September 23, 2020

سندھ کے سوا باقی صوبوں میں مڈل اسکول کھل گئے

اسلام آباد جدت ویب ڈیسک :سمیت ملک کے بیشتر حصوں میں مڈل اسکول کھل گئے اور تقریبا 7 ماہ بعد تدریسی عمل بحال ہوگیا تاہم سندھ میں اسکول بدستور بند ہیں۔ ملک میں دوسرے مرحلے کے تحت چھٹی سے آٹھویں جماعت تک بچوں کی تعلیمی سرگرمیاں بحال ہوگئیں۔ اس حوالے سے اسکول انتظامیہ اور محکمہ تعلیم نے ایس او پیز کے تحت انتظامات مکمل کئے ہیں۔ بچوں کے لئے ماسک پہننا اور کلاس میں سماجی فاصلہ لازمی قرار دیا گیا ہے۔ گنجائش کے حساب سے ایک کلاس میں 30 سے زائد بچوں کے بیٹھنے کی اجازت نہیں۔ زیادہ طلبہ والی کلاسز میں بچوں کو دو گروپس میں تقسیم کرکے متبادل دنوں میں بلایا جا رہا ہے۔ اساتذہ روزانہ کی بنیاد پر بچوں کو کلاس میں کورونا سے بچا کے حوالے سے آگاہ کریں گے۔ بچوں کو اسکولوں میں ایک دوسرے سے ہاتھ ملانے سے منع کیا گیا ہے اور بار بار ہاتھ دھونے کی ہدایت کی گئی ہے۔ محکمہ تعلیم کی مختلف ٹیمیں اسکولوں میں جا کر ایس او پیز پر عمل درآمد کا جائزہ لے رہی ہیں۔

September 21, 2020

کے الیکٹرک کیخلاف نیپرا کی سماعت، تاجروں کی بجلی کی نئی کمپنی بنانے کی پیشکش

کراچی:جدت ویب ڈیسک : کے الیکٹرک کے خلاف نیپرا کی عوامی سماعت شور شرابا ہوا اور بدنظمی پیدا ہوگئی۔کراچی میں کے الیکٹرک کے خلاف نیپرا کی عوامی سماعت ہوئی جس میں چیئرمین نیپرا توصیف ایچ فاروقی اور کراچی چیمبر کے سابق صدر سراج قاسم تیلی میں تلخی ہوگئی۔سراج قاسم تیلی نے کہا کہ اگر کے الیکٹرک کی اجارہ داری ختم کی جائیتو کراچی کی تاجر برادری بجلی کی نئی ڈسٹری بیوشن کمپنی بنانے کو تیار ہے۔چیئرمین نیپرا نے انہیں ٹوکتے ہوئے کہا کہ کہیں ایسا نہ ہو کے الیکٹرک کا لائسنس بھی تبدیل ہو جائے اور نئی کمپنی بھی سامنے نہ آئے۔ اس معاملے پر سراج قاسم تیلی اور چیئرمین نیپرا میں تلخی ہوئی۔جاوید بلوانی نے چیئرمین نیپرا سے کہا کہ آپ ان اسٹیک ہولڈرز کو نہیں سنیں گے تو نیپرا یہاں کیوں آیا ہے۔ چیئرمین نیپرا نے سخت لہجے میں کہا کہ جو منظم انداز میں بات نہیں کریگا اسے ہال سے باہر نکال دیں جس پر عوام نے شور شرابا کرتے ہوئے یہاں وقت ضائع کرنے کیلئے ہمیں بلوایا گیا ہے۔

September 19, 2020

بدین۔ زہریلا پانی پینے سے مرغے کی موت پر دکھی بچہ بلاول بھٹو کو پکارنےلگا

بدین: بارش سے جمع ہونے والے زہریلے پانی سے مرغے کی موت پر دکھی بچہ پیپلز پارٹی کے چیئرمین پر برس پڑا اور اس کے غم و غصے کی یہ ویڈیو سوشل میڈٰیا پر بھی وائرل ہوگئی۔
ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ بچے نے ایک جانب بغل میں اپنا مردہ مرغا تھاما ہوا ہے اور انتہائی غم و غصے کی کیفیت میں سندھی میں بتا رہا ہے کہ اس کے گاؤں میں زہریلا پانی جمع ہوگیا ہے۔ یہ زہریلا پانی پینے سے اس کا مرغا اور غریبوں کے مویشی مرر رہے ہیں۔
بچہ کہتا ہے کہ ہم نے یہ پانی پیا تو ہم بھی مر جائیں گے بلاول کچھ کرو ، ہمارے گاؤں سے یہ پانی نکالو۔بچہ یہ مطالبہ بھی کرتا ہے کہ ہمیں پینے کے لیے صاف پانی دیا جائے۔

بارشوں سے جمع ہونے والا گندہ پانی پی کر میرا ککڑ مر گیا ہے ، ہم بھی مر جائیں گے بچے کی فریاد

بارشوں سے جمع ہونے والا گندہ پانی پی کر میرا ککڑ مر گیا ہے ، ہم بھی مر جائیں گے بچے کی فریاد

Posted by Daily Jiddat Karachi on Saturday, September 19, 2020

September 19, 2020

پاکستان میں سب سے زیادہ ٹیکس دینے میں کراچی بازی لے گیا

اسلام آباد : ویب ڈیسک :: پاکستان میں سب سے زیادہ ٹیکس دینے میں کراچی بازی لے گیا، کراچی کی سب سے بڑی صدرمارکیٹ میں 72 ہزار 339 ٹیکس فائلرز نے 77 ارب 20 لاکھ ٹیکس ادا کیا۔
تفصیلات کے مطابق فیڈرل بورڈ آف ریونیو ( ایف بی آر ) نے 30 جون2018 کی ٹیکس ڈائریکٹری کی تفصیلات جاری کردیں ، جس میں پورے ملک میں کراچی بازی لے گیا۔
جاری کردی تفصیلات میں 2018میں کراچی کی سب سے بڑی صدرمارکیٹ نے زیادہ ٹیکس دیا ، کراچی صدرمارکیٹ میں 72 ہزار 339 ٹیکس فائلرزہیں، 30 جون 2018 تک کراچی صدر مارکیٹ نے77ارب 20 لاکھ ٹیکس اداکیا۔
ٹیکس ڈائریکٹری کے مطابق کراچی صدر مارکیٹ کے بعد دوسرے نمبر پر اسلام آباد بلیو ایریار جسٹرڈ ہوا ، اسلام آبادبلیو ایریا کے5854 ٹیکس فائلرز نے 39 ارب93 کروڑ ٹیکس اداکیا۔
لاہورمیں ملتان روڈ کی مارکیٹ کے 17800 ٹیکس فائلرز ہیں ، ملتان روڈ کے 17800تاجروں نے11ارب روپےٹیکس اداکیا جبکہ پشاور کی کارخانو مارکیٹ کے 10417 ٹیکس فائلرز نے 5 ارب 27 کروڑ روپے ٹیکس ادا کیا۔ایف بی آر نے ڈیٹا انکم ٹیکس گوشوارے جمع کرانے والوں کے رجسٹرڈ پتے سے بنایا ہے۔

September 15, 2020

سوک سینٹر میں کے ڈی اے آفس لینڈ ڈیپارٹمنٹ کی تیسری منزل پر ایک افسر نے فائرنگ کرکے دوافسران کو قتل کردیا

کراچی: ویب ڈیسک ::سوک سینٹر میں کے ڈی اے آفس لینڈ ڈیپارٹمنٹ کی تیسری منزل پر ایک افسر نے فائرنگ کرکے دوافسران کو قتل کردیا جب کہ ملزم نے ڈرامہ رچانے کے لیے خود کو بھی گولی مارکر زخمی کرلیا۔

کراچی کے سوک سینٹر میں قائم کے ڈی اے آفس کی تیسری منزل پر لینڈ ڈیپارٹمنٹ کے ایک کمرے میں سپرٹینڈنٹ محمد حفیظ نے فائرنگ کرکے اسسٹنٹ ڈائریکٹر وسیم عثمانی اور ایڈیشنل ڈائریکٹر لینڈ وسیم رضا پر اندھادھند فائرنگ کرکے زخمی کردیا ملزم نے پولیس کو اور کے ڈی اے افسران کو گمراہ کرنے کے لیے خود کو بھی گولی مارکر زخمی کرلیا۔ زخمی ہونے کے بعد ملزم ٹیبل نے نیچے چھپ گیا فائرنگ کی آواز سن کر اسٹاف جمع ہوگیا زخمی حفیظ نے شور مچایا ملزمان فائرنگ کرکے فرار ہوگئے۔ جس کے بعد تینوں زخمیوں کو کے ڈی اے کا عملہ اسپتال پہنچا رہا تھا کہ راستے میں وسیم عثمانی نے دم توڑ دیا جبکہ وسیم رضا کو اسپتال پہنچایا جہاں وہ دوران علاج دم توڑ گئے۔

فائرنگ کی آواز سن کر کے ڈی اے کی تینوں عمارتوں میں بھگڈر مچ گئی، عملہ اور سائلین تیسری منزل پر پہنچ گئے، کے ڈی اے عملے نے فوری طور پر 15 مددگار پولیس کو اطلاع دی، پولیس اور رینجرز نے جائے وقوعہ کی تلاش کے دوران کمرے سے ایک پستول برآمد کرلیا۔ جس سے بارود کی بو آرہی تھی، پولیس نے فوری طور پر نجی اسپتال پہنچ کر زخمی سپرٹینڈنٹ ملزم کے ڈی اے کے افسر محمد حفیظ کر حراست میں لے لیا۔

پولیس کے مطابق ملزم نے ابتدائی طور پر اسپتال میں بیان دیا کہ اس نے ہی فائرنگ کرکے دونوں افسران کو زخمی کرکے خود کو گولی مارلی تھی ، ہم تینوں آپس میں گہرے دوست تھے 20 سے 25 دن قبل نئے ڈائریکٹر لینڈ مینجمنٹ ( ڈی ایل ایم ) کی تعیناتی کے بعد تینوں دوستوں کو عہدوں سے ہٹادیا گیا تھا، چند دن قبل وسیم عثمانی کو میٹروول برانچ کے مختلف ڈیپارٹمنٹ پر تعینات کردیا، مجھے لگا کہ وسیم عثمانی اور وسیم رضا ملی بھگت سے مجھے عہدے سے ہٹاکر خود تعینات ہوگئے، جس پر رنج تھا، وقوعہ سے چند گھنٹے قبل بھی اسی بات پر کمرے میں جھگڑا ہوا تھا طیش میں آکر گھر سے پستول لاکر فائرنگ کردی۔

پولیس کا کہنا ہے کہ جائے وقوعہ سے 30 بور پستول اور 5 خول ملے ہیں جنہیں تحویل میں لے کر فرانزک کے لیے بھیجے جائیں گے۔ مقتول وسیم عثمانی اور وسیم رضا کی لاشیں ضابطے کی کارروائی اور پوسٹ مارٹم کے بعد لاشیں ورثا کے حوالے کردی گئی ہیں۔

ایس ایس پی کراچی شرقی ساجد سدوزئی کے مطابق جائے وقوعہ پر پہنچ کر معلومات حاصل کی تو پتہ چل کمرے میں ہلاک و زخمی کے علاوہ چوتھا شخص بھی موجود تھا جو واردات کے بعد غائب ہوگیا پولیس نے 2 سے 3 گھنٹے کی تلاش کے بعد ایک شخص کو حراست میں لے لیا ہے جس کا نام عمران شاہ ہے، یہ بھی کے ڈی اے میں سپرٹینڈنٹ کے عہدے پر فائز ہے، وقوعہ سے دو سے تین منٹ قبل وہ بھی کمرے میں موجود تھا جسے ملزم محمد حفیظ نے کمرے سے باہر نکال کر فائرنگ کردی، پولیس نے عمران شاہ کو حراست میں لے کر تفتیش کا آگاہ کردیا۔

یاد رہے کہ کے ڈی اے لینڈ میں عہدے کی تعیناتی اور فائلوں کی مدد میں مبینہ طور پر لاکھوں روپے اعلی افسران تک جاتے ہیں ایڈیشنل اور سپرٹینڈنٹ ہر فائل کی مدد میں مبینہ طور پر 5 سے 6 ہزار روپے لیتے ہیں ، رقم نہ ملنے پر فائل آگے نہیں جاتی۔

September 14, 2020

قتل کا معمہ حل ہوگیا ،غیرملکی خاتون کے قتل کا معمہ حل 80 سالہ شوہر اور ملازم گرفتار

کراچی: ویب ڈیسک :: کلفٹن بلاک 5 میں غیر ملکی خاتون کے قتل میں ملوث 80 سالہ شوہر اور اس کے ملازم کو گرفتار کرلیا گیا۔
نیوزکے مطابق 10 روز قبل کراچی کے علاقے کلفٹن بلاک 5 میں غیر ملکی خاتون کے قتل کا معمہ حل ہوگیا ہے، اور پولیس نے قتل میں ملوث 80 سالہ شوہر اور اس کے ملازم کو گرفتار کرلیا ہے۔
ایس ایس پی انویسٹی گیشن بشیر بروہی نے کیس کے حوالے سے بتایا ہے کہ خاتون کو اس کے شوہر نے اپنے ملازم کی مدد سے قتل کیا، ملزم نے قزاقستان سے تعلق رکھنے والی خاتون سے حال ہی میں نکاح کیا تھا، اور نکاح سے قبل 2004 سے مقتولہ ملزم کی خدمت پر مامور تھی، نکاح کے بعد خاتون نے گھر نام کرنے کا مطالبہ کیا، جس پر ملزم نے ملازم کی مدد سے خاتون کو قتل کردیا۔
ایس ایس پی انویسٹی گیشن کے مطابق قتل کے واقعے کو خودکشی کا رنگ دینے کی کوشش کی گئی تھی، اور پہلی پوسٹ مارٹم رپورٹ میں بھی واقعے کو خود کشی ہی قرار دیا گیا، تاہم آئی او کی درخواست پر دوبارہ پوسٹ مارٹم اور میڈیکل ٹیم نے جائے وقعہ کا دورہ کیا، اور تفتیش مکمل ہونے کے بعد خاتون کی موت کو گلا گھونٹ کر قتل قرار دیا گیا۔

September 13, 2020

کلفٹن میں غیرملکی خاتون کی خودکشی کا معاملہ قتل نکلا

کراچی: جدت ویب ڈیسک :کلفٹن میں غیرملکی خاتون کے قتل کو خودکشی کا رنگ دینے کی کوشش ناکام ہوگئی، بوٹ بیسن پولیس نے میڈیکل رپورٹ میں خاتون کو گلا دبا کر قتل کرنے کا انکشاف کردیا۔ رواں ماہ 4 ستمبر کو بوٹ بیسن کے علاقے کلفٹن بلاک 5 میں واقعے بنگلے سے قازقستان سے تعلق رکھنے والی 53 سالہ ڈیوڈ لانا زوجہ فاروق ڈوسا کی گلے میں پھندا لگی لاش ملی تھی جسے ابتدائی طور پر خودکشی کا معاملہ بتایا جا رہا تھا۔ پولیس نے وجہ موت کا تعین کرنے کے لیے پوسٹ مارٹم کرایا جس کی اب میڈیکل رپورٹ آگئی ہے۔ رپورٹ میں انکشاف ہوا ہے کہ ڈیوڈ لانا کو گلا دبا کر قتل کیا گیا۔ پولیس نے اس واقعے کے حوالے سے فاروق ڈوسا سے معلومات کیں تو وہ تسلی بخش جواب نہ دے سکے جبکہ وہ وہیل چیئر پر ہیں اور ان کی عمر 80 سال کے قریب ہے۔پولیس ذرائع کے مطابق پولیس جب بنگلے میں داخل ہوئی تو خاتون کی لاش پنکھے میں پھندے کی مدد سے لٹکی ہوئی تھی۔ انویسٹی گیشن پولیس کا کہنا ہے کہ واقعے کی تحقیقات کے لیے بنگلے کے ملازمین اور دیگر افراد کے بیانات قلم بند کیے جا رہے ہیں اور جلد ہی قاتل کا سراغ لگالیا جائے گا جب کہ قتل کے انکشاف کے بعد سرکار کی مدعیت میں دفعہ 302/34 کے تحت مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔