July 14, 2017

ایف سی کیمپ میں داخلے کی کوشش ناکام ،2 خود کش حملہ آورہلاک

پشاورجدت ویب ڈیسک وفاق کے زیر انتظام قبائلی علاقے فاٹا کی خیبر ایجنسی میں خودکش حملہ آوروں کی ایف سی کے کیمپ میں داخلے کی کوشش ناکام بنادی گئی۔ خیبرایجنسی کی تحصیل لنڈی کوتل کے علاقے جڑوبی میں ایف سی کیمپ میں 2 دہشت گردوں نے داخل ہونے کی کوشش کی جس پر ایف سی نے بروقت کارروائی کرتے ہوئے ایک خودکش حملہ آور کو لاک کردیا جبکہ دوسرے دہشت گرد نے خود کو گیٹ پر ہی دھماکے سے اڑالیا۔ واقعے میں 2 ایف سی اہلکار بھی زخمی ہوئے جنہیں کمبائنڈ ملٹری ہسپتال سی ایم ایچ منتقل کردیا گیا۔آئی ایس پی آرکی جانب سے جاری ہونے والے بیان میں خیبر ایجنسی میں پیش آنے والے اس واقعے میں ملوث دہشت گردوں کا تعلق سرحد پار سے بتایا گیا۔آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ ‘سرحد پار سے آنے والے دو خودکش حملہ آوروں نے پاک افغان سرحدی علاقے جڑوبی میں مستھرا چیک پوسٹ پر حملے کی کوشش کی جسے سیکیورٹی فورسز نے ناکام بنادیا’۔بیان میں مزید کہا گیا کہ دہشت گردوں کے ساتھ فائرنگ کے تبادلے میں 2 جوان زخمی ہوئے ۔یاد رہے کہ رواں ماہ یکم جولائی کو بھی خیبر ایجنسی میں نصب بارودی مواد کے دھماکے میں ایک سیکیورٹی اہلکار سمیت 4 افراد جاں بحق ہوگئے تھے ۔خیبر ایجنسی افغان سرحد کے ساتھ پاکستان کے قبائلی علاقے میں وفاق کے زیر انتظام علاقوں میں سے ایک ہے ۔

July 13, 2017

کوئٹہ میں فائرنگ ،ایس پی سمیت تین پولیس اہلکار شہید

جدت ویب ڈیسک ؛کوئٹہ کے علاقےکلی دیبہ کے قریب فائرنگ کے نتیجے ایس پی قائدآباد سمیت 4 پولیس اہلکارشہید ہوگئے۔بلوچستان حکومت کے ترجمان انوارالحق کاکڑ نے واقعے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ایس پی قائدآباد سمیت4اہلکاروں کی شہادت کی اطلاعات ہیں، دشمن ہمارا مورال ڈاؤن کرنے کیلئے نشانہ بنا رہے ہیں، ہماراعزم پختہ ہے،دہشت گردوں کا صفایا کریں گےانوارالحق کاکڑ کا کہنا تھا کہ شایدنئےگروپ سامنےآنےکی کوشش کررہےہیں، دہشت گردوں کاقلع قمع کریں گے، قانون نافذ کرنے والے ادارے بہترین کام کر رہے ہیںتفصیلات کے مطابق کوئٹہ میں کلی دیبہ کے قریب مسلح افراد نے فائرنگ پولیس کی گاڑی پر فائرنگ کردی ، جس کے نتیجے میں 3 پولیس اہلکار شہید جبکہ ایس پی قائد آباد مبارک شاہ فائرنگ شدید زخمی ہوئے، جنہیں اسپتال منتقل کیا گیا لیکن وہ جانبر نہ ہوسکے۔پولیس کے مطابق ملزمان نے ایس پی قائد آباد کی گاڑی کو نشانہ بنایا گیا، پولیس کی گاڑی پر فائرنگ کلی دیبہ کے قریب کی گئی جس سے 4 پولیس اہلکار شہید ہوئے۔پولیس کے مطابق واقعے کے بعد ملزمان جائے وقوعہ سےفرار ہونے میں کامیاب ہو گئے جبکہ پولیس نے علاقے کا محاصرہ کر کے قریبی علاقوں میں سرچ آپریشن کا آغاز کردیا ہے۔

July 12, 2017

شریف فیملی کے وکلا جے آئی ٹی رپورٹ کاجواب سپریم کورٹ میں پیش کرینگے، مریم اورنگزیب

اسلام آباد جدت ویب ڈیسک وزیرمملکت مریم اورنگزیب نے کہاہے کہ شریف فیملی کے وکلائ جے آئی ٹی رپورٹ کاجواب سپریم کورٹ میں پیش کرینگے، نوازشریف ایک نظریے کانام ہے ان کیخلاف پہلے بھی تمام سازشیں ناکام ہوئیں اس مرتبہ بھی سازشی عناصرناکام ہونگے، مجھے یقین ہے کہ اعلیٰ عدلیہ کے ججز ہمارے خدشات کی روشنی میں جے آئی ٹی کی رپورٹ کو مسترد کردیں گے۔بدھ کو پی آئی ڈی میڈیا سنٹرمیں رکن قومی اسمبلی دانیال عزیز کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مریم اورنگزیب نے کہاکہ جے آئی ٹی رپورٹ کے بعدمخالفین کی طرف سے وزیراعظم کے استعفے کاشورمچایاجارہاہے اورتاثریہ دیاجارہاہے کہ یہ عوام کی آواز ہے انہوں نے کہاکہ وزیراعظم نوازشریف کیلئے یہ سازش نئی نہیں اورنہ ہی آخری ہے اس سے پہلے بھی سازشیں ہوتی رہی ہیں سازشوں کے عنوان بدلتے رہے سازش کرنیوالے بدلتے رہے لیکن جس کیخلاف سازشیں ہوئیں وہ اللہ کے فضل وکرم اور عوام کی وجہ سے آج بھی قائم دائم ہیں اور تیسری مرتبہ ملک کے وزیراعظم ہیں انہوں نے کہاکہ وزیراعظم نوازشریف کو جلاوطن کیاگیا طیارہ سازش کیس میں پھنسایاگیا 2013ئ میں دھرنا ون پھردھرناٹواوراب دھرناتھری کی تیاری ہے سازش تو یہ بھی ناکام ہوگی لیکن اس مرتبہ سازش کرنیوالے بے نقاب ہونگے وزیراطلاعات نے کہاکہ نوازشریف ایک نظریہ کانام ہے جے آئی ٹی کی رپورٹ نے خود مہرلگادی ہے کہ نوازشریف پرکوئی کرپشن خوردبردیاکک بیک کا کوئی ثبوت نہیں ہے انہوں نے کہاکہ جے آئی ٹی کو تیرہ سوالات دیئے گئے تھے لیکن جے آئی ٹی نے جو رپورٹ پیش کی وہ شریف فیملی کے ذاتی بزنس کی رپورٹ ہے صفحہ نمبر51پر جے آئی ٹی خود لکھتی ہے کہ یہ ذاتی بزنس کی تفتیش ہے ہم سے جے آئی ٹی کے جھوٹ کے پلندے کوچیلنج کرنے کاحق کوئی نہیں چھین سکتا مجھے یقین ہے کہ اعلیٰ عدلیہ کے ججز جب اس رپورٹ کو پڑھیں گے اوروہ خدشات بے نقاب ہونگے جو ہمارے تھے تو عدلیہ خود اس رپورٹ کو مسترد کردے گی ۔ انہوں نے کہاکہ جب پانچوں ججوں کافیصلہ آیا تو اس میں سے چن کرمواد پیش کیاگیا جو مسترد ہوا 254صفحات پرمشتمل رپورٹ سے اگرخدشہ ،امکان ،توقع اوراندیشہ جیسے الفاظ نکال دیئے جائیں تو یہ محض خیالات کامجموعہ ہے۔ مریم نوازشریف کے بارے میں جے آئی ٹی خود لکھتی ہے کہ ہوسکتا ہے کہ مریم نوازشریف بینفشری اونرہوں جے آئی ٹی کو کس نے کہاہے کہ کسی کو جھوٹا،مکار ، فریبی کہیں یہ اختیار انہیں کس نے دیاہے کوئی بھی قانون تعصب کی زبان استعمال کرنے کی اجازت نہیں دیتا وزیراطلاعات نے کہاکہ ہمارے وکلائ یہ رپورٹ پڑھ رہے ہیںاور سپریم کورٹ میں اس کاجواب آئین اور قانون کے دائرے میں دیاجائے گا جس کی تیاری کی جارہی ہے میڈیا اور سوشل میڈیا پر یہ سوالات اٹھ رہے ہیں کہ 254صفحے کی رپورٹ کس نے لکھی ہے وزیراطلاعات نے کہا کہ اب پاکستان کے عوام کی تقدیر کسی بھی اندرونی یا بیرونی سازش کرنیوالوںکو نہ ٹھیکے پر دی جاسکتی ہے نہ دی جائے گی اورنہ اس کی اجازت ہوگی ۔انہوں نے کہاکہ ابھی بھی جے آئی ٹی پرتحفظات اسی طرح موجود ہیں ہم جب جواب داخل کرینگے تو اعلیٰ عدلیہ اس رپورٹ کو مسترد کردیگی مریم اورنگزیب نے کہاکہ دوہزار اٹھارہ میں عوام ایک مرتبہ پھر ووٹ کی طاقت سے محمدنوازشریف کو وزیراعظم بنائیں گے رکن قومی اسمبلی دانیال عزیز نے رپورٹ کے مختلف حصوں کی نشاندہی کرتے ہوئے کہاکہ جے آئی ٹی کی طرف سے یہ تاثر دیاگیا ہے کہ یہ رپورٹ مکمل ہے جبکہ رپورٹ کے صفحہ نمبر تین پر یہ لکھا ہوا ہے کہ والیم نمبردس آن گوئنگ ہے انہوں نے کہاکہ جے آئی ٹی کے صفحہ نمبر سات پرلکھا ہے کے برٹش ورجن آئرلینڈ اوردیگراداروں کو ستائیس درخواستیں بھیجی گئیں جن میں صرف پانچ کاجواب آیا رپورٹ میں لکھاگیا ہے کہ بارہ ملین کی ٹرانزیکشن کہیں نظر نہیں آئی وہ تو کیش تھی وہ کہاں سے نظرآتی اسی طرح سامان کی ترسیل شارجہ سے ہوئی دوبئی سے نہیں جبکہ دو خط دوبئی سے آیا ہے اس میں وہ کیسے ظاہر ہوسکتی تھی جے آئی ٹی کی رپورٹ کھوکھلی ہے اور سورس رپورٹ ہے اعتزاز احسن ، خورشید شاہ اور جماعت اسلامی کے لیڈر یک آواز میں بول رہے ہیں لیکن اخبارات میں جو آرہاہے وہ بھی دیکھیں کہ ٹوسٹ لندن بھتیجے کی کمپنی ہے جس کاکوئی تجربہ نہیں اور جے آئی ٹی نے اسے ہائر کیا صفحہ نمبر پینتیس پر جو لکھا گیا ہے اس کے مطابق ماجھا، ساجھا اور گاما بھی ہوسکتا ہے یہ وزیراعظم اور ان کے خاندان کی تفتیش ہورہی ہے انہوں نے کہاکہ اگر چیف جسٹس کابیٹاہے تو سوالنامہ بن جاتا ہے قومی مفاد میں ویڈیو بیان بھی لیاجاسکتاہے اور سب جیل بھی بنائی جاسکتی ہیں تو اس کیس میں قطری شہزادے کابیان کیوں نہیں لیاجاسکتا ۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ سپریم کورٹ کو جے آئی ٹی کی غلط بیانی کاسخت نوٹس لیناچاہیے رپورٹ نامکمل ہے اور رپورٹ میں لکھا ہواہے کہ یہ جاری ہے والیم نمبر چار میں لکھا گیا ہے کہ عمرا ن خا ن نیازی کے مطابق یہ سب ہے انہوں نے کہاکہ جے آئی ٹی نے وہ فرم کیوں چنی جس کاکوئی تجربہ نہیں ہے کیا اس کی نئی کہانی سننی ہے کسی ریمنڈڈیوس سے کہ اصل کہانی یہ تھی۔انہوں نے کہاکہ کیلبری کا بیٹاورژن 2004ئ میں آگیاتھا انہوں نے کہاکہ سولہ اے کامالک نوازشریف کواس لئے ٹھہرایاگیا کہ وہ اس میں ٹھہرتے رہے ہیں نتھیاگلی والاریسٹ ہائوس عمران خان کے نام کردیں کہ وہ اس میں ٹھہرتے ہیں انہوں نے کہاکہ نوازشریف کسی غیرملکی کمپنی کے مالک نہیںہے ہم یہ سپریم کورٹ میں ثابت کرینگے خیبرپختونخوا میںاحتساب کاپوراادارہ ہی بندہے نون لیگ کے کسی لیڈر نے این آر او سے فائدہ نہیںاٹھایا سیاست نہیں ریاست بچائو پر بارہ جماعتوں نے دستخط کئے تھے جو طاہرالقادری نے بنائی تھی اب جمائما اورکیری پیکر کے ریکارڈڈھونڈ رہے ہیںجو موجود ہی نہیں ہیں ایک سوال کے جواب میں مریم اورنگزیب نے کہاکہ نوازشریف منتخب وزیراعظم ہیں وہ پارلیمنٹ پرحملہ کرنیوالے یااس پرکپڑے لٹکانے والے نہیں ہیںوہ ہمیشہ پاکستان کے آئین اورقانون کااحترام کرتے ہیں انہیں پارلیمنٹ کااعتماد حاصل ہے کابینہ کی میٹنگ جمعرات کو ہے وزیراعظم نوازشریف کو پاکستان کے عوام کااعتماد حاصل ہے اور یہ اعتماد انہیں طاقت دیتا ہے کہ وہ سازشوں کامقابلہ کریں۔ انہوں نے کہاکہ تحریک انصاف اپنے صوبے میں احتساب کمیشن کو تالالگاکربیٹھی ہے مارکیٹ میں منتخب رائے زنی ہورہی ہے جے آئی ٹی کی رپورٹ کاجواب شریف فیملی کے وکلائ سپریم کورٹ میں پیش کرینگے انہوں نے کہاکہ ہم یہ پریس کانفرنس اس لئے کرتے ہیں کہ تاکہ اس تاثر کو زائل کیاجاسکے کہ جوکاغذات لہرالہراکراپوزیشن جھوٹ پیش کرتی ہے انہوں نے کہاکہ یہ روایت ختم ہونی چاہیے کہ کوئی منتخب وزیراعظم سے استعفیٰ مانگے کسی بھی میٹنگ میں کسی خدشے یا وزیراعظم کے استعفے کے بارے میں کوئی بات نہیں ہوئی وزیراعظم پر سب کواعتمادحاصل ہے انہوں نے کہاکہ اپوزیشن کی کچھ جماعتوںکامقصد سب کے سامنے ہے کبھی دھرنے دیکر اور کبھی اسلام آباد لاک ڈائون کرکے وہ انتشارپھیلاناچاہتے ہیں لیکن وہ اس طرح پاکستان کے وزیراعظم نہیںبن سکتے عوام کے ووٹوں سے ہی وزیراعظم بن سکتا ہے مسلم لیگ نون نے ملک میں جمہوریت کی خاطرقربانیاں دی ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں دانیال عزیز نے کہاکہ دبئی کی دستاویزات سفارتخانے سے تصدیق شدہ نہیں اور جو دستاویزات تصدیق شدہ نہ ہوں وہ کسی جگہ بھی قابل قبول نہیں برسات کاموسم آرہاہے چائے کے ساتھ یہ رپورٹ پکوڑے رکھ کرکھانے کے کام آئے گی عمران خان یاد رکھیں کہ کسی سکرپٹ یافلم کے سہارے وہ اقتدار میں نہیں آسکتے صرف عوام کے ذریعے ہی اقتدار میں آسکتے ہیں ایک سوال کے جواب میںمریم اورنگزیب نے کہاکہ حکومت کے پاس تصویرلیک کرنیوالے کاکیس آیاہے اس پر جوبھی کارروائی کی جائے گی وہ سامنے لائی جائے گی۔

 

July 12, 2017

کراچی، تیز رفتار وین فٹ پاتھ پر بیٹھے افراد پر چڑھ دوڑی، راہگیر بچی جاں بحق

کراچی جدت ویب ڈیسک کراچی کے علاقے ملیر کھوکراپار میں تیز رفتار ہائی روف وین فٹ پاتھ پر بیٹھے افراد پر چڑھ دوڑی، حادثے کے نتیجے میں ایک بچی جاں بحق جبکہ 3 افراد زخمی ہو گئے۔حادثے کے بعد جمع ہونے والے مشتعل افراد نے حادثے کا سبب بننے والی گاڑی کو آگ لگا دی۔پولیس کے مطابق ملیر کھوکراپار میں تیز رفتار ہائی روف وین نے بے قابو ہو کر فٹ پاتھ پر بیٹھے افراد کو کچل ڈالا۔ حادثے کے نتیجے میں ایک بچی جاں بحق جبکہ تین افراد زخمی ہو گئے۔ زخمیوں کو طبی امداد کیلئے نجی اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ اسپتال ذرائع کے مطابق زخمی اور جاں بحق بچی کی شناخت تاحال نہیں ہو سکی ہے۔ حادثے کے بعد غفلت برتنے والا ڈرائیور موقع سے فرار ہو گیا تاہم مشتعل عوام نے ہائی روف وین کو آگ لگا دی۔پولیس کے مطابق حادثہ دو گاڑیوں کے درمیان ریس لگانے کی وجہ سے پیش آیا۔ایک گاڑی ڈرائیور کے قابو سے باہر ہو کر فٹ پاتھ کے دوسری طرف آگئی۔

July 12, 2017

سیاسی جماعت کے کارکن اور اسٹریٹ کریمنل گرفتار

کراچی جدت ویب ڈیسک شہر قائد میں جرائم پیشہ افراد کے خلاف قانون نافذ کرنے والے اداروں کی کارروائیاں جاری ہیں۔ہوائی فائرنگ کے الزام میں سیاسی جماعت کے تین کارکن اور 2 اسٹریٹ کریمنلز کو گرفتار کرلیا گیاہے۔ترجمان سندھ رینجرزکے مطابق شہر کے مختلف علاقوں میں رینجرز کی کارروائیوں کے دوران ہوائی فائرنگ کے الزام میں سیاسی جماعت کے 3کارکن گرفتار کیے ہیں۔رینجرز ترجمان کے مطابق پی ایس 114 میں کامیابی کے بعد سیاسی جماعت کے یہ کارکن ہوائی فائرنگ کر رہے تھے، فائرنگ سے علاقے میں خوف و ہراس پھیل گیا۔ترجمان رینجرز نے بتایا کہ ملزمان ناصر، عمیر اور مجتبیٰ کو منظورکالونی اور محمود آباد نمبر 5 سے گرفتار کیا گیاہے،جن کے قبضے سے ایک نائن ایم ایم، 30 بور پستول، میگزین اور گولیاں برآمد ہوئی ہیں۔ملزمان کو قانونی کارروائی کے لیے پولیس کے حوالے کردیا گیا ہے۔دوسری جانب اورنگی ٹان پاکستان بازار میں پولیس چھاپے کے دوران 2 اسٹریٹ کریمنلز کو گرفتار کر لیا گیا۔ پولیس کے مطابق گرفتار ملزمان کے قبضے سے اسلحہ اور مسروقہ موٹر سائکل برآمد کر لی گئی ہے۔