August 15, 2017

کیا آپ صاف پانی پی رہے ہیں ؟ یامنرل واٹر کے نام پر زہر؟

جدت ویب ڈیسک :پی سی آر ڈبلیو آر کی بوتل بند پانی کے مختلف برانڈز کی سہ ماہی تجزیاتی رپورٹ برائے اپریل تاجون 2017 جا ری کر دی ہے ۔لک میں پینے کے صاف اور محفوظ پانی فرا ہم کر نے والی 11 برانڈز کے نمونے کیمیائی اور جراثیمی طور پر آلودہ قرا ر دے دیئے گئے جو انسا نی صحت کے لیے بے حد مضر صحت ہیںرپو رٹ کے مطا بق پینے کے صاف اور محفوظ پانی کی کمی کی وجہ سے ملک بھر میں بوتلوں میں بند پانی کی صنعت تیزی سے فروغ پا رہی ہے۔ پاکستان کونسل برائے تحقیقاتِ آبی وسائل، حکومتِ پاکستان ، وزارتِ سائنس و ٹیکنالوجی کی ہدایت پر بوتلوں میں بند پانی کی کوالٹی کی مانیٹرنگ ایجنسی کو طور پر کام کر رہی ہے۔ ہر سہ ماہی کے اختتام پر پینے کے بوتل بند پانی کے مختلف برانڈزکی تجزیاتی رپورٹ پی سی آر ڈبلیو آر کی ویب سائٹ پر اور میڈیا میں شائع کر دی جاتی ہے ۔پینے کے پانی میں سنکھیا کی زیادہ مقدار کی موجودگی بے حد مضرِ صحت ہے۔ کیونکہ اس کی وجہ سے پھیپڑوں ، مثانے، جلد، پراسٹیٹ، گردے، ناک اور جگر کا کینسر ہو سکتا ہے اس کے علاوہ بلڈ پریشر ، شوگر، گردے اور دل کی بیماریاں، پیدائشی نقائص اور بلیک فُٹ جیسی بیماریاں بھی ہو سکتی ہیں۔ جبکہ آلودہ برانڈز میں سے 8نمونے ( فریش لائف، الشلال، ایکوا جین، وے، سمارٹ منرل واٹر، السحر، دورو اور دوآب) جراثیم سے آلودہ پایا گیا جس کی وجہ سے ہیضہ، ڈائریا، پیچش، ٹائفائیڈ اور یرقان کی بیماریاں ہو سکتی ہیں۔2 برانڈز ( نیو پریمیراور لیون)کے نمونوں میں سوڈیم کی مقدار سٹینڈرڈ سے زیادہ (61 سے لے کے66 پی پی ایم ) پائی گئی جبکہ پینے کہ پانی میں اس کی حدِ مقدار صرف 50 پی پی ایم تک ہے۔اپریل تا جون 2017 کی سہ ماہی میں اسلام آباد ،راولپنڈی،سیالکوٹ، پشاور، گلگت، ملتان، لاہور ، بہاولپور، ٹنڈوجام اور کراچی سے بوتل بند/ منرل پانی کے 77 برانڈز کے نمونے حاصل کیے گئے ۔ ان نمونوں کا پاکستان سٹینڈرڈ اینڈ کوالٹی کنٹرول اتھارٹی (PSQCA) کے تجویز کردہ معیار کے مطابق تجزیہ کیا گیا۔ اس تجزیے کے مطابق 11 برانڈز (نیو پریمیر، نیچرل پیور واٹر، لیون، فریش لائف، الشلال، ایکوا جین، وے، سمارٹ منرل واٹر، السحر، دورو اور دوآب) برانڈز کے نمونے کیمیائی طور اور جراثیمی طور پر آلودہ پائے گئے۔ ان میں2 نمونوں (نیو پریمیراور نیچرل پیور واٹر) میں سنکھیا کی مقدار سٹینڈرڈ سے زیادہ (13 پی پی بی سے لیکر 23 پی پی بی) تک تھی، جبکہ پینے کہ پانی میں اس کی حدِ مقدار صرف 10 پی پی بی تک ہے۔

August 14, 2017

وقت سے پہلے بڑھاپا ، بالوں میں چاندی،کیا کریں ؟ جانیے

جدت ویب ڈیسک :وقت سے پہلے بڑھاپاشخصیت کو ویران کردیتا ہے خوبصورت سیارہ چمکدار بال صحت کی نشانی ہیں اور بال کو سفید ہوجانا پریشانی کی بات ہے۔ لیکن سفید بالوں کو سیاہ کرنے کیلئے کیمیکل سے بھر پور بازادی مصنوعات کے استعمال سے بچنا چاہئے کیونکہ اس آسان اور سستا حل آپکے گھر میں دستیاب ہے۔بالوں کو سیاہ کرنے والا یہ محرب نسخہ تیار کرنے کیلئے آپ کو صرف تین چیزیں درکار ہیں یعنی لیمن کا رس آملے کا پاؤڈر اور صاف پانی۔چار چمچ آملے کے پاؤڈر میں دو چمچ پانی اور ایک لیمن کا رس شامل کر لیں اس آمیزے کو اچھی طرح مکس کر کے پیسٹ بنا لیں اور تقریبا ایک گھنٹے کیلئے اسے پڑا رہنے دیں۔اب یہ پیسٹ بالوں پر لگانے کیلئے تیار ہے۔پیسٹ کو بالوں میں اچھی طرح لگا کر 20سے25منٹ یک لگا رہنے دیں اور اس کے بعدپانی سے اچھی طرح دھولیں ۔خیال رہے کہ صابن یا شیمپو استعمال نہ کریں اور کوشش کریں کہ اس نسخے کے استعمال کے دوران صابن یا شیمپو سے پرہیز کریں۔ پیسٹ کو بالوں کی جڑوں تک ضرور پہنچائیں ۔جس دن پیسٹ استعمال نہ کر رہے ہوں اس دن صابن یا شیمپو استعما ل کر سکتے ہیں لیکن بہتر ہے کہ ہربل شیمپو استعمال کریں اورسر کی جلد اور بالوں کی آملہ یا سرسوں کے تیل سے مالش بھی بہت مفیدثابت ہو گی۔بال دھوتے وقت خیال رہے کہ آنکھیں محفوظ رہیں۔ا س پیسٹ کو ہر چار دن بعد استعمال کریں کچھ مہینوں میں آپکے بال مکمل طور پر سیاہ ہوجائیں گے

http://www.arydigital.tv/videos/get-rid-white-hair-good-morning-pakistan/

 

 

August 12, 2017

حیرت انگیز،ہزاروں سال قدیم، زیرِ زمین کثیر المنزلہ شہر دریافت،مزید جانیے

انقر ہ جدت ویب ڈیسک :: کثیر المنزلہ عمارتوں کے بارے میں تو آپ نے بہت سنا ہو گا اور شاید دیکھی بھی ہوں لیکن ترکی میں قدیم زمانے کے زیرِ زمین شہر بھی موجود ہیں جو منزل در منزل زمینی گہرائی میں اترتے چلے جاتے ہیں۔ ان میں سے بعض شہر تو 11 منزلوں تک گہرے ہیں۔2014 میں کپاڈوسیا کے علاقے میں ترک صوبے نوشہر (Nevsehir) سے ایک بہت ہی بڑے زیرِ زمین شہر کے آثار دریافت ہوئے ہیں جو آج سے 5 ہزار سال پہلے لاکھوں افراد کا مسکن ہوا کرتا تھا۔اندازہ ہے کہ یہاں زیرِ زمین کم از کم 7 کلومیٹر طویل سرنگیں تھیں جبکہ مکان، عبادت گاہیں، ہوا اور روشنی کی گزرگاہیں ان کے علاوہ رہی ہوں گی۔ نوشہر میں کام کرنے والے محکمہ آثارِ قدیمہ کا خیال ہے کہ جب یہاں کی کھدائی مکمل ہو جائے گی تو یہ دنیا کا سب سے بڑا اور سب سے زیادہ آبادی کا حامل زیرِ زمین شہر بھی ثابت ہو گا۔یہ شہر زمین کی گہرائی میں 11 منزلوں تک اُترے ہوئے ہیں جہاں کسی زمانے میں لاکھوں افراد آباد تھے ۔

August 12, 2017

بھارتی شہر ممبئی میں نیلے کتوں نےدہشت پھیلادی مگر کیوں؟

ممبئی جدت ویب ڈیسک :: بدترین صنعتی آلودگی کی وجہ سے ممبئی کے کتے بھی نیلے پڑنے لگے ہیں بالی ووڈ نگری یعنی ممبئی کے صنعتی علاقے تلوجا اور گرد و نواح میں رہنے والے لوگ آج کل شدید حیران و پریشان ہیں کیونکہ وہاں آوارہ کتوں کی رنگت نیلی ہونے لگی ہے ۔اس صورتِ حال کا نوٹس لیتے ہوئے ’’ممبئی اینیمل پروٹیکشن سیل‘‘ نے مہاراشٹر پولیوشن کنٹرول بورڈ میں شکایت جمع کروائی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ اس علاقے میں تقریباً 1000 کارخانوں سے صنعتی فضلے کے اخراج نے وہاں بہنے والی ندی ’’کسادی‘‘ کو شدید طور پر آلودہ کردیا ہے جس سے انسانوں کے علاوہ جانوروں کو بھی شدید خطرات لاحق ہو گئے ہیں۔تلوجا میں فیکٹریوں کی بڑی تعداد کا تعلق دوائیں، غذائی اور انجینئرنگ مصنوعات بنانے سے ہے جبکہ یہ فیکٹریاں اپنا گندا پانی نامناسب ٹریٹمنٹ کے بعد کسادی ندی میں بہا دیتی ہیںحولیاتی ماہرین کو پورا یقین ہے کہ اس کی وجہ کسادی ندی میں غیرمعمولی طور پر بڑھتی ہوئی آلودگی ہے کیونکہ آوارہ کتے عموماً یہیں سے پانی پیتے ہیں اور ندی کنارے پڑے ہوئے کچرے کے ڈھیروں میں اپنے لیے کھانا تلاش کرتے ہیں۔قوی امکان ہے کہ اب ان فیکٹریوں سے خارج ہونے والے فضلے میں تانبے کی بڑی مقدار بھی شامل ہو چکی ہے جس کی وجہ سے یہ کتے نیلے پڑ گئے ہیں؛ جبکہ دیگر زہریلے مادے اس کے علاوہ ہیں۔پچھلے سال بھی کسادی ندی سے سمندر میں پہنچنے والے پانی کے معائنے پر معلوم ہوا تھا کہ اس میں مختلف الاقسام آلودگیوں کی شرح محفوظ حد سے کہیں زیادہ ہے جس کی وجہ سے آس پاس کے سمندر میں مچھلیوں کی بڑی تعداد مر گئی تھی۔ ممبئی میں آوارہ کتوں کا نیلا پڑنا بھی اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے ۔۔ممبئی اینیمل پروٹیکشن بورڈ کا کہنا ہے کہ اب تک تلوجا کے علاقے میں کم از کم ایسے پانچ کتے دیکھے جا چکے ہیں جن کی رنگت نیلی ہے ۔

August 12, 2017

ناخن بتائیں گےآپ کی شخصیت کیسی ہے ؟

کراچی جدت ویب ڈیسک :: ناخنوں کی ظاہری ساخت سے وہ باتیں بھی پتا چل سکتی ہیں جنہیں لوگ ساری دنیا سے چھپاتے ہیں۔ ہر انسان کے ناخن دوسرے سے مختلف ہوتے ہیں یہاں تک کہ بچوں کے ناخن بھی والدین سے جداگانہ ہو سکتے ہیں۔ البتہ ناخنوں کی ساخت میں شخصیت کے راز بھی پوشیدہ ہوتے ہیں۔نائجیریا کے ایک ماہر نے ہزاروں افراد کے ناخنوں کی ساخت اور ان کے کردار کا جائزہ لینے کے بعد بتایا ہے کہ اگر ناخنوں کا بغور جائزہ لے لیا جائے تو اس سے انسان کی پوشیدہ شخصیت بھی بے نقاب ہو سکتی ہے ۔ وہ کیسے ؟ ملاحظہ کیجیے : لمبے لیکن کم چوڑے ناخن۔۔۔۔۔ یہ لوگ انتہائی انا پرست ہوتے ہیں اور موقع پرستی ان کی فطرت میں ہوتی ہے ۔ یہ اپنے فائدے کے لیے کسی بھی موقعے سے فائدہ اٹھانا خوب جانتے ہیں۔ عیش پسندی ان کے مزاج کا لازمی حصہ ہوتی ہے اور وہ ہر وقت دوسروں کی توجہ کا مرکز بنے رہنا چاہتے ہیں۔ وہ چھوٹی چھوٹی باتوں پر بھی برا مان جاتے ہیں اور انہیں اپنی ذات پر حملہ تصور کرتے ہیں۔چھوٹے ناخن ۔۔۔۔۔جن لوگوں کے ناخن دوسرے افراد کی نسبت چھوٹے ہوتے ہیں وہ عموماً جلد غصے میں آنے والے اور بے صبرے ہوتے ہیں۔ اس کے باوجود وہ بہت ذہین بھی ہوتے ہیں۔ ناخن جتنے چھوٹے ہوں گے ، ایسا شخص اپنے لیے دوسروں سے اتنی ہی زیادہ توقعات رکھنے والا ہوگا اور اسی قدر خود غرض بھی ہوگا۔ البتہ یہ لوگ اپنی منزل پانے کے لیے شدید ترین محنت بھی کرتے ہیں اور ہر کام کو بہترین انداز میں کرنے کی کوشش کرتے ہیں جس میں وہ اکثر کامیاب بھی ہو جاتے ہیں۔بادام جیسے ناخن۔۔۔۔۔حساس، نرم مزاج اور رومانوی مزاج رکھنے والوں کے ناخن عموماً ایسے ہی ہوتے ہیں۔ وہ خواب و خیال کی مثالی دنیا میں جیتے ہیں اور جب دوسرے انہیں اہمیت دیتے ہیں تو وہ بے حد خوش ہوتے ہیں۔ وہ بہت زیادہ جذباتی ہوتے ہیں جو ہلکے پھلکے مذاق پر بھی ناراض ہوجاتے ہیں۔چوڑے ، لمبے اور مستطیل نما ناخن۔۔۔۔اس ساخت والے ناخن پرسکون، بردبار، متوازن، آزاد اور وسیع تر ذہنیت رکھنے والی شخصیت کے عکاس ہوتے ہیں۔ ایسے لوگ قابلِ بھروسہ ہوتے ہیں اور وہ اپنی گفتگو سے لے کر عمل تک میں ذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہیں۔ وہ پیدائشی لیڈر بھی ہوتے ہیں۔بہت چھوٹے اور مربع شکل والے ناخن۔۔۔۔ایسے ناخن جن لوگوں کے ہوتے ہیں وہ تیز دماغ، لچک دار مزاج اور دوسروں سے بہت اچھے تعلقات رکھنے والے ہوتے ہیں۔ وہ بہت جلدی غصے میں آجاتے ہیں لیکن اتنی ہی جلدی ان کا غصہ ختم بھی ہوجاتا ہے ۔ البتہ وہ بہت لالچی اور پرتشدد مزاج رکھنے کے علاوہ دوسروں سے جلن اور حسد کرنے والے بھی ہوتے ہیں۔مثلث نما (تکون شکل والے ) ناخن۔۔۔۔۔جن لوگوں کے ناخن مثلث نما ہوتے ہیں وہ عموماً شاعری، ادب، موسیقی اور مصوری وغیرہ میں زیادہ دلچسپی لیتے ہیں اور ان کی شخصیت میں شائستگی کا عنصر نمایاں ہوتا ہے ۔ لیکن وہ مستقل مزاج ہر گز نہیں ہوتے اور کوئی بھی کام زیادہ دیر کرنے پر اکتاہٹ کا شکار ہو جاتے ہیں۔ بہ الفاظِ دیگر، انہیں ’’متلون مزاج‘‘ کہنا چاہیے مگر ساتھ ہی ساتھ ان میں خلافِ مزاج باتیں یا صدمات برداشت کرنے کی صلاحیت بھی نہیں ہوتی اور ایسے حالات میں وہ نروس بریک ڈاؤن تک کا شکار ہوجاتے ہیں۔ وہ معاشرے میں ممتاز اور مشہور مقام حاصل کرنا چاہتے ہیں جبکہ انہیں ہارنے سے شدید نفرت ہوتی ہے ۔

August 11, 2017

انٹر اسکول ملی نغمہ و تقاریری مقابلہ،طالبات بازی لے گئیں

کراچی جدت ویب ڈیسک محکمہ تعلیم اور سوشل ویلفیئر حکومت سندھ کے اشتراک سے پیس ایمبیسڈر ویلفیئر آرگنائزیشن کے زیر اہتمام شاہ فیصل کالونی میں آل کراچی انٹر اسکول ملی نغمہ و تقاریری مقابلے کا انعقاد ،کراچی کے معروف اسکولوں کے طلبائ و طالبات کی شرکت ،مقابلے میں طالبات بازی لے گئیں ۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مہمان خصوصی وزیر اعلیٰ سندھ کے سابق اسپیشل اسسٹنٹ نادر حسین خواجہ نے کہا کہ علم وہ واحد ہتھیار ہے جس کے ذریعے دنیا کو فتح کیا جاسکتا ہے تعلیم کے ذریعے جہاں ہم اپنے معاشرے میں سدھار لاسکتے ہیں وہیں ایک بہتر معاشرے اور دنیا کی تشکیل میں بھی مددگار بن سکتے ہیں انہوں نے کہاکہ جہالت ہمارے معاشرے کو دیمک کی طرح چانٹ رہی ہے بن امنی ،دہشت گردی اور لاقانونیت جہالت کا ہی پیش خیمہ ہے ہم سب کو مل کر ایک پڑھا لکھا معاشرہ تشکیل دینا ہوگا جب ہی ہم دنیا میں اپنا مقام حاصل کرسکتے ہیں تقریب سے پیپلز پارٹی کے رہنمائوں وزیر اعلیٰ سندھ کے سابق مشیر فرید انصاری ،کمانڈنٹ رزاق آباد پولیس ٹرننگ سینٹر پیر محمد شاہ ،ڈسٹرکٹ آفیسر ایجوکیشن ضلع کورنگی شبانہ کوثر ،اسسٹنٹ ڈائریکٹر فرحت عزیز ،ڈپٹی ڈائریکٹر سوشل ویلفیئر زرفشاں،شمیم قاضی ، معروف ٹی وی آرٹسٹ انور اقبال ،تقریب کے آرگنائزر گینز ورلڈ ریکارڈ ایتھلیٹ اورنگزیب سلطان ،ڈاکٹر محمد زادہ اور دیگر نے بھی خطاب کیا تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وایر علیٰ سندھ کے سابق مشیر فرید انصاری نے کہاکہ ترقی کی دوڑ میں ہمیںعلم کے فروغ کے لئے اپنا قومی کردار ادا کرنا ہوگا تعلیم کے ذریعے ہی ہم دنیا میں اپنا مقام حاصل کرسکتے ہیں انہوںنے جشن آزادی پر شاندار تقریب کے انعقاد پر منتظمین کو مبارکباد پیش کیا تقریب سے اپنے خطاب میں کمانڈنٹ رزاق آباد پولیس ٹرینگ سینٹر پیر محمد شاہ نے کہاکہ آج کی اس تقریب میں ہمارے ہونہار بچوں نے یہ ثابت کردیا کہ ہمارے بچوں میں ہر شعبے میں ٹیلنٹ موجود ہے خواہ وہ علم کا شعبہ ہویا کھیل کا پیر محمد شاہ نے جشن آزادی کی مناسبت سے شایان شان تقریب کے انعقاد پر سفیر امن پاکستان اورنگزیب سلطان کی کاوشوں کو سراہتے ہوئے کہاکہ آپ تعلیم ،کھیل اور بنیادی صحت کے حوالے سے جو کاوشیں انجام دے رہے ہیں اُس میں میں اپنی جانب سے اور محکمہ پولیس کی جانب سے مکمل تعاون کا یقین دلا تا ہوں اور لوگوں سے بھی یہ اپیل کرتا ہوں کہ وہ اس نیک کاز میں اورنگزیب سلطان کا بازو بنیں ۔تقریب کے اختتام پر تقاریری مقابلے میں اول پوزیشن حاصل کرنے والی گورنمنٹ سیکنڈری اسکول گرین ٹائون کی طالبہ علیہ ،دوئم کنگٹسن اسکول کی یشفین ،سوئم گورنمنٹ سکینڈر ی اسکول شاہ فیصل کالونی کی وجیہ کو جبکہ پرائمری میں اول پوزیشن کا خصوصی ایوارڈ فضائیہ ڈگری کالج فیصل کی طالبہ کنیز فاطمہ زیب کو ۔ملی نغموں کے مقابلوں میں جامعہ ملیہ گورنمنٹ گرلز سیکنڈری اسکول کی طالبہ مریم کو اول پوزیشن ،گورنمنٹ گرلز سیکنڈری اسکول نمبر5کی طالبہ ثنائ عامر کو دوئم پوزیشن جبکہ اختر گورنمنٹ گرلز سکینڈری اسکول کی طالبہ علیزہ ناز کو سوئم پوزیشن کی ٹرافی پیش کی گئی ،تقریب میں اسکولوں کے طلبائ و طالبات اساتذہ اور والدین کی کثیر تعداد نے شرکت کی ۔اس موقع پر خصوصی بینڈ نے مہمانوں کی آمد پر اُن کا شاندار استقبال بھی کیا ۔