کراچی میں دہشت گردی کی بڑی کارروائی کا خدشہ؛ پولیس ہائی الرٹ

January 12, 2021 11:19 am

کراچی:جدت ویب ڈیسک: شہر میں مشتبہ سفید گاڑی کے داخل ہونے کی اطلاع پر پولیس الرٹ ہوگئی اور شہر بھر میں اسنیپ چیکنگ میں اضافہ کردیا گیا ہے ۔انٹٰیلی جنس اطلاع کے تناظر میں پیر اور منگل کی درمیانی شب ایڈیشنل آئی جی کراچی غلام نبی میمن کی جانب سے فوری احکامات دیے گئے کہ تمام ایس ڈی پی اوز اور ایس ایچ اوز سڑکوں پر موجود رہیں جبکہ اسنیپ چیکنگ فوری طور پر بڑھادی جائے ۔ احکامات ملتے ہی کراچی پولیس الرٹ ہوگئی اور شہر بھر میں باقاعدہ طور پر ناکے لگادیے گئے ، گاڑیوں کی اسنیپ چیکنگ بڑھادی گئی جب کہ خصوصی طور پر سفید رنگ کی گاڑیوں اور کرولا ماڈل کی گاڑیوں کو چیک کیا گیا۔ڈیفنس ، کلفٹن ، گذری ، درخشاں ، میٹرو پول ، صدر ، نمائش ، گرومندر ، نیو پریڈی اسٹریٹ ، لیاقت آباد دس نمبر ، لیاقت آباد ڈاکخانہ ، راشد منہاس روڈ ، گلشن اقبال ، گلستان جوہر ، ٹاور اور دیگر شاہراہوں پر پولیس کی بھاری نفری رات بھر تعینات رہی جب کہ اس دوران تمام ایس ایچ اوز اور ایس ڈی پی اوز بھی سڑکوں پر موجود رہے تاہم کوئی مشکوک گاڑی نہیں مل سکی۔تفصیلات کے مطابق پیر اور منگل کی درمیانی شب شہر بھر میں اچانک اسنیپ چیکنگ بڑھادی گئی، پولیس کی بھاری نفری بھی جگہ جگہ تعینات کردی گئی ، ذرائع کا کہنا ہے کہ پولیس کو انٹیلی جنس اطلاع ملی ہے کہ شہر میں سفید رنگ کی ایک مشتبہ گاڑی داخل ہوچکی ہے جس کے ذریعے دہشت گردی کی کوئی بڑی واردات کی جاسکتی ہے لہٰذا اس سفید کرولا کو جلد از جلد تلاش کیا جائے ۔یاد رہے کہ کراچی میں پہلے ہی ایک سفید کرولا گینگ انتہائی سرگرم ہے جس نے نہ صرف لوٹ مار کی وارداتیں کی ہیں بلکہ اس گینگ کے کارندے ڈکیتی کے دوران قتل سے بھی نہیں چوکتے جبکہ چند روز قبل ہی انٹیلی جنس اداروں کی جانب سے اطلاع فراہم کی گئی ہے کہ دہشت گرد شہر میں کسی بڑی دہشت گردی کی منصوبہ بندی کررہے ہیں اور اس سلسلے میں کسی سرکاری دفتر کو بھی نشانہ بنایا جاسکتا ہے ۔

متعلقہ خبریں