July 18, 2017

کراچی : لیاقت آباد میں عمارت گر نے سے متعدد افراد جاں بحق

کراچی جد ت ویب ڈیسک لیاقت آباد 9 نمبر سریا گلی میں واقع 3 منزلہ خستہ حال رہائشی عمارت زوردار دھماکے سے نیچے آگری جس کے نتیجے میں 3 افراد جاں بحق جبکہ 7 افراد ملبے تلے دب کر زخمی ہوگئے ۔ جنہیں ملبے سے نکالنے کے بعد فوری طبی امداد کیلئے عباسی شہید اسپتال منتقل کردیا گیا ہے جہاں ان میں سے 2 افراد کی حالت تشویشناک بتائی جا رہی ہے ۔ایدھی ذرائع کے مطابق عمارت کے ملبے تلے دبنے سے جاں بحق ہونے والے 3 افراد میں 13 سالہ ایان جبکہ زخمیوں میں شعیب، زین، اکبر، صفدر، نذیر، محمد علی اور واجد شامل ہیں تاہم مزید کسی حادثے سے بچنے کے لیے اطراف کی عمارتوں کو خالی کرایا جارہا ہے ۔ عمارت گرنے کے نتیجے میں کئی افراد ملبے تلے دبے ہوئے ہیں جو کہ مدد کے لیے پکار رہے ہیں، جنہیں تلاش کرکے نکالنے کی کوششیں جاری ہیں تاہم تنگ گلیوں کے باعث ریسکیو عملے کو امدادی کارروائیوں میں مشکلات کا سامنا ہے ۔علاوہ ازیں مقامی شہری اور رینجرز کے جوان بھی امدادی کارروائیوں میں مصروف ہیں تاہم حادثے کی اطلاع ملنے کے 2 گھنٹے کے بعد سرکاری عملے سمیت انتظامیہ کی جانب سے بھاری مشینری جائے وقوعہ پر پہنچ چکی ہے۔

July 17, 2017

کرنسی کی قدر کم کرنے کی کوئی حد ہونی چاہیے‘ میاں زاہد حسین

کراچی جدت ویب ڈیسک پاکستان بزنس مین اینڈ انٹلیکچولز فور م وآل کراچی انڈسٹریل الائنس کے صدر ،بزنس مین پینل کے سیکریٹری جنرل اور سابق صوبائی وزیر میاں زاہد حسین نے کہا ہے کہ حکومت کی جانب سے مقامی کرنسی کی قدر کو مارکیٹ کی قوتوں کے رحم و کرم پر نہ چھوڑنے کے فیصلے کی بھرپور حمایت کرتے ہیں۔ برآمدات بڑھانے کیلئے روپے کی قدر کم کرنے کا مطالبہ بلا جواز ہے کیونکہ اس سے وقتی طور پر معمولی فائدہ ہوتا ہے جبکہ اسکا نقصان زیادہ ہے۔ برآمدات کیلئے کرنسی کی قدر کم کرنے کی کوئی حد ہونی چاہئے۔ میاں زاہد حسین نے یہاں جاری ہونیو الے ایک بیان میں کہا کہ کرنسی کی قدر کم کرنے سے درآمد کیا جانے والا خام مال بھی مہنگا ہو جاتا ہے جس سے کاروباری لاگت میں اضافہ ہوتا ہے ، درآمدات مہنگی ہو جاتی ہیں جبکہ شرح نمو پر منفی اثرات مرتب ہوتے ہیں۔روپے کی قدر کم کرنے سے جہان غیر ملکی قرضے اور ان پر ادا کیئے جانا والا سود بڑھ جاتا ہے وہیں ترقیاتی منصوبوں کی لاگت میں بھی اضافہ ہوتا ہے جبکہ درآمدات جو برآمدات سے بہت زیادہ ہیں مہنگی ہو جاتی ہیں جس سے ملک بھر کی عوام متاثر ہوتی ہے۔ انھوں نے کہا کہ برآمدات بڑھانے کے بہانے 1970 سے روپے کی قدر مسلسل کم کی جا رہی ہے جس سے پاکستان غیر ملکیوں کیلئے ایک منڈی بن کر رہ گیا ہے جبکہ تجارتی اور جاری حسابات کا خسارہ ایک مستقل مسئلہ بن گیا ہے جسے ترسیلات اور قرضوں کے ذریعے حل کیا جا رہا ہے۔ ہماری برآمدات بیس ارب سے کم جبکہ درآمدات تقریباً 53 ارب ڈالر ہیں جس نے معیشت کو خطرات سے دوچار کر دیا ہے۔ آئی ایم ایف اور دیگر اداروں وماہرین کی جانب سے روپے کی قدر میں مزید کمی کا مطالبہ کسی صورت میں نہ مانا جائے۔ حکومت نے پانچ جولائی کو کرنسی کی قدر کو مصنوعی طور پر کم کرنے کا نوٹس لے کر اسے ناکام بنایا اور اب انھیں ایسے اقدامات کی ضرورت ہے کہ دوبارہ کوئی شخص انفرادی طور پر ایسا مہلک فیصلہ نہ کر سکے نہ اوپن مارکیٹ کے عناصرناجائز منافع کی خاطر ایسا کر سکیں۔ انھوں نے کہا کہ بینک ٹریژری بلز، انوسٹمنٹ بانڈز، کرنسی ٹریڈنگ اورا سٹاک مارکیٹ میں سرمایہ کرنے کو ترجیح دیتے ہیں جبکہ پروڈکشن اور دیگر اہم شعبوں کو نظرانداز کیا جاتا ہے جس سے معاشی ترقی میں رکاوٹ پیدا ہوتی ہے۔

July 17, 2017

ملکی استحکام کیلئے وزیراعظم کو اپنا منصب چھوڑ دینا چاہیے‘ مصطفی کمال

کراچی جدت ویب ڈیسک پاک سر زمین پارٹی کے تحت ملک کی موجودہ سیاسی صورتحال کے پیش نظر پی ایس پی کے مرکزی دفتر پاکستان ہاوئس میں ہنگامی اجلاس طلب کیا گیا جس کی صدارت چیئر مین سید مصطفی کمال اورصدر انیس قائم خانی نے کی ۔ اس مو قع پر سینٹرل ایگزیکیٹو کمیٹی اورنیشنل کنسل کے ذمہ داران اور آئینی و قانونی ماہرین نے بھی شرکت کی۔ اجلاس میں ملک کی موجودہ سیاسی صورتحال خصوصا پانامہ لیکس پر پیش آنے والی ممکنہ صورتحال پرتفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔ اجلاس میں متفقہ طور پر فیصلہ کیا گیا کہ پاک سر زمین پارٹی وزیر اعظم کے استعفی کے مطالبے پر قائم ہے۔اس موقع پر اجلاس سے خطاب کر تے ہوئے مصطفی کمال نے کہاکہ جمہوری نظام کے تسلسل اور ملکی استحکام کے لئے وزیراعظم کو اپنا منصب چھوڑ دینا چاہیئے کیونکہ پاک سرزمین پارٹی جمہوریت پر یقین رکھتی ہے اور جمہوریت کے استحکام کے خاطر وزیر اعظم سے مطالبہ کر تی ہے کہ ملک میں جمہوری نظام کو قائم رکھنے کیلئے اپنے منصب سے مستعفی ہوں تاکہ ان کا منصب تحقیقات پر اثر انداز نہ ہو۔اجلاس میں مختلف سیاسی جماعتوں کی جانب سے پاک سرزمین پارٹی سے ہونے والے رابطے پر سینٹرل ایگز یکٹوکمیٹی اور نیشنل کونسل کو اعتماد میں لیا گیا

July 17, 2017

غلام قادر تھیبو کراچی پولیس کے چیف ‘مجید دستی ایڈیشنل آئی جی سندھ تعینات

کراچی جدت ویب ڈیسک سندھ پولیس میں ایک مرتبہ پھر تقرر و تبادلے کیے گئے ہیں اور کراچی پولیس چیف کو تبدیل کرتے ہوئے غلام قادر تھیبو کو نیا چیف تعینات کر دیا گیا ہے۔تفصیلات کے مطابق حکومت سندھ کی جانب سے پولیس میں ہونے والے تقرر و تبادلے کا نوٹی فکیشن جاری کردیا گیا ہے ، جس کے مطابق ایڈیشنل آئی جی کراچی مشتاق مہر کو ہٹا کر ان کی جگہ غلام قادر تھیبو کو نیا کراچی پولیس چیف لگا دیا گیا ہے جب کہ مشتاق مہر کو ایڈیشنل آئی جی ٹریفک تعینات کیا گیا ہے۔نوٹی فکیشن کے مطابق سردار عبدالمجید دستی کو ایڈیشنل آئی جی سندھ تعینات کیا گیا ہے جو اس سے قبل ایڈیشنل آئی جی ریسرچ اینڈ ڈویلپمنٹ تعینات تھے۔نوٹی فکیشن کے مطابق خادم حسین بھٹی کو ایڈیشنل آئی جی ٹریفک سے ہٹا کر ایڈیشنل آئی جی ریسرچ اینڈ ڈویلپمنٹ تعینات کیا گیا ہے۔ایڈیشنل آئی جی سندھ آفتاب پٹھان کا تبادلہ کرتے ہوئے انہیں ایڈیشنل آئی جی کرائم برانچ لگا دیا گیا ہے جب کہ ان سے قبل ایڈیشنل آئی جی سی ٹی ڈی ثنا اللہ عباسی کے پاس اس عہدے کا اضافی چارج تھا۔

July 17, 2017

شہرقائد میں انسداد پولیو مہم کا باقاعدہ آغاز

کراچی جدت ویب ڈیسک شہرقائد میںانسداد پولیو مہم کا باقاعدہ پیرسے آغاز ہو گیا ہے جو 22 جولائی تک جاری رہے گا۔اس ضمن میں ڈپٹی کمشنر کراچی ویسٹ محمد آصف جمیل نے بتایا کہ ضلع غربی کی 41یونین کونسلوں میں معمول کے مطا بق بچو ںکو پولیو کے قطرے پلائے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ اس دفعہ ڈسٹرکٹ ویسٹ میں 561ایریا انچارجز ، 68 UCMOs ، 158 یو سی لیول اسٹاف ، 29 ڈسٹرکٹ لیول اسٹاف ،اور 3341ٹیموں کی مدد سے 5,96,508بچوںکو پولیو کے قطرے پلائے جائیں گے۔انھوں نے کہا کے انسداد پولیو مہم قومی فریضہ ہے پولیو کے خاتمہ کے لئے عالمی پارٹنر ،محکمہ صحت ، پولیس ، رینجرز ، اور انتظامیہ مشترکہ طور پر حکمت عملی کے تحت ملکر بھرپور جدوجہد کر رہے ہیں۔ مسلسل جدو جہد اور کو ششوں کے نتیجے میں کار کردگی مسلسل بہتر ہو رہی ہے ۔ان کوششوں کا مقصد اپنے بچونکے مستقبل کو محفوظ بنانا ہے۔ڈپٹی کمشنر ویسٹ آصف جمیل نے والدین سے اپیل کی کے وہ انسداد پولیو مہم کے دوران آنے والی پولیو ٹیمو ں کے ساتھ تعاون کریں اور ہر بار اپنے بچوںکو پولیو کے قطرے لازمی پلوائیں اس سے کوئی نقصان نہیں بلکہ ہر بار پولیو کے قطرے پینے سے انکی پولیو وائرس کے خلاف قوت مدافعت بڑھتی ہے ۔ڈپٹی کمشنر ویسٹ نے تمام اسسٹنٹ کمشنرز کی انسداد پولیو مہم کے دوران بھرپور سرگرمیوں کو بھی قابل ستائش قرار دیا اور اس امید کا اظہار بھی کیا کہ وہ 17 جولائی تا 22 جولائی تک جاری رہنے والی انسداد پولیو مہم کی بھر پور نگرانی کریں۔ آصف جمیل نے کہاکہ انسداد پولیو کے خاتمے کے عزم کے ساتھ اگر کام کیا جائے تو معاشرے سے پو لیو جیسے موزی مرض کا خاتمہ ہو جائے گا تاہم تمام اداروں کو اس ضمن میں ایک دوسرے کے ساتھ تعاون کو بھی یقینی بنانا ہوگا۔