October 9, 2017

سارہ علی خان کےفلم ڈیبیو کی پہلی جھلک جاری

جدت ویب ڈیسک :سارہ علی خان کیدرناتھ میں ایک نوجوان زائر کا کردار ادا کریں گی فلم کو آئندہ برس جون میں ریلیز کیے جانے کا امکان ہےبولی وڈ کے چھوٹے خان سیف علی خان کی بیٹی سارہ علی خان پروڈیوسر ایکتا کپور اور بھشن کمار کی فلم کیدرناتھ سے فلم ڈیبیو کرنے جا رہی ہیں۔یہ خبریں تو پہلے ہی گردش میں تھیں کہ سارہ علی خان ساتھی اداکار سشانت سنگھ راجپوت کے ساتھ بہتر سے بہتر طریقے سے کردار کو نبھانے کے لیے تیاریوں میں مصروف ہیں۔سارہ علی خان اور سشانت سنگھ کی تربیت کے دوران لی گئی تصاویر بھی لیک ہوئی تھیں، جن سے ان دونوں کے درمیان قربتوں کی چہ مگوئیاں بھی ہونے لگیں۔تاہم فلم کی ٹیم نے اب پہلی بار کیدرناتھ میں سارہ علی خان کے کردار کی پہلی جھلک جاری کردی ہے۔ٹیم کی جانب سے سارہ علی خان کی 2 تصاویر جاری کی گئی ہیں، جن میں انہیں شلوار قمیض اور دوپٹے جیسے روایتی لباس میں گھوڑے پر سوار دکھایا گیا ہے۔سارہ علی خان کو پہاڑوں کے درمیان ہاتھ میں چھتری تھامے ہوئے دکھایا گیا ہے۔خیال رہے کہ سارہ علی خان کیدرناتھ میں ایک نوجوان زائر کا کردار ادا کریں گی، جو ہمالیہ کے پہاڑوں کے درمیان تیرتھ یاترا پر جاتی ہیں۔سشانت سنگھ راجپوت ایک گائیڈ کے روپ میں نظر آئیں گے، اور تیرتھ یاترا کے لیے سارہ علی خان ان کی خدمات حاصل کرتی ہیں۔اپنی مذہبی رسومات کی ادائگی اور مقامات کی زیارت کرنے کے لیے ہمالیہ کے پہاڑوں کے دامن میں آنے والی خوبرو لڑکی کس طرح ایک گائڈڈ کے پیار میں مبتلا ہوجاتی ہے، اور ان کی پیار کہانی میں کیا کیا مسائل آتے ہیں، فلم کی کہانی ان ہی مسائل کے گرد گھومتی ہے۔ڈائریکٹر ابھیشک کپور کی اس فلم کو بالاج موشن پکچرز کے بینر تلے ریلیز کیا جائے گا۔فلم کو آئندہ برس جون میں ریلیز کیے جانے کا امکان ہے۔

October 9, 2017

زارا شیخ نے فلم انڈسٹری کو کامیاب بنانےکا گُر بتا دیا

لاہور(جدت ویب ڈیسک ) اداکارہ وماڈل زارا شیخ نے کہا ہے کہ فلم کوڈرامے سے دورنہیں رکھا جائے گا اورٹرینڈ نوجوانوں کو کام کے مواقع نہیں دیے جائیں گے، تب تک فلم انڈسٹری میں بہتری ممکن نہیں۔زارا شیخ نے گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ 70 اور80 کی دہائی میں پاکستانی ڈرامے نے ملک ہی نہیں بلکہ ہمارے ہمسایہ ملک بھارت کی فلم نگری کے مہان فنکاروں کوبھی اپنا گرویدہ بنا رکھا تھا۔ ڈرامے کی کہانیاں، ڈائیلاگ، فنکاروںکی اداکاری اورڈائریکٹرسمیت تکنیک کاروں کے باکمال فن کوجس طرح سے بھارتی فلم انڈسٹری والوں نے سراہا اوراپنایا ہے اگرکوئی پاکستان میں بھی اپنے ان بے مثال فنکاروں اورتکنیک کاروں سے سیکھتا یا ان کے فن کو نئی نسل تک منتقل کرنے کے لیے اکیڈمیاں قائم کرتا توشاید آج ہم ماضی کے بجائے موجودہ دورمیںبننے والے ڈراموں کا تذکرہ کرتے۔ اسی طرح پاکستانی فلم کا ماضی بھی بے حد شاندارتھا اوراب مستقبل بھی شانداردکھائی دے رہا ہے۔اداکارہ نے کہا کہ اگرہم بھارتی فلم نگری کی بات کریں تووہ پاکستانی ڈرامے سے اس قدرمتاثر تھی کہ آج بھی بھارت کی پونا اکیڈمی آف ایکٹنگ سمیت ممبئی، کولکتہ، دہلی اور دیگر مقامات پرقائم ایکٹنگ اسکولوں میں پاکستانی ڈرامہ دکھا کراداکاری سکھائی جاتی ہے۔زارا شیخ نے بتایا کہ بھارتی ایکٹنگ اکیڈمیوں اور اسکولوں میں کوئی پاکستانی ڈرامہ دیکھ کر اداکاری سیکھتا ہے توکوئی ڈائریکشن، کوئی کیمرہ کی تکنیک سمجھتا ہے توکوئی لائنٹنگ۔ کوئی ڈرامے کے سین کو بہتربنانے والے بیک گرانڈ میوزک کوجانتا ہے تو کوئی اسکرپٹ رائٹنگ کی معلومات حاصل کرتا ہے۔ ان اکیڈمیوں کے اساتذہ پاکستانی ڈرامے دکھا کر نوجوانوں کو ہیرو، ولن اورمعاون اداکار سمیت دیگرکرداروں بارے خوب تربیت دیتے ہیں۔ بس یوں کہئے کہ بھارتی ایکٹنگ اسکولوں اور اکیڈمیوں میں اگر پاکستانی ڈرامہ پڑھایا نہ جا رہا ہوتا تووہاں پر بھی فنون لطیفہ کے مختلف شعبوں میں بڑا فقدان ہوتا۔ انہوں نے کہا کہ اسی طرح اگرہمارے ہاں بھی ایکٹنگ سیکھانے کے لیے باقاعدہ ادارے ہوں اورانھیں اس شعبے کی تربیت دی جائے تواس کے بہتر نتائج سامنے آئینگے۔ لیکن ضرورت اس بات کوسمجھنے کی ہے کہ موجودہ دورمیں پاکستان میں فلمیں توبن رہی ہیں لیکن ان کا مزاج فلمی نہیں ہے۔ جب تک فلم کوڈرامے سے دورنہیں رکھا جائے گا اورٹرینڈ نوجوانوں کو کام کے مواقع نہیں دیے جائیں گے، تب تک بہتری ممکن نہیں۔ملک میں اداکاری سکھانے کیلیے باقاعدہ ادارے ہوں اور لوگوں کو اس شعبے کی تربیت دی جائے توبہتر نتائج سامنے آئیں گے

October 8, 2017

ہما قریشی نے من کی مراد پالی ‘لیکن کیسے ؟؟؟

ممبئی جدت ویب ڈیسک بالی ووڈ اداکارہ ہماقریشی نے کہا ہے کہ اداکاری پیسہ کمانے کیلئے نہیں بلکہ شوق پورا کرنے کیلئے کررہی ہوں،پرانے ہیروز کیساتھ کام کرنا میرا شوق ہے ،میری اگلی تامل فلم ’’کالا‘‘سپر سٹاررجنی کانت کیساتھ بطور ہیروئن ہو گی جو باکس آفس پر تہلکہ مچا دے گی۔ایک بھارتی جریدے کو دیئے گئے انٹرویو میں حال ہی میں بالی ووڈ فلم پارٹیشن میں اداکاری کرنیوالی ہما قریشی نے کہاکہ اداکاری میرا شوق ہے اور پرانے ہیروز کے ساتھ کام کرکے ان سے بہت کچھ سیکھنا چاہتی ہوں اور یہ میرا شوق بھی ہے انہوں نے کہا کہ اب اگلی فلم میں مشہور اداکار رجنی کانت کی ہیروئین بننے جارہی ہوں اور یہ میری خوش نصیبی ہے کہ میں سپر سٹار رجنی کانت کیساتھ فلم کرنے جارہی ہوں اس سے بڑھ کر میرے لئے کوئی اعزاز نہیں ہے ۔انہوں نے کہاامید ہے کہ میرا کام میرے چاہنے والوں کو پسند آئے گا۔جریدے کے مطابق ہما قریشی تامل زبان میں بننے والی فلم’’ کالا‘‘میں رجنی کانت کیساتھ اداکاری کرینگی ۔ فلم کی ہدایات اداکار و پروڈیوسر دھنوش دے رہے ہیں ۔ فلم اگلے برس سینما سکرین کی زینت بنے گی ۔

October 8, 2017

ملکہ حسن ایشوریہ کا کپڑے پہننے سے انکارلیکن کیوں ؟

ممبئی جدت ویب ڈیسک سابق ملکہ حسن اور سپر اسٹار ایشوریہ رائے بچن نے ملبوسات پسند نہ آنے پر اپنی نئی فلم ’’پھنے خاں‘‘ کی شوٹنگ کرانے سے انکار کردیا۔ایشوریہ رائے بچن اپنے ملکوتی حسن اور زیبائش کے انداز کی وجہ سے نہ صرف بھارت بلکہ دنیا بھر میں انتہائی مقبول ہیں، یہی وجہ ہے کہ وہ کئی بین الاقوامی کمپنیوں کی اعزازی سفیر بھی ہیں، ایشوریہ رائے پیشہ وارانہ طور پر انتہائی حساس ہیں، وہ اپنے کردار کی مناسبت سے ملبوسات اور وضع قطع کے حوالے سے ڈریس ڈیزائنرز اور ہیئر اسٹائلسٹس تک سے بات کرتی ہیں اور اس حوالے سے کوئی بھی سمجھوتہ نہیں کرتیں۔ایسا ہی ان کی نئی فلم ’’پھنے خاں‘‘ کی شوٹنگ کے دوران اس وقت دیکھنے میں آیا جب انہوں نے ایک دن پہلے شوٹنگ ہی منسوخ کردی۔ بھارتی میڈیا کا کہنا ہے کہ ایشوریہ رائے نے 6 سے 8 اکتوبر کے درمیان اداکار راج کمار راؤ کے ساتھ اپنے مناظر کی عکسبندی کرانی تھی لیکن ایسا نہیں ہوسکا، فلم میں ایشوریہ ایک معروف پوپ گلوکارہ کا کردار نبھا رہی ہیں جو بہت بے باک اور فیشن کی دلدادہ ہے لیکن جو لباس تیار کئے گئے تھے وہ ایشوریہ کے کردار سے ہم آہنگ نہیں تھے اور اس میں بھارتی رنگ غالب تھا، جس کی وجہ سے انہوں نے شوٹنگ ہی منسوخ کردی۔سابق ملکہ حسن کے قریبی ذرائع کا کہنا ہے کہ فلم کی انتظامیہ نے ان کے لیے ملبوسات معروف ڈریس ڈیزائنر منیش ملہوترا سے تیار کرائے تھے لیکن وہ اس وقت مختلف شہروں کے دوروں پر ہیں۔ اس لیے ہنگامی بنیادوں پر ممبئی نہیں آسکتے تھے، اب جب تک ایشوریہ اپنے ملبوسات سے مطمئن نہیں ہوتیں وہ شوٹنگ نہیں کرائیں گی۔

October 8, 2017

جیکولین اور تپسی کہاں پہنچ گئیں ‘حیرت انگیز خبر

ممبئی جدت ویب ڈیسک بولی وڈ کے نوجوان اداکار ورن دھون اپنے کیریئر میں تیزی سے آگے بڑھ رہے ہیں اور اب کی نئی فلم ’جڑواں 2‘ بھی 100 کروڑ کلب کا حصہ بن چکی ہے۔ورن دھون کی فلم ’جڑواں 2‘ اپنی ریلیز کے پورے ایک ہفتے بعد ہی 100 کروڑ ہندوستانی روپے کماکر بلاک بسٹر ہِٹ فلموں کی فہرست میں شامل ہوگئی۔یہ 1997 میں ریلیز ہونے والی سلمان خان کی کامیاب فلم کا سیکوئل ہے، جس میں کنگ خان کا مرکزی کردار ورن دھون نے نبھایا ہے۔واضح رہے کہ اس کامیڈی فلم کو صرف باکس آفس پر ہی شاندار ردعمل نہیں ملا بلکہ تجزیہ کاروں نے بھی اسے بہترین ریویوز دیے۔ورن دھون، جیکولین فرنینڈز اور تپسی پنو کی رومانٹک کامیڈی فلم ’جڑواں 2‘ نے ریلیز کے ابتدائی تین دن میں 37 کروڑ بھارتی روپے کے لگ بھگ بزنس کرکے کئی فلموں کے لیے خطرے کی گھنٹی بجادی تھی۔اس فلم کے 100 کروڑ کلب میں داخل ہونے کا اعلان ہندوستانی تجزیہ کار ترن آدرش نے اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر کیا۔فلم ’جڑواں 2‘ میں ورن دھون کے علاوہ سلمان خان بھی مختصر کردار میں نظر آئے، اس کردار کے ٹیزر کو ورن نے اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹ پر شیئر بھی کیا تھا جس میں سلمان خان یہ کہتے نظر آئے تھے کہ اصل جڑوان ورن دھون نہیں بلکہ وہ ہیں۔واضح رہے کہ ورن دھون کی اس سے قبل ریلیز ہونے والی کئی فلمیں باکس آفس پر شاندار کاکردگی دکھا چکی ہیں جن میں ’بدلہ پور‘، ’اے بی سی ڈی 2‘ اور ’اسٹوڈنٹ آف دی ایئر‘ وغیرہ شامل ہیں۔

October 7, 2017

پدماوتی میں۔ ۔۔۔کرنے سے دپیکا کے جسم کی ایسی جگہ چیزمتاثرہوگئی کہ اداکارہ خوف میں پڑگئی

 ممبئی  جدت ویب ڈیسک  بولی وڈ فلم ’پدماوتی‘ کی پہلی جھلکیوں کے دیوانے ہوگئے، فلم کے ہدایت کار سنجے لیلا بھنسالی نے جب مرکزی اداکاروں دپیکا پڈوکون، رنویر سنگھ اور شاہد کپور کے فلمی روپ کے پوسٹرز ریلیز کیے تو ہر کسی کی زبان سے ان تصاویر کے لیے تعریف ہی نکلی، لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ فلم میں یہ کردار ادا کرنا دپیکا پڈوکون اور رنویر سنگھ کے لیے کتنا مشکل رہا؟کچھ اداکار اپنا کردار بخوبی نبھانے کے لیے بالکل اس کی کہانی میں کھو جاتے ہیں، جس کے نتیجے میں شوٹنگ کے بعد ان کے ذہن میں وہی کردار رہتا ہے جس سے ان کی شخصیت پر منفی اثرات بھی پڑتے ہیں اور ایسا ہی کچھ دپیکا پڈوکون اور رنویر سنگھ کے ساتھ ہورہا ہے۔ہندوستانی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق رنویر سنگھ اور دپیکا پڈوکون دونوں ہی ماہر نفسیات سے رجوع کررہے ہیں، تاکہ ان کی مدد سے وہ ان کرداروں کے اثر سے باہر آسکیں جو انہوں نے فلم میں ادا کیے۔دپیکا پڈوکون نے فلم میں رانی پدمنی کا کردار ادا کیا ہے جو علاؤالدین خلجی سے خود کو بچانے کے لیے آگ میں کود جاتی ہیں، جبکہ رنویر سنگھ نے علاؤالدین خلجی کا کردار ادا کیا جن کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ انہوں نے سلطنت حاصل کرنے کے لیے بہت سے قتل کیے تھے۔رنویر سے قریبی ذرائع کے مطابق ’یہ کردار رنویر کے لیے کافی چیلنجنگ تھا، اس فلم کی شوٹنگ گزشتہ سال سے جاری ہے، اس کردار کی وجہ سے رنویر کا سلوک دونوں کی جانب تبدیل بھی ہوا، جس کے باعث ان کے دوستوں نے مشورہ دیا کہ وہ ماہر نفسیات سے رجوع کریں‘۔۔