July 19, 2017

بلاول بھٹو نے نسیم اختر کو اسکالرشپ دینے کا اعلان کردیا ،مزید جانیے

کراچی جدت ویب ڈیسک :نسیم اختر نے اسنوکر چیمپین جیت کر پاکستانیوں کا سر فخر سے بلند کردیا اور اب پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے نوجوان کیوئسٹ نسیم اختر کو اعلی تعلیم کے زیور سے آراستہ کرانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔نسیم اختر کچھ دن قبل جونیئر ورلڈ چیمپئن شپ جیت کر وطن لوٹے تھے۔نسیم اخترنےبیجنگ میں ہونے والی جونیئر ورلڈ اسنوکر چیمپیئن شپ جیتنے کے وطن واپسی پر وزیر اعظم پاکستان نواز شریف سے ایوارڈ میں تعلیمی اخراجات کیلئے اسکالر شپ کا مطالبہ کیا تھا۔پاکستان بلیئرڈ اینڈ اسنوکر ایسوسی ایشن کے سینئر نائب صدر جاوید کریم نے خصوصی گفتگو میں بتایا کہ پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے تعلیمی اخراجات کے طور پر اسکالرشپ دینے کا اعلان کیا ہے، وہ بہت جلد جونیئر ورلڈ چیمپیئن سے ملاقات کریں گے۔جاوید کریم کے مطابق۔نسیم اختر کا تعلق ساہیوال کے محنت کش گھرانے سے ہے۔ اس خاندان کے باصلاحیت فرزند نے کبھی بھی محنت سے جی نہیں چرایا اور رواں سال کے آغاز میں بھارتی شہر چندی گڑھ میں ہونے والی ایشین جونیئر چیمپیئن شپ میں برانز میڈل جیتا اور اب وہ واحد پاکستانی کیوئسٹ ہیں جنھوں نے ورلڈ جونیئر چیمپیئن بننے کا اعزاز حاصل کیا۔نسیم اختر کا کہنا ہے کہ وہ آبائی شہر میں اسنوکر کی عدم سہولیات کے باعث لاہور جا کر تیاری کرتے تھے جس کا صلہ مل رہا ہے کھیل کے کے ساتھ علم سے آگاہی ہر کھلاڑی کے لیے ضروری ہے تاکہ بین الاقوامی سطح پر یہ بات ثابت کی جائے کہ عمدہ کھیل کے جوہر دکھانے والے کیوئسٹ اعلی تعلیم یافتہ بھی ہیں

July 19, 2017

بھارتی وزیر خارجہ سشما سوراج نے جگر کے کینسر میں مبتلا پاکستانی شہری کو ویزہ دینے کا اعلان کردیا

جدت ویب ڈیسک :بھارتی میڈیا کے مطابق وزیر خارجہ سشما سوراج نے سوشل میڈیا ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے بیان میں جگر کے کینسر میں مبتلا آزاد کشمیر کے شہری اسامہ علی کو ویزہ دینے کا اعلان کیا ہے ۔بھارتی وزیر خارجہ کاکہنا ہے کہ اسامہ علی کو ویزہ دیا جارہا ہے اس کیلئے مشیر خارجہ سرتاج عزیز کے خط کی کوئی ضرورت نہیں ہے ۔سشما سوراج نے یہ بھی کہا تھاکہ سرتاج عزیزکیلئے علی جو انکا شہری ہے کو خط جاری کرنا مشکل کام نہیں ہونا چاہیے ۔انکا کہنا تھاکہ بھارت میں علاج کیلئے آنے کے خواہشمند پاکستانی شہریوں کے ویزہ اس صورت میں فوری طور پر جاری کیے جائیں گے جب وہ سرتاج عزیز کی جانب سے ایک سفارشی خط کے ساتھ آئیں گے ۔واضح رہے کہ سشما سوراج نے 9جولائی کو کہا تھاکہ راولاکوٹ کے 24سالہ طالب علم کو ویزہ جاری کرنے کیلئے پاکستانی مشیر خارجہ سرتاج عزیز کے ایک خط کی ضرورت ہوگی ۔

July 19, 2017

برٹش کولمبیا کے جنگلات میں آگ لگ گئی، ہزاروں افراد بے گھر

جدت ویب ڈیسک :کینیڈا کے وفاقی وزیر برائے عوامی تحفظ رالف گوڈال نے میڈیا نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کینیڈا کے مغربی صوبے برٹش کولمبیا کے جنگلات میں 150 کلومیٹر کے علاقے میں آگ لگ گئی ہے جس کے باعث اب تک 39 ہزار افراد بے گھر ہوئے ہیں۔ حکومت کی ہدایت پر فوج کے پانچ ہیلی کاپٹر اور دو جہاز فوری طور پر علاقے میں پہنچ گئے ہیں جو وہاں سے لوگوں کے انخلا اور آگ بجھانے والے عملے کی نقل و حرکت میں استعمال ہورہے ہیں۔ آگ بجھانے کے لیے فوجی طیاروں کی مدد بھی لی جائے گی جب کہ آسٹریلیا کی حکومت نے بھی جنگل کی آگ بجھانے کے ماہر 50 فائر فائٹرز کینیڈا بھیج دئیے ہیں۔صوبائی حکومت نے آگ بجھانے اور متاثرین کے عارضی قیام کے لیے ایک کروڑ کینیڈین ڈالر کا ہنگامی فنڈ قائم کردیا ہے۔کینیڈا کے مغربی صوبے برٹش کولمبیا کے ساحلی شہر وینکوور سے 350 کلومیٹر شمال مشرق میں واقع جنگلات میں لگ بھگ 150 کلومیٹر کے علاقے میںآگ لگ گئی ہے،آگ کے باعث اب تک 39 ہزار افراد بے گھر ہوئے ہیں جنہیں حکومت کی جانب سے قائم کردہ کیمپوں میں منتقل کیا گیا ہے جبکہ آگ پر قابو پانے کے لئے فوج کو طلب کرلیا گیا ہے

July 18, 2017

نواز شریف اقتدار سے الگ ہوجائیں‘ بلاول بھٹو

لاہور جدت ویب ڈیسک پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلال بھٹو زرداری نے پیپلز پاٹی جنوبی پنجاب کی جانب سے ملتان، بہاولپور اور ڈیر ا غازی خان راجن پور ، مظفر گڑھ، بہاولنگر، لیہ میں گو نوا زگو ریلیوں کے انعقاد کو شروعات قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے بیشترکہ ہر پاکستانی نواز شریف کو ریڈ کارڈ دکھائے، انہیں اقتدار سے الگ ہو جانا چاہیے ۔یہ بات انہوں نے جنوبی پنجاب پارٹی کے صدر و سابق گورنر پنجاب مخدوم سید احمد محمود سے ٹیلی فونک گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ بلاول بھٹو زرداری نے تصور جمہوریت اور جمہوری اقدار کو شدید نقصان پہنچانے والے نواز شریف اور اس کے ٹولے پر بیک وقت یلغار کرنے پر جنوبی پنجاب کے صدر اور انکی ٹیم میں شامل دیگر عہدیداران اور پارٹی کارکنان و رہنمائوں کی تعریف کی اور مزید کہا کہ نواز اینڈ کمپنی نے ثابت کر دیا کہ آمروں کی گود میں پلنے اور بڑھنے والے قوم و ملک کی خدمت کرنے کے بجائے فقط اپنے مذموم مقاصد کو پورا کرنے کے لیے سیاست میں آتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ نوا ز شریف کے آگے فقط مستعفی ہونے کا راستہ ہے اور وہ ایک مالی جرائم و میگا کرپشن کو بچانے کے لیے ادارں سے تصادم جیسے حربوں میں اپنا وزن ڈالنے سے اجتناب برتیں۔ انہوں نے نشاندہی کرتے ہوئے کہا کہ کیا یہ باعث تعجب نہیں کہ پاناما رپورٹ کے مطابق وزیر اعظم ہائوس آنے کے بعد شریف فیملی کے ہر فرد نے دوران 1991-92اور 1992-93 ہر سال اپنے اثاثوں میں مجموعی طور پر 16.6 فیصد اضافہ کیا ۔ بلاول بھٹو نے کہا کہ نواز شریف نے خود وعدہ کیا تھا کہ اگر کوئی ایک ثبوت اس کے خلاف آیا تو وہ مستعفی ہو جائے گا۔ لیکن اب ثبوتوں سے بھرا پورا ڈبا جو کہ پوری قوم کے سامنے موجود ہے۔ ظاہر ہونے کے بعد وہ اپنے وعدے سے مکر گئے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی ورکر زپورے ملک میں گو نواز گو کے نعرے لگانا اور ریلیاں نکالنابند نہیں کرینگے۔ جب تک پاکستان کی عوام نوازشریف کو مستعفی ہونے پر مجبور نہیں کر دیتی۔ بلاول بھٹو زرداری نے اپنی پارٹی اور عوام کو اپیل کی کہ وہ تمام ضلعی ہیڈ کوارٹر میں گو نواز گو ریلیوں کا انعقاد کریں اور قریب رخصت وزیر اعظم کو بتا دیں کہ 20کروڑ پاکستانی اس کیخلاف سراپا احتجاج ہیں اور چاہتے ہیں کہ وہ مزید وقت ضائع کیے بغیر اب اپنے گھر جائے۔مخدوم سید احمد محمود نے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری سے کہا کہ حکومت اپنے خلاف ساز ش کا بے بنیاد واویلا کر رہی ہے حکمران جمہوری نظام کے خلاف خطرہ بنے ہوئے ہیں جو مرضی کر لیں پانامہ سے پیچھا نہیں چھڑا سکیں گے معاملہ عدالت میں ہے۔ اعلیٰ عدلیہ جو بھی فیصلہ کریگی اسے سب کو ماننا ہو گا نواز شریف کے لیے بہتر ہو گا کہ وہ اپنی جگہ کوئی اور شخصیت لے آئیں جے آئی ٹی انکوائری رپورٹ کے بعد اب انکا بچنا مشکل ہی نہیں نا ممکن ہو چکا ہے۔

July 18, 2017

نوازشریف کی حمایت ‘ فضل الرحمن کی پارٹی میں پھوٹ پڑگئی

اسلام آباد جدت ویب ڈیسک مولانا فضل الرحمن کی جانب سے پانامہ کرپشن کیس میں شریف خاندان کی حمایت نے جمعیت علمائے اسلام کے اندر دراڑیں پیدا کر دی ہیں ، پارٹی میں موجود جید علمائ کرام نے شریف خاندان کی حمایت کو پارٹی کی مقبولیت اور ساکھ کےلئے ایک بڑا خطرہ قرار دیتے ہوئے قیادت کو اس سے دور رہنے کا مشورہ دیتے ہوئے یہ موقف اختیار کیا ہے کہ اگر نواز شریف کو کرپشن کے الزامات کے تحت عہدے سے ہٹا دیا گیا تو ملک کے عوام ہمیں بھی ان کا ساتھی سمجھیں گے اور جے یوآئی کےلئے ملک خصوصا خیبر پختونخوا اور بلوچستان میں اپنی ساکھ کو بچانا مشکل ہوگا ۔جے یوآئی کے ذرائع کے مطابق مولانا فضل الرحمن کی جانب سے پانامہ کرپشن کیس میں مسلم لیگ ن سربراہ میاں نواز شریف کی حمایت نے جے یوآئی کے اندر ونی حلقوں کو بھی برہم کر دیا ہے ذرائع کے مطابق پارٹی میں موجود مرکزی رہنمائوں نے اپنے اجلاسوں میں مولانا فضل الرحمن کی جانب سے میاں نواز شریف کی حمایت پر اعتراضات اٹھانا شروع کر دئیے ہیں ذرائع کے مطابق مولانا فضل الرحمن کی جانب سے میاں نواز شریف کی پانامہ کرپشن کیس میں حمایت نے خیبر پختونخوا میں پارٹی کی مقبولیت کو بھی شدید متاثر کیا ہے اور جے یوآئی کے مخالفین عوام کے اندر یہ تاثر پیدا کرنے کی کوششیں کر رہے ہیں کہ جے یو آئی بھی کرپشن میں حکمران خاندان کے ساتھ شریک ہے ذرائع کے مطابق پارٹی کے اعلیٰ سطحی اجلاسوں میں بھی جید علمائ کرام نے قیادت پر یہ واضح کیا ہے کہ میاں نواز شریف کی حمایت کی وجہ سے پارٹی کا گراف روز بروز گر رہا ہے اور ایسے موقع پر جب اگلے الیکشن نزدیک آرہے ہیں ہمیں میاں نواز شریف کی حمایت کرنے کی بجائے کرپشن کے خلاف آواز اٹھانی چاہیے ذرائع کے مطابق میاں نواز شریف کی حمایت نے پارٹی کو اندرونی سطح پر بھی گروپ بندیوں کا شکار کر دیا ہے اور پارٹی کے مرکزی رہنمائوں نے اس کو جمعیت کےلئے بھی اگلے الیکشن میں ایک بڑا خطرہ قرار دیا ہے ذرائع کے مطابق پارٹی کی مرکزی قیادت نے مولانا فضل الرحمن کو یہ مشورہ دیا ہے کہ اگلے الیکشن میں کامیابی کےلئے وزیر اعظم کی کرپشن کی حمایت کرنا چھوڑ دیں جس کے بعد مولانا فضل الرحمن نے اپنے بیانات میں حکمران خاندان کی کرپشن کا دفاع کرنے کی بجائے مسلم لیگ ن کا ساتھ اقتصادی راہداری کو کامیاب بنانے اور مخالفین کو اقتصادی راہداری کا مخالف قرار دینا شروع کر دیا ہے ذرائع کے مطابق اگر پانامہ کرپشن کیس میں وزیر اعظم میاں نواز شریف کے خلاف عدالت کی جانب سے کسی بھی فیصلے کے اثرات مستقبل میں نہ صرف مسلم لیگ کی کارکردگی پر اثر انداز ہونگے بلکہ جے یوآئی کے خلاف بھی اس کو استعمال کیا جائے گا۔