July 17, 2017

ملکی استحکام کیلئے وزیراعظم کو اپنا منصب چھوڑ دینا چاہیے‘ مصطفی کمال

کراچی جدت ویب ڈیسک پاک سر زمین پارٹی کے تحت ملک کی موجودہ سیاسی صورتحال کے پیش نظر پی ایس پی کے مرکزی دفتر پاکستان ہاوئس میں ہنگامی اجلاس طلب کیا گیا جس کی صدارت چیئر مین سید مصطفی کمال اورصدر انیس قائم خانی نے کی ۔ اس مو قع پر سینٹرل ایگزیکیٹو کمیٹی اورنیشنل کنسل کے ذمہ داران اور آئینی و قانونی ماہرین نے بھی شرکت کی۔ اجلاس میں ملک کی موجودہ سیاسی صورتحال خصوصا پانامہ لیکس پر پیش آنے والی ممکنہ صورتحال پرتفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔ اجلاس میں متفقہ طور پر فیصلہ کیا گیا کہ پاک سر زمین پارٹی وزیر اعظم کے استعفی کے مطالبے پر قائم ہے۔اس موقع پر اجلاس سے خطاب کر تے ہوئے مصطفی کمال نے کہاکہ جمہوری نظام کے تسلسل اور ملکی استحکام کے لئے وزیراعظم کو اپنا منصب چھوڑ دینا چاہیئے کیونکہ پاک سرزمین پارٹی جمہوریت پر یقین رکھتی ہے اور جمہوریت کے استحکام کے خاطر وزیر اعظم سے مطالبہ کر تی ہے کہ ملک میں جمہوری نظام کو قائم رکھنے کیلئے اپنے منصب سے مستعفی ہوں تاکہ ان کا منصب تحقیقات پر اثر انداز نہ ہو۔اجلاس میں مختلف سیاسی جماعتوں کی جانب سے پاک سرزمین پارٹی سے ہونے والے رابطے پر سینٹرل ایگز یکٹوکمیٹی اور نیشنل کونسل کو اعتماد میں لیا گیا

July 17, 2017

غلام قادر تھیبو کراچی پولیس کے چیف ‘مجید دستی ایڈیشنل آئی جی سندھ تعینات

کراچی جدت ویب ڈیسک سندھ پولیس میں ایک مرتبہ پھر تقرر و تبادلے کیے گئے ہیں اور کراچی پولیس چیف کو تبدیل کرتے ہوئے غلام قادر تھیبو کو نیا چیف تعینات کر دیا گیا ہے۔تفصیلات کے مطابق حکومت سندھ کی جانب سے پولیس میں ہونے والے تقرر و تبادلے کا نوٹی فکیشن جاری کردیا گیا ہے ، جس کے مطابق ایڈیشنل آئی جی کراچی مشتاق مہر کو ہٹا کر ان کی جگہ غلام قادر تھیبو کو نیا کراچی پولیس چیف لگا دیا گیا ہے جب کہ مشتاق مہر کو ایڈیشنل آئی جی ٹریفک تعینات کیا گیا ہے۔نوٹی فکیشن کے مطابق سردار عبدالمجید دستی کو ایڈیشنل آئی جی سندھ تعینات کیا گیا ہے جو اس سے قبل ایڈیشنل آئی جی ریسرچ اینڈ ڈویلپمنٹ تعینات تھے۔نوٹی فکیشن کے مطابق خادم حسین بھٹی کو ایڈیشنل آئی جی ٹریفک سے ہٹا کر ایڈیشنل آئی جی ریسرچ اینڈ ڈویلپمنٹ تعینات کیا گیا ہے۔ایڈیشنل آئی جی سندھ آفتاب پٹھان کا تبادلہ کرتے ہوئے انہیں ایڈیشنل آئی جی کرائم برانچ لگا دیا گیا ہے جب کہ ان سے قبل ایڈیشنل آئی جی سی ٹی ڈی ثنا اللہ عباسی کے پاس اس عہدے کا اضافی چارج تھا۔

July 17, 2017

شہرقائد میں انسداد پولیو مہم کا باقاعدہ آغاز

کراچی جدت ویب ڈیسک شہرقائد میںانسداد پولیو مہم کا باقاعدہ پیرسے آغاز ہو گیا ہے جو 22 جولائی تک جاری رہے گا۔اس ضمن میں ڈپٹی کمشنر کراچی ویسٹ محمد آصف جمیل نے بتایا کہ ضلع غربی کی 41یونین کونسلوں میں معمول کے مطا بق بچو ںکو پولیو کے قطرے پلائے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ اس دفعہ ڈسٹرکٹ ویسٹ میں 561ایریا انچارجز ، 68 UCMOs ، 158 یو سی لیول اسٹاف ، 29 ڈسٹرکٹ لیول اسٹاف ،اور 3341ٹیموں کی مدد سے 5,96,508بچوںکو پولیو کے قطرے پلائے جائیں گے۔انھوں نے کہا کے انسداد پولیو مہم قومی فریضہ ہے پولیو کے خاتمہ کے لئے عالمی پارٹنر ،محکمہ صحت ، پولیس ، رینجرز ، اور انتظامیہ مشترکہ طور پر حکمت عملی کے تحت ملکر بھرپور جدوجہد کر رہے ہیں۔ مسلسل جدو جہد اور کو ششوں کے نتیجے میں کار کردگی مسلسل بہتر ہو رہی ہے ۔ان کوششوں کا مقصد اپنے بچونکے مستقبل کو محفوظ بنانا ہے۔ڈپٹی کمشنر ویسٹ آصف جمیل نے والدین سے اپیل کی کے وہ انسداد پولیو مہم کے دوران آنے والی پولیو ٹیمو ں کے ساتھ تعاون کریں اور ہر بار اپنے بچوںکو پولیو کے قطرے لازمی پلوائیں اس سے کوئی نقصان نہیں بلکہ ہر بار پولیو کے قطرے پینے سے انکی پولیو وائرس کے خلاف قوت مدافعت بڑھتی ہے ۔ڈپٹی کمشنر ویسٹ نے تمام اسسٹنٹ کمشنرز کی انسداد پولیو مہم کے دوران بھرپور سرگرمیوں کو بھی قابل ستائش قرار دیا اور اس امید کا اظہار بھی کیا کہ وہ 17 جولائی تا 22 جولائی تک جاری رہنے والی انسداد پولیو مہم کی بھر پور نگرانی کریں۔ آصف جمیل نے کہاکہ انسداد پولیو کے خاتمے کے عزم کے ساتھ اگر کام کیا جائے تو معاشرے سے پو لیو جیسے موزی مرض کا خاتمہ ہو جائے گا تاہم تمام اداروں کو اس ضمن میں ایک دوسرے کے ساتھ تعاون کو بھی یقینی بنانا ہوگا۔

July 17, 2017

تبدیلی کے دعوئے ٹھس‘ ناز بلوچ نے تحریک انصاف کا کچھا چھٹا کھول دیا

کراچی جدت ویب ڈیسک تحریک انصاف کی سابق نائب صدر ناز بلوچ نے اپنے اوپر پی ٹی آئی کے ترجمان کی جانب سے لگائے جانے والے الزامات کی سختی سے تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ پی ٹی آئی میں کارکنوں خصوصا خواتین کی کوئی عزت نہیں انہیں دھکے دیئے جاتے ہیں یوتھ اور خواتین کو پارٹی عہدوں میں نظر انداز کیا جاتا ہے۔میڈیا سے بات چیت میں انہوں نے کہا کہ مجھ پر دبئی میں فنڈنگ کرنے کا الزام سراسر بے بنیاد ہے میر ی اگر پی ٹی آئی میں اہمیت نہ ہوتی تو ایک ہفتہ قبل پارٹی کے چیئرمین عمران خان عارف علوی کو یہ ہدایت نہ دیتے کہ ناز بلوچ کی ناراضگی دور کی جائے وہ ہماری بہترین ورکر ہیں۔ انہوں نے کہاکہ پی ٹی آئی کو کراچی میں موجود چار کے ٹولے نے کہیں کا نہیں چھوڑا یہ چار کا ٹولہ پارٹی کے نام پر فنڈ کھاتا ہے کبھی ایک کراچی کا صدر بنتا ہے تو کبھی دوسرا صدر بن جاتا ہے۔ناز بلوچ نے کہا کہ پارٹی کے فیصلے پہلے عمران خان کرتے تھے مگر اب پارٹی پالیسی کوئی اور بناتا ہے، چار پانچ جماعتیں تبدیل کرنے والے لوگوں کو پی ٹی آئی میں خوش آمدید کہا جارہا ہے جس کی وجہ سے کارکن ناراض اور تحریک انصاف ختم ہورہی ہے۔ مجھے عمران خان سے کوئی گلہ نہیں مگر حقیقت یہ ہے کہ اپنی ہی پارٹی پالیسیوں کی وجہ سے تحریک انصاف ختم ہوتی جارہی ہے۔ناز بلوچ نے کہا کہ دوسری پارٹیوں سے آنے والے لوگ پوچھتے ہیں ناز بلوچ کون ہے اور شاید وہ کوئی عام کارکن ہے، میں تحریک انصاف کی عام کارکن تھی اور ہمیشہ پارٹی کے لیے اصولوں کے عین مطابق کام کیا اس لیے پارٹی ٹکٹ پر قومی اسمبلی کی نشست پر الیکشن بھی لڑا۔انہوں نے کہاکہ پارٹی میں پیدا ہونے والی برائیوں کی مسلسل نشاندہی کی مگر کسی نے بات تک نہیں سنی، کراچی سے پی ٹی آئی کا ووٹ بینک ختم ہورہا ہے مگر چاہتی تھی کہ عمران خان شہر قائد کو زیادہ وقت دیں تاہم ایسا نہ ہوسکا اس کی اہم وجہ یہ بھی ہے کہ پارٹی کے فیصلے اب دوسری جماعتوں سے آنے والے لوگ کرتے ہیں۔ناز بلوچ نے کہاکہ دوسری جماعتوں سے آنے والے لوگوں کو ویلکم کر کے عام کارکن کو نظر انداز کیا جارہا ہے، جب دوسری پارٹی سے لوگ آسکتے ہیں تو تحریک انصاف کے لوگوںکا دوسری جماعت میں جانا بھی ممکن ہے۔

July 17, 2017

کراچی جیل میں ملاقات کیلئے آنیوالوں سے رشوت ڈبل

کراچی جدت ویب ڈیسک قیدیوں کے فرار ہونے کے بعد کراچی سینٹرل جیل میں قیدیوں سے ملاقات کے لئے آنے والوں سے رشوت دگنی کردی گئی، رشوت نہ دینے پر قیدیوں کو تشدد کا نشانہ بنایا جانے لگا۔تفصیلات کے مطابق سینٹرل جیل میں کرپشن کا بازار مزید گرم ہوگیا، سینٹرل جیل کراچی میں کالعدم تنظیم کے دو قیدیوں کے فرار ہونے والے واقعے اور جیل میں ہونے والے آپریشن کے بعد قیدیوں سے ملاقات کیلئے آنیوالے ان کے اہل خانہ سے رشوت دگنی کردی گئی۔میڈیا سے بات چیت میںمتاثرہ شہری نے بتایا کہ سختی کے نام پر گیٹ سے لے کرملاقات تک ہر اہلکار کو 100سے 300روپے دینے پڑتے ہیں۔متاثرہ شہری کے مطابق علاج کیلئے جانے والے عام قیدیوں سے بھی پیسے لئے جاتے ہیں اور جو زیادہ پیسے دے اسے دیگر سرکاری اسپتالوں میں بھی شفٹ کروادیا جاتا ہے۔متاثرہ شہری کے مطابق جیل انتظامیہ کو پیسے نہ دو تو دھمکیاں دی جاتی ہیں کہ تمھارے قیدی کو قتل کرکے خود کشی ظاہر کردیں گے۔ایک جانب جیل انتظامیہ کی سیکورٹی اور انتظامی معاملات میں مکمل نااہلی سامنے ائی ہے تو وہی جیل میں کرپشن کا بازار بھی گرم ہے جسے کوئی روکنے والا نہیں۔

July 17, 2017

کراچی‘ڈکیت کی فائرنگ سے راہگیر قتل، دکاندار نے ڈاکو ماردیا

کراچی جدت ویب ڈیسک سیاسی جماعت کے دوٹارگٹ کلر،2خواتین منشیات فروشوںسمیت7ملزمان کو گرفتار ،اسلحہ اورمنشیات برآمد کراچی کے علاقے کورنگی نمبر ڈیڑھ میں ڈکیتی میں مزاحمت پر فائرنگ سے ایک راہ گیر جاں بحق ہوگیا، دکاندار کی جوابی فائرنگ سے ایک ڈاکو ہلاک ہوگیا۔پولیس نے مختلف کارروائیوں کے دوران سیاسی جماعت کے دوٹارگٹ کلراور ایک ہی خاندا ن کی 2خواتین منشیات فروشوںسمیت7ملزمان کو گرفتار کرکے اسلحہ اورمنشیات برآمد کرلی ہے۔ تفصیلات کے مطابق کورنگی کے علاقے مٹکے والی پلیا کے قریب دودھ کی دکان میں ڈکیتی کی کوشش کے دوران دو افراد فائرنگ سے ہلاک ہوگئے۔ایس ایس پی کورنگی کے مطابق مٹکے والی پلیا کے قریب مسلح ملزمان نے دودھ کی دکان میں لوٹ مار کی کوشش کی۔مزاحمت کے دوران ملزمان کی فائرنگ سے ایک راہ گیر جاں بحق ہوگیا۔دکاندار کی جوابی فائرنگ سے ایک ملزم ہلاک ہوگیا جبکہ ملزمان کے دو ساتھی فرار ہوگئے، ہلاک ملزم کے قبضے سے پستول بھی برآمد ہوا ہے۔ادھرپولیس نے ڈاکس کے علاقے میں گھر پر چھاپے کے دوران ایک ہی خاندا ن کے 2خواتین سمیت 3منشیات فروشوں کو گرفتار کر لیاہے۔پولیس کے مطابق مچھر کالونی میں منشیات فروشوں کی خفیہ اطلاع پر گھر پر چھاپہ مارا تو وہاں سے درجنوں ہیروئن کے ٹوکن برآمد کئے گئے۔پولیس نے مذکورہ مکان سے منشیات فروشی میں ملوث ملزم ذاکر، اس کی بیوی رخسانہ اور سالی رابعہ کو بھی گرفتار کیا ہے۔خواتین ملزمان کو وومن پولیس اسٹیشن منتقل کرکے مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔ایس پی اورنگی عابد علی بلوچ کے مطابق پیر آباد میں کارروائی کے دوران ایم کیو ایم لندن کے دو ٹارگٹ کلر محمود عالم اور شہزاد کو گرفتار کرکے ان کے قبضے سے دو ٹی ٹی پسٹل برآمد کیے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ ان ملزمان نے 2010کے لسانی فسادات میں متعدد افراد کو قتل کیا تھا۔دوسری کارروائی میں پاکستان بازار کے علاقے سے اسٹریٹ کرمنل معراج کو اسلحے اور موٹرسائیکل سمیت گرفتار کرلیا جبکہ کرایہ داری ایکٹ کی خلاف ورزی پر محمد حسین اور منصور عالم کو گرفتار کرکے مقدمہ درج کرلیا ہے۔

July 17, 2017

پی ایس 114‘ ایم کیوایم کو پیپلزپارٹی کے ہاتھوں شکست یقینی

اسلام آباد جدت ویب ڈیسک الیکشن کمیشن آف پاکستان نے سندھ اسمبلی کے حلقہ پی ایس 114 میں ووٹوں کی دوبارہ گنتی کے کیس کی سماعت 19 جولائی تک ملتوی کردی پیر کو ایم کیو ایم پاکستان کے امیدوار کامران ٹیسوری کی ووٹوں کی دوبارہ گنتی کی سماعت الیکشن کمیشن میں ہوئی پیپلز پارٹی کے امیدوار سعید غنی کی جانب سے سینیٹر اعتزاز احسن الیکشن کمیشن میں پیش ہوئے جبکہ کامران ٹیسوری کے وکیل عدالت میں پیش نہ ہو سکے۔کامران ٹیسوری نے الیکشن کمیشن کو درخواست دی کہ ان کے وکیل بیمار ہیں اس لیے سماعت میں پیش نہیں ہو سکتے۔ چیف الیکشن کمشنر نے ایم کیو ایم پاکستان کے امیدوار کی درخواست منظور کرتے ہوئے مزید سماعت 19 جولائی تک ملتوی کردی اور ریمارکس دیے کہ اگر بدھ کو کامران ٹیسوری کے وکیل پیش نہ ہوئے تو ووٹوں کی دوبارہ گنتی کی درخواست مسترد کردی جائے گی۔الیکشن کمیشن کے باہر میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے سعیدغنی نے کہاکہ کراچی میں موجودہ دور میں 5 ضمنی انتخابات ہوئے ہیں جن میں ایم کیو ایم پاکستان نے سب سے زیادہ ووٹ اسی حلقہ میں لئے ہیں ، کراچی کی تاریخ میں پی ایس 114 سے زیادہ شفاف انتخابات نہیں ہوئے ۔ لو گوں نے شفاف اندازمیں ووٹ کاحق استعمال کیا، ووٹروں کی مشکلات کے حوالے سے ہمارے بھی تحفظات تھے۔ انہوںنے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ جس خاتون کے گھر سے بیلٹ باکس نکلا ہے اس نے بیان دیا ہے کہ اس نے 3 سال پہلے یہ بیلٹ باکس سے 30روپے کا خریدا تھا۔ اگر ایم کیو ایم کے رہنمائوں کے گھروں کی تلاشی لی جائے تو ایسے ہزاروں بیلٹ باکس ان کے گھروں سے نکلیں گے۔سعید غنی نے کہا کہ کراچی میں ماضی میں ہونے والے تمام انتخابات کے مقابلہ میں ضمنی انتخاب انتہائی شفاف رہا ہے۔ ایم کیو ایم جہاں سے الیکشن جیتے اسے تسلیم اور جہاں سے ہارے اسے تسلیم نہ کرنے کاسلسلہ ترک کرے۔ ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا کہ سعید غنی نے تردید نہیں کی کہ جو لوگ گرفتار ہوئے وہ ان کے رشتہ دار نہیں ہیں۔ ہمیں الیکشن ہرایاگیا لیکن ہماری سیاست جیت گئی ، پیپلز پارٹی کے ورکروں کے گھروں سے بیلٹ باکس نکلے ۔ انہوں نے کہاکہ کراچی میں ضمنی انتخابات کے دوران گرفتار 6 افراد میں سے 2 سعید غنی کے رشتہ دار تھے تاہم ایم کیو ایم کے کسی ووٹر یاکارکن پر کوئی الزام نہیں آیا، ہم نے اپنے 18ہزار جائز ووٹوں پر اعتماد کیا۔ انہوں نے کہاکہ ہمارا بظاہر مقابلہ پاکستان پیپلز پارٹی سے تھا تاہم لندن سے اس انتخاب کے بائیکاٹ کااعلان کیا گیا ، ہمارے لئے بظاہر ہار یا ہمیں ہرانے کے باوجود یہ ہمارے لئے نہایت اطمینان بخش ہے ، یہ ہماری تنظیم کی جیت ہے۔ یہ کراچی اور پاکستان کی جیت ہے ۔ اسی بنیاد پر 2018ئ کے انتخابات میں جائیں گے، کراچی میں اب ایک ہی آواز ہے کہ ایم کیو ایم پاکستان ہی کراچی کی نمائندہ جماعت ہے۔