July 13, 2017

نیشنل بینک کے صدر سعید احمد عادی مجرم نکلے

کراچی جدت ویب ڈیسک ؛نیشنل بینک کے صدر سعید احمد عادی مجرم نکلے،اسحاق ڈار نے دوستی نبھانے کے چکر میں بین الاقوامی سزائ یافتہ مجرم سعید احمد کے ہاتھ میں قومی خزانہ کی چابی تھمادی‘ جاوید کیانی نے جے آئی ٹی میں سب کچھ اگل گیا،وزیراعظم ہائو س کے منی لانڈرنگ کیلئے استعمال کا بھی انکشاف‘ جاوید کیانی کی سعید احمد کیخلاف سلطانی گواہ بننے کی پیشکش ‘سیاسی حلقوں میں کھلبلی کی اصل وجہ سامنے آگئی،ملک میںسابقہ روایات کے مطابق چن کر کرپٹ شخص کو نیشنل بینک صدر بنایا گیا‘برطانیہ میں نرسنگ ہوم چلانے والے سعید احمد کو پہلے گورنر اسٹیٹ بینک بھی بنایا جاچکا ہے۔تفصیلات کے مطابق نیشنل بینک کے صدر سعید احمد نے پانامہ کیس کی جے آئی ٹی میں منی لانڈرنگ کے حوالے سے سنسنی خیز انکشافات کئے ہیں اور وفاقی حکومت کی بوکھلاہٹ کی اصل وجہ بھی یہی بتائی جارہی ہے ۔ نیشنل بینک کے صدر نے جے آئی ٹی میں اعتراف کیا کہ برطانیہ میں نرسنگ ہوم چلانے والے سعیداحمد کو سعودی عرب میں دوران ملازمت کرپشن کے الزام میں ادارے نے جیل بھجوادیا تھا تاہم وفاقی وزیرخزانہ اسحاق ڈار کے کلاس فیلو ہونے کی وجہ سے وفاقی وزیرخزانہ سے سعید احمد جیسے عادی مجرم کو پہلے اسٹیٹ بینک آف پاکستان کا ڈپٹی گورنر اور بعد ازاں نیشنل بینک کا صدر بنادیا یہاں دلچسپ بات یہ ہے کہ نیشنل بینک کے بیشتر صدر پر کرپشن کے الزامات لگ چکے ہیں تو یہاں یہ کہنا بے جا نہ ہوگا کہ نیشنل بینک کا صدر بننے کیلئے سب سے بڑی کوالیفکیشن کرپشن ہے جبکہ نجی ٹی وی کے مطابق شوگر مل کے مالک جاوید کیانی نے اپنے ماموں سعید احمد کے کہنے پر منی لانڈرنگ کیلئے جعلی اکائونٹ کھولے جاوید کیانی نے جے آئی ٹی کو منی لانڈرنگ کے حوالے سے سعید احمد کیخلاف سلطانی گواہ بننے کی پیشکش بھی کی ہے۔

July 12, 2017

شیل کے پمپس پر ایندھن کی فراہمی میں کمی کا سامنا

کراچی جدت ویب ڈیسک کراچی میں ایندھن کی کمی کے باعث شیل کمپنی کے متعدد پٹرول پمپس بند ہونے سے شہریوں کو مشکلات کا سامنا ہے ۔ پیٹرولیم ڈیلرز کا کہنا ہے کہ معیاری ٹینکرز کی تعداد کم ہونے پر سپلائی کا مسئلہ ہوا ہے ۔تفصیلات کے مطابق صارفین کو ملٹی نیشنل کمپنی شیل کے کچھ انفرادی پمپس پر ایندھن کی فراہمی میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ہے جس کی وجہ سے شیل کے متعدد پمپس پر تیل کی کمی محسوس کی جارہی ہے۔ ڈیلرز کا کہنا ہے کہ احمد پور شرقیہ واقعے کے سبب کمپنی ٹینکرز کے معیار پر کڑی نظر رکھ رہی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ معیاری ٹینکرز کی تعداد کم ہونے پر سپلائی کا مسئلہ ہوا ہے۔ڈیلرز کا کہنا ہے کہ باقی پمپس اور دیگر کمپنیوں کے پمپس پر صورتحال معمول پر ہے۔ ڈیلرز کے مطابق پنجاب تیل سپلائی کے دوران موٹر وے پولیس بھی ٹینکرز کی سخت چیکنگ کر رہی ہے۔ ڈیلرز نے خدشہ ظاہرکیا ہے کہ امکان ہے کہ ملک کے دیگر حصوں میں بھی انفرادی پمپس پر تیل سپلائی پہلے جیسی نہ رہے۔

July 12, 2017

موبائل کمپنی نے اسمارٹ فونز کی نئی سیریز متعارف کروا دی

کراچی جدت ویب ڈیسک VIVOموبائل کمپنی نے ایک رنگا رنگ تقریب کے دوران اپنے اسمارٹ فونز کی نئی سیریز V5s, Y53, Y55s پاکستانی صارفین کے لئے متعارف کروا دی۔ اس تعارفی تقریب میں موبائل بزنس سے وابستہ کراچی کے تمام ڈسٹری بیوٹرز کے علاوہ دیگر بزنس کمیونیٹی، حکومتی نمائندوں اور شوبز سے وابستہ لوگوں نے کثیر تعداد میں شرکت کی لانچ تقریب سے کمپنی کے سی ای او میسن گائو نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں موبائل انڈسٹری کافی فروغ پا چکی ہے اب ترقی یافتہ ممالک میں آنے والی نئی سے نئی ٹیکنالوجی بیک وقت پاکستان میں بھی دستیاب ہوتی ہے۔ پاکستانی مارکیٹ کافی وسیع ہے ان کے علاوہ اسسٹنٹ سی ای او فیصل میمن نے بھی خطاب کیا تقریب میں رنگا رنگ فیشن شو کے دوران خوبصورت ماڈلز نے متعارف ہونے والے اسمارٹ فونز کے ہمراہ کیٹ واک کی اور تقریب کے آخر میں پاکستان کے مشہو میوزک بینڈ نے اپنے فن کا مظاہرہ بھی کیا۔

July 12, 2017

نیشنل بینک کی چھت گرگئی ‘عملہ شدید زخمی

کراچی جدت ویب ڈیسک نیشنل بینک کی خستہ حالی کے سبب چھت اچانک گرگئی جس سے بنک افسر ذولفقار شیخ شدید زخمی ہوگئے۔ تفصیلات کے مطابق گذشتہ دنوں مذکورہ بنک کے اوقاتِ کارمیں وقفے کے دوران چھت کا ایک حصہ ٹیبل پر آگرا جہاں ذولفقار شیخ بیٹھے تھے جو شدید زخمی ہوگئے جنہیں فوری طور پر ہسپتال پہنچایا گیا جہاں انہیں بارہ ٹانکے آئے۔ واضح رہے کہ مذکورہ کائونٹر پر بزرگ پنشنروں کو ڈیل کیا جاتا ہے پینشنر زبڑی تعداد میں ٹیبل کے گرد کھڑے رہتے ہیں اتفاق سے حادثے کے وقت کائونٹر خالی تھا ورنہ متعدد جانیں ضائع ہوجاتیں۔ واضح رہے کہ مذکورہ برانچ 60سال پرانا ہے جہاں 10ہزار سے زائد اکائونٹ ہولڈرز ہیں جن کا کوئی پرسانِ حال نہیں ہے۔ ذرائع کے مطابق نیشنل بنک کے توسیع و مرمت کا کام گذشتہ 15سال سے التوا کا شکار ہے تاہم بنک انتظامیہ کو اس کی کوئی پراہ نہیں ہے بنک ملازمین کا کہنا ہے کہ انجنیئرنگ ڈیپارٹمنٹ اور اعلیٰ انتظامیہ کے مابین کمیشن طے نہ ہونے کی وجہ سے کام میں ہاتھ نہیں لگایا جاتا جس کے باعث بنک کباڑ خانے کا منظر پیش کر رہا ہے۔ بنک کا مینجر آپریشن ایک کھولی میں بیٹھنے پر مجبور ہے۔ جبکہ بنک کے واش روم میں واٹر کولر رکھا گیا ہے جہاں تعفن پھیلا رہتا ہے۔ذرائع نے بتایا کہ بنک کی خستہ حال عمارت کی بجلی وائرنگ اُدھڑ گئی ہے جگہ جگہ تاریں لٹک رہی ہیں جن میں بجلی بھی موجود ہوتی ہیں اگر اس جانب فوری توجہ نہ دی گئی تو کوئی دوسرا حادثہ بھی رونما ہوسکتا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ SPITقائدآباد برانچ کی توسیع و مرمت کا کام فوری طور پر شروع نہ کیا گیا تو اکائونٹ ہولڈرز بنک کے اعلیٰ افسران کے خلاف سڑکوں پر نکلنے پر مجبور ہوں گے۔