وہ ترقی کرتی ہے تو خاندان ہی نہیں معاشرہ ترقی کرتا ہے،وہ اپنے آپ کو منواتی،خود کو تسلیم کراتی،اپنے ہونے کا احساس دلاتی ہے،وہ باتیں کرتی ہے تو باتوں سے خوشبو آتی ہے،چلتی ہے تو زمین قدم چومتی ہے،اس کا ایک صرف ایک عمل اس کو بے پناہ احترام،محبت،پیار،عقید ت اور مرتبہ دے دیتا ہے اور وہ ہے اس کا جذبۂ

محسن شیخانی

کراچی میں تیزی سے بڑھتی ہوئی آبادی اور اس سے بھی تیزی سے قائم ہوتی ہوئی کچی آبادیوں نے دنیا کے ایک سو بارہ ممالک سے زیادہ آبادی کے اس شہر کیلئے تباہ کن مسائل پیدا کر دئے ہیں۔ حکومت سندھ کے اپنے اعداد و شمار کے مطابق ملک کے مختلف علاقوں سے کراچی میں روزانہ 50 ہزار سے ڈیڑھ لاکھ افراد آکر بستے ہیںجس کی وجہ سے شہر میں پانی ودیگر مسائل پیدا ہورہے ہیں۔ یہ اعتراف حقیقت حال سے آگاہی کی حد تک تو درست ہے مگر سوال یہ ہے کہ حکومت اس صورتحال سے کس طرح ڈیل

حنیف گوہر

آباد پاکستان کے سابق چیئرمین محمد حنیف گوہر حالیہ دنوں ایف پی سی سی آئی میں آباد کی نمائندگی کررہے ہیں اور ایف پی سی سی آئی کے پلیٹ فارم سے آباد کے درپیش مسائل کو حل کرنے کے لئے اپنی کوششوں کو جاری رکھے ہوئے ہیں‘ پچھلے سال آباد کے چیئرمین کی حیثیت سے اپنی خدمات انجام دیتے رہے ‘ انہوں نے اپنے دور میں آباد ایسوسی ایشن کی ترقی کے لئے کاموں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا‘ محمد حنیف گوہر نے جدت کو اپنے دیے گئے انٹرویو میں بتایا کے آباد پاکستان میں جب بحیثیت چیئرمین منتخب

بابر مرزا چغتائی

فرحان فیصل ۨ کراچی سونے کی چڑیا، کراچی اے ٹی ایم، کراچی امیروں کی تجوری، کراچی غریبوں کی ماں، کراچی کو جس طرح تباہ کیا گیا اس کی مثال ایک ہونہاربہترین آئی کیو والے نوجوان کی ہیروئن کی لت کے ہاتھوں تباہی سے دی جا سکتی ہے۔رہبر و رہنما، سیاستدان و بیوروکریٹس، سادہ و ملبوس غرض ہر طاقتور کراچی سے اپنا قصاص لیتا رہا یہ جانے بغیر کہ یہ مفاد پرستوں کیلئے ایک بہترین کھیتی تیار ہو رہی ہے اور بعد میں یہ خدشہ سچ بھی ثابت ہوا ۔ہزاروں لوگوں کی خوں ریزی، خوف کا ماحول، لوٹ مار و بھتہ

طاہر اے خان

تخلیق کائنات قدرت کا عظیم شاہکار ہے، ایک لاکھ چوبیس ہزار پیغمبر، چار الہامی کتب، غوث، قطب، ولی اور پانچ وقت مؤذن کی صدا نظام حیات کی مربوط منظم ترتیب و تشہیر اطلاق و عمل کا بین ثبوت ہے، اگرچہ خالق حقیقی تشہیری ذرائع سے ماورا ہے تاہم خوشحال معاشرتی زندگی میں مصور اور تصویر کے باہمی تعلق کا ابلاغ وجود کائنات کے رنگوں کی تجسیم کا جزو لا ینفک ہے ۔ آج کی ایڈورٹائزنگ تخلیقی اور تحقیقی پہلوئوں کی عکاس اور تشہیری تخلیق کار الہامی پیغامات کے ابلاغ کے موذن ہیں ، اشتہاریات پاکستان کا 70سالہ پیشہ ورانہ سفر

شاہد آفریدی

مثبت سوچ اور صحت مند رویہ کا آئینہ دار، دنیائے کرکٹ کے بے تاج بادشاہ، حریف ٹیم کیلئے خوف اور دہشت کی علامت، خوش مزاج، ملنسار، درد مند انسان، حوصلہ و عزم مستقل کا احساس اور ایک انقلاب کا نام شاہد خان آفریدی ہے، شاہد خاند آفریدی کو پاک وطن کی مٹی اور سبز ہلالی پرچم سے والہانہ عشق ہے ان کے دل میں حب الوطنی کے چشمے پھوٹتے ہیں، ہاتھ میں اخوت کا پرچم، وسیع القلب ، ملک میں تنگ نظری، منافقت، تعض، جہالت اور ظلم و تشدد سے بیزار ہیں، بقول شاہد آفریدی مجھے ہر سمت سے والہانہ