نیو سبزی منڈی سپر ہائی وے میں 6 ماہ سے بجلی کی فراہمی منقطع

Karachi
April 12, 2018 10:43 pm

ملیر سے رحیم شاہ کی رپورٹ۔نیو سبزی منڈی سپر ہائی وے میں 6 ماہ سے بجلی کی فراہمی منقطع ، مارکیٹ کمیٹی انتظامیہ بھی سبزی منڈی میں بجلی فراہمی بحال نہ کراسکی، تاجر برادری میں غم غصے کی لہر چھا گئی، تاجر برادری کا کے الیکٹرک انتظامیہ اور کے الیکٹرک کے ٹھیکدار حامد اینڈ برادرزکے خلاف احتجاجی تحریک جلانے سمیت اعلیٰ عدلیہ سے رجوع کرنے کا اعلان، سبزی منڈی میں بنیادی سہولتوں کا فقدان ہے، تاجروں کی جانب سے کروڑوں روپے جمع کرانے کے باوجودبجلی بحال نہیں کی گئی، تاجر برادری کو شدید گرمی میں اور رات کے اندھیرے میں کاروباری سرگرمیاں جاری رکھنے میں انتہائی مشکلات کا سامنہ ہے،۔ تفصیلات کے مطابق نیوسبزی فروٹ منڈی سپر ہائی وے میں 4ماہ قبل کے الیکٹرک کی جانب سے عدم ادائیگی کو جواز بنا کر بجلی فراہمی منقطع کردی تھی، جو کہ تا حال بحال نہ ہو سکی ہے، جس کی وجہ سے سبزی منڈی میں کاروبار کرنے والے تاجروں ،خریدار کرنے والے صارفین اور اجناس فراہم کرنے والے آبادگاروں کو شدید مشکلات درپیش ہیں، اس سلسلے میں سبزی منڈی کے سرکردہ تاجروں حاجی عظیم احمد خان، رئوف تنولی، باچان خان، محمد افضل، عبدالوحید ، بہرام خان، حمید کاکڑ، فیض اللہ اچکزئی کی سربراہی میں ہنگامی میٹنگ کی گئی، جس میں سبزی منڈی کے سبزی و فروٹ سیکشن کے تاجروں نے کثیر تعداد میں شرکت کی،میٹنگ میں تاجروں کو بریفنگ دیتے ہوئے حاجی عظیم ، فیض اللہ اچکزئی اور محمد افضل نے بتایا کہ سبزی منڈی میں بجلی بحران کے اصل ذمیدار کے الیکٹرک انتظامیہ ہے، جنہوں نے تاجروں سے بلوں کی مد میں کے الیکٹرک کی کنٹرکٹ کمپنی حامد اینڈ برادرزکے سینئر ڈائریکٹرشاہجہان خان نے 34ماہ کے دوران 7کروڑ سے زائد وصول کئے اور کے الیکٹرک کی کرپٹ انتظامیہ کی ملی بھگت سے تاجروں کو میٹر فراہم کرنے کے بجائے کنڈا سسٹم کے تحت بجلی فراہم کرکے کروڑوں روپے کی کرپشن کی، تاجروں کے باربار بجلی کے میٹر لگانے کے مطالبے کو نہیں مانا گیا، 2013کو کے الیکٹرک انتظامیہ نے حامد برادرز اینڈ کمپنی کو بجلی کا ٹھیکہ دیا تھا، کنٹریکٹ ساٹھ ماہ کے لئے تھا، مگر 34ماہ کے دوران کے الیکٹرک کے کرپٹ افسران اور ان کے ٹھیکدار حاجی شاہ جہان خان نے کروڑوں روپے کی کرپشن کی، تاجروں سے بلوں کی مد میں وصول کی جانے والی رقم کے الیکٹرک کے خزانے میں جانے کے بجائے حاجی شاہ جہان کی نام نہاد کمپنی حامد اینڈ برادرز کے اکائونٹ میں جمع کرواکر کرپٹ کے الیکڑک انتظامیہ اور ٹھیکیدار نے اپنی جیبیںبھریں اور سبزی منڈی کے تاجروں کو کے الیکٹرک کا نادہندہ قرار دلوایا، افضل خان نے مزید بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ مارکیٹ کمیٹی کے موجودہ چیئرمین حاجی علی احمد جوکھیو اور وائس چیئرمین آصف احمد کی سربراہی میں کے الیکٹرک انتظامیہ کی زیادتیوں کے خلاف متعلقہ اداروں کو شکایات کیں جس پر سبزی منڈی میں بجلی فراہمی کے لئے کمشنر کراچی نے مارکیٹ کمیٹی انتظامیہ ، سبزی منڈی کے تاجران اور کے الیکٹرک کے مابین ثالثی کا کردار ادا کرتے ہوئے تین اعلیٰ سطح اجلاس منعقد کئے گئے، جس میں کے الیکٹرک کی نمائندگی ڈائریکٹرارشد افتخار کررہے تھے، آخری اجلاس میں کے الیکٹرک کو 45لاکھ رروپے بلوں کی مد میں اور تاجروں کو بجلی کنیکشن اور میٹرکی مد میں 1کروڑ 40لاکھ روپے طے کئے گئے، تاجروں کی جانب سے ادائیگی کرنے کے باوجود کے الیکٹرک کی کرپٹ انتظامیہ نے معاہدے پر عمل نہ کیا، بلکہ سبزی منڈی کے تاجروں کا کاروبار تباہ کرنے کے لئے بجلی فراہم کرنے سے ہی انکار کردیا ہے، انتہائی افسوس سے کہا پڑتا ہے کہ بل ادا کرنے والے تاجروں کو بجلی فراہم نہیں کی جارہی، مگر کے الیکٹرک کے نادہندہ اور کرپٹ ٹھیکدار شاہ جہان خان کی دکانوں ، گوداموں اور کولڈ اسٹوریج کو بجلی کی فراہمی جاری ہے، سبزی منڈی میں کے الیکٹرک انتظامیہ کی ناانصافیوں اور سبزی منڈی میں بجلی ، پانی اور گیس جیسی بنیادی سہولتوں کی عدم دستیابی کا چیف جسٹس آف سپریم کورٹ پاکستان کو سوموٹو ایکشن لینا چایئے، سبزی منڈی سپر ہائی وے کی بنیادی مسائل حل نہ ہوئے تو ہم ایک ہفتے کے بعد اعلیٰ عدلیہ سے رجوع کرنے سمیت احتجاجی تحریک چلائیں گے۔

متعلقہ خبریں