November 18, 2019

بدھ کو پیار دینے اور ہفتے کو نفرت کرنے کا شکریہ’اداکارہ عائزہ خان

کراچی جدت ویب ڈیسک :پاکستان کی نامور اور خوبصورت اداکارہ عائزہ خان اس وقت ٹیلی اسکرینز پر دو ڈراموں میں مرکزی کردار نبھارہی ہیں۔ان میں سے ایک ”تھوڑا سا حق” ہے جبکہ دوسرا”میرے پاس تم ہو” نشر کیا جارہا ہے۔ان دونوں ڈراموں میں عائزہ خان نے مرکزی کردار نبھایا ہے اور دلچسپ بات یہ ہے کہ جہاں ان دونوں ڈراموں کی کہانی ایک دوسرے سے بالکل مختلف ہے وہی عائزہ خان بھی دونوں ڈراموں میں دو بالکل الگ قسم کے کردار نبھاتی نظر آرہی ہیں۔عائزہ پاکستان کی بہترین اداکارہ ہیں یہ تو سب جانتے ہی ہیں اور اپنے ان دونوں ڈراموں کے لیے بھی وہ خاصی پذیرائی حاصل کررہی ہیں۔اس حوالے سے اداکارہ نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ایک دلچسپ ٹوئٹ کے ذریعے مداحوں کا شکریہ بھی ادا کیا۔عائزہ خان نے اپنے دونوں کرداروں کی تصویر شیئر کرنے کے ساتھ کھا کہ ایک وقت میں دو بالکل مختلف کردار نبھانا آسان نہیں، البتہ مداحوں کا شکریہ جنہوں نے مجھے بدھ کو تھوڑا سا حق کے لیے پیار دیا اور ہفتے کو میرے پاس تم ہو کے لیے نفرت کی۔

November 18, 2019

ابرار الحق کی بطور چیئرمین ہلال احمر پاکستان تقرری کا نوٹی فکیشن معطل

جدت ویب ڈیسک ::پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اور گلوکار ابرارالحق کی بطور چیئرمین پاکستان ریڈ کریسنٹ سوسائٹی (ہلال احمر پاکستان) تقرری کا نوٹی فکیشن معطل کر دیا گیا۔
تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے ابرارالحق کی بطور چیئرمین ہلال احمر پاکستان تعیناتی کا حکم معطل کر دیا۔ چیف جسٹس نے سماعت کے دوران اٹارنی جنرل انور منصور سے استفسار کیا کہ قانون بتائیں کہ کیا یہ تعیناتی خاص مدت کی تقرری ہوتی ہے۔
وکیل درخواست گزار نے کہا کہ مینیجنگ باڈی نے رولز بنائے ہیں جس کے مطابق چیئرمین کا تقرر 3 سال کے لیے ہو گا، جس پر چیف جسٹس اطہرمن اللہ کہا کہ چیئرمین کو ہٹانے کا طریقہ کہاں لکھا ہے۔
درخواست گزار کے وکیل نے کہا کہ رولز میں چیئرمین کو ہٹانے کا کوئی طریقہ موجود نہیں۔
عدالت نے اٹارنی جنرل سے استفسار کیا کہ مینیجنگ باڈی نے رولز بنائے، کیسے اس کو عہدے سے ہٹایا جاسکتا ہے، رول 10 اے کے تحت چیئرمین کو برطرف تو نہیں کیا جاسکتا۔ اٹارنی جنرل نے کہا کہ ایگزیکٹو کے پاس اختیار ہے کہ کسی وقت بھی چیئرمین کو برطرف کر دے، چیئرمین کی برطرفی کا نوٹی فکیشن چیلنج نہیں کیا گیا، چیئرمین کے خلاف کوئی الزام نہیں اس لیے ان کو کوئی نوٹس نہیں کیا گیا۔
چیف جسٹس اطہر من اللہ نے کہا کہ قانون میں موجود رول کے ہوتے ہوئے حکومت کیسے چیئرمین کو ہٹا سکتی ہے۔
عدالت نے ابرار الحق کی تقرری کے خلاف درخواست پر وفاق، اسٹیبلشمنٹ ڈویژن اور ابرار الحق سمیت تمام فریقین کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 29 نومبر تک تحریری جواب طلب کر لیا۔
اسلام آباد ہائی کورٹ نے آئندہ سماعت سے قبل درخواست گزار کے وکیل کو تحریری جواب کی پیشگی کاپی دینے کی ہدایت بھی کی ہے۔
عدالت نے ابرار الحق کی بطور چیئرمین پاکستان ریڈ کریسنٹ تعیناتی پر حکم امتناع جاری کرتے ہوئے انہیں عہدے کا چارج سنبھالنے سے بھی روک دیا ہے۔
جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیئے کہ آئندہ سماعت تک ابرار الحق کی تعیناتی کا نوٹیفکیشن معطل رہے گا۔

November 15, 2019

حمزہ علی عباسی کا اداکاری سے کنارہ کشی اختیار کرنے کا اعلان

کراچی: جدت ویب ڈیسک ::پاکستانی اداکار حمزہ علی عباسی نے شوبز انڈسٹری سے کنارہ کشی اختیار کرنے کا باقاعدہ اعلان کردیا۔  حمزہ علی عباسی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر بذریعہ ویڈیو اعلان کیا کہ میں 10 سال کے عرصے سے خدا اور موت کے بعد جیسی چیزوں پر تحقیق کررہا تھا اور اس دوران جو باتیں سامنے آئیں اب وہ مداحوں کے ساتھ شیئر کروں گا۔
حمزہ علی عباسی نے ویڈیو کے آغاز پر سب سے پہلے رب اور پھر مداحوں کا شکریہ ادا کیا اور اپنی ماضی کی زندگی کے بارے میں کچھ بتایا۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ میں شوبز انڈسٹری سے اس وجہ سے کنارہ کشی اختیار نہیں کررہا کہ اداکاری حرام ہے، میری تحقیق میں یہ بات سامنے آئی کہ اسلام میں صرف بدکاری حرام ہے۔
انہوں نے بتایا کہ میں میڈیا کی حد تک اداکاری چھوڑ رہا ہوں اور اب اپنی بقیہ زندگی اسلام کے مطابق گزاروں گا، ساتھ ہی اپنے مداحوں کو بھی رب اور اسلام کے حوالے سے آگاہی دوں گا۔ حمزہ علی عباسی نے وضاحت کی کہ میں کنارہ کشی مشہوری کے لیے نہیں بلکہ غیرمعیاری کام کی وجہ سے کررہا ہوں، مستقبل میں آپ خود میری بنائی فلمیں اور ڈرامے دیکھیں گے۔
حمزہ علی عباسی نے ویڈیو میں سیاست چھوڑنے کا عندیہ بھی دیا اور مداحوں کو بتایا کہ وہ اپنے یوٹیوب چینل پر ویڈیوز شیئر کرتے رہیں گے۔ یاد رہے کہ چند روز قبل پاکستانی اداکار حمزہ علی عباسی نے ایک ٹویٹ کیا تھا جس کے بعد مختلف چہ مگوئیاں شروع ہوگئیں اور ساتھ ہی اُن کے مداح بھی تذبذب کا شکار ہوگئے۔ اداکار نے ٹویٹ میں لکھا تھا کہ ’’ایک دہائی سے زائد عرصے پر محیط سفر اپنے اختتام کو پہنچ گیا، رواں ماہ کے آخر میں بہت اہم اعلان کروں گا‘‘۔ انہوں نے یہ بھی لکھا تھا کہ ’’اکتوبر کے اواخر تک سوشل میڈیا سے دور رہوں گا اور امید کرتا ہوں کہ میری بات کو زیادہ سے زیادہ لوگ سنیں گے‘‘۔

 

https://youtu.be/guI0xG8lLcE

November 13, 2019

سنی دیول پاکستانیوں کی محبت کے گرویدہ ہوگئے

نئی دہلی جدت ویب ڈیسک : اپنی فلموں میں پاکستان کے خلاف زہر اگلنے والے بھارتی اداکار سنی دیول حقیقی زندگی میں پاکستان اور پاکستانیوں کی محبت کے گرویدہ ہوگئے۔تین روز قبل سکھوں کے مذہبی پیشوا گروونانک کے 550 ویں جنم دن کی تقریبات اور کرتار پور راہداری کے افتتاح کے لیے بھارت سے آنے والے وفد میں بالی ووڈ اداکار سنی دیول بھی شامل تھے۔ سنی دیول بالی ووڈ میں ”غدر” اور ”بارڈر” جیسی پاکستان مخالف فلموں میں کام کرچکے ہیں۔اپنی فلموں میں پاکستان کی اینٹ سے اینٹ بجانے کی دھمکیاں بھی دینے والے اداکار سنی دیول کرتارپور راہداری کی افتتاحی تقریب میں شرکت کے بعد جب بھارت واپس گئے تو ایک بھارتی چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے انہوں نے پاکستان سے ملنے والی محبت کے گن گانے شروع کردئیے۔سنی دیول نے صحافیوں سے بات کرتے ہوئے ہاتھ جوڑتے ہوئے کہا پاکستان جانا بہت اچھا رہا، وہاں سب لوگوں نے بہت ڈھیر سارا پیار دیا۔ یہ امن کی نئی شروعات ہے اورمیں چاہتاہوں کہ سب اسی طرح پیار و محبت کے ساتھ رہیں۔ایک صحافی کے سوال کے جواب میں سنی دیول نے کہا آپ نے دیکھا ہے نا ٹی وی پر لوگ بہت پیار کرتے ہیں، دونوں ممالک میں یہ بہت اچھی چیز شروع ہوئی ہے لڑنے کا کیا فائدہ پیار ہی پیار رہے۔واضح رہے کہ اس سے قبل بھی سنی دیول نے سماجی رابطے کی سائٹ ٹوئٹر پر کرتار پور گرودوارا کی تصویر شئیر کی تھی جس میں ان کا کہنا تھا کہ انسانیت زندہ باد۔

November 13, 2019

ایمن اور منال کا ملبوسات کا برینڈ متعارف کرانے کا اعلان

لاہور جدت ویب ڈیسک :پاکستانی شوبز انڈسٹری کی بہنیں ایمن اور منال نے اپنے ملبوسات کا برینڈ متعارف کرانے کا سوشل میڈیا کی ویب سائٹ انسٹا گرام پر اعلان کر دیا۔سماجی رابطے کی ویب سائٹ انسٹا گرام پر جڑواں بہنوں ایمن اور منال خان نے ایک لیٹر شیئر کیا، اس میں اپنے برینڈ کو اے اور ایم کا نام دیا ہے۔یاد رہے کہ شوبز انڈسٹری کی نامور بہنوں عروہ حسین اور ماورا حسین بھی اس سے قبل ملبوسات کا برینڈ متعارف کرا چکی ہیں۔ سوشل میڈیا کی مشہور ویب سائٹ انسٹا گرام پر دونوں بہنیں اپنے ملبوسات کے برینڈ کی تشہیر کو زور و شور سے جاری رکھے ہوئے ہیں۔دونوں اداکارائیں اس برینڈ کے ذریعے خواتین کے لیے مشرقی طرز کے ساتھ ساتھ مغربی طرز کے ملبوسات بھی پیش کریں گی، جو ان دونوں کے فیشن کی عکاسی کریں گے۔حیران کن طور پر انکے برینڈ کا نام اداکارہ عروہ حسین اور ماورا حسین کے ملبوسات کے برینڈ یو ایکس ایم کی بہت حد تک نقل نظر آرہا ہے۔یاد رہے کہ ماورا اور عروہ نے رواں سال جون میں اپنا برینڈ متعارف کروایا تھا، اس برینڈ کے لیے یہ دونوں مغربی طرز کے ملبوسات تیار کرتی آرہی ہیں جبکہ خود بھی اپنے تیار کردہ ملبوسات میں متعدد مقامات پر نظر آچکی ہیں۔

November 13, 2019

بولی وڈ اداکارہ نے انڈسٹری کا پول کھول دیا

ممبئی جدت ویب ڈیسک :”عشق سمندر” اور’ ‘خلاص” جیسے بولی وڈ کے ٹرینڈ سیٹر آئٹم گانوں میں پرفارمنس کرنے والی بولی وڈ اداکارہ 43 سالہ ایشا کوپیکر نے دعویٰ کیا ہے کہ انہیں متعدد ساتھی اداکاروں نے ‘جنسی تعلقات’ استوار کرنے کی پیش کش کی۔انہوں نے یہ بھی بتایا کہ شوبز انڈسٹری میں ان کا جنسی استحصال کیا جاتا رہا اور انہیں صرف آئٹم سانگ کے لیے کاسٹ کیا جاتا رہا۔ایشا کوپیکر اگرچہ گزشتہ کچھ عرصے سے فلمی دنیا سے دور ہیں، تاہم ماضی میں انہیں ‘خلاص’ آئٹم گرل اور ‘عشق سمندر’ گرل کے نام سے جانا جاتا رہا ہے۔ایشا کوپیکر نے متعدد فلموں میں نہ صرف آئٹم سانگ کیے بلکہ انہوں نے انتہائی بولڈ کردار بھی ادا کیے، تاہم انہیں زیادہ تر مختصر کردار ہی دیے جاتے رہے۔ایشا کوپیکر کو جہاں بولی وڈ میں مختصر کردار دیے جاتے رہے یا انہیں معاون ہیروئن کے طور پر کاسٹ کیا جاتا رہا، وہیں وہ تامل اور تیلگو سمیت دیگر بھارتی زبانوں میں بننے والی فلموں میں اہم کرداروں میں دکھائی دیں۔ایشا کوپیکر نے اداکاری کی شروعات بھی تامل فلموں سے کی تھی، تاہم 2000 میں وہ بولی وڈ میں آئٹم گرل کے طور پر سامنے آئیں اور مشہور تھرلر فلم ‘کانٹے’ میں ‘عشق سمندر’ گانے پر پرفارمنس کرکے مشہور ہوئیں۔ایشا کوپیکر نے متعدد فلموں میں جہاں مختصر کردار ادا کیے، وہیں انہوں نے فلم پروڈکشن میں بھی قسمت آزمائی اور وہ ٹی وی پر بھی دکھائی دیں۔ایشا کوپیکر نے ایک دہائی قبل 2009 میں شادی کی تھی، جس کے بعد وہ فلموں میں کم دکھائی دیں اور ان کی آخری فلم ‘شبری’ 2011 میں ریلیز ہوئی تھی۔فلموں سے دور ایشا کوپیکر نے رواں برس کے آغاز میں ہی سیاست میں انٹری دی تھی اور انہوں نے حکمران جماعت ‘بھارتی جنتا پارٹی’ میں شمولیت اختیار کی تھی۔بی جے پی میں شمولیت اختیار کرنے کے بعد انہیں خواتین ونگ میں ذمہ داریاں بھی سونپی گئی تھیں، تاہم انہوں انتخابات میں حصہ نہیں لیا تھا۔سیاست میں انٹری دینے اور شوبز سے دور رہنے کے بعد اب ایشا کوپیکر کا ایک اہم بیان سامنے آیا ہے، جس میں انہوں نے صرف ساتھی اداکاروں بلکہ فلم سازوں پر بھی سنگین الزامات لگائے ہیں۔اپنے انٹرویو میں ایشا کوپیکر نے انکشاف کیا کہ آئٹم گانے کرنے اور بولڈ کردار ادا کرنے کی وجہ سے متعدد ساتھی اداکاروں نے انہیں ‘جنسی تعلقات’ استوار کرنے کی پیش کش کی۔ایشا کوپیکر نے یہ انکشاف بھی کیا کہ فلم ساز نے انہیں 2000 میں ریلیز ہونے والی فلم ‘کانٹے’ میں سنجے دت کی گرل فرینڈ کے طور پر کاسٹ کیا تھا، تاہم بعد ازاں ان کا کردار ختم کرکے ان سے آئٹم سانگ ‘عشق سمندر’ کروایا گیا۔