پی ٹی اے نے صارفین کیلئے نئے قواعد باضابطہ طور پر جاری کردئیے

October 22, 2020 6:20 pm

ویب ڈیسک :: پاکستان میں آپریٹ کرنے والی تمام سوشل میڈیا کمپنیز 9 ماہ میں رجسٹریشن کی پابند ہوں گی۔توہین مذہب،دفاع پاکستان کیخلاف اورفحش مواد کی اشاعت پر کڑی سزا ملے گی۔
پی ٹی اے نےسخت قواعد کا نوٹیفکیشن جاری کیا ہے جس کے مطابق مذہب، توہین رسالت، دفاع پاکستان، دفاعی اداروں سمیت پاکستان کے ثقافتی واخلاقی رجحانات اور حکومتی احکامات کیخلاف مواد قابل سزا قرار دیا گیا ہے۔انتہا پسندی، دہشت گردی، نفرت انگیز اور فحش مواد کیساتھ تشدد کی لائیو اسٹریمنگ پر بھی پابندی عائد کی گئی ہے۔بچوں کو متاثر کرنے والا،انفرادی واجتماعی ساکھ اوردوسروں کی نجی زندگیوں کومتاثر کرنے والا مواد بھی نہیں چلے گا۔پی ٹی اے کے نئے قواعد یوٹیوب، فیس بک، ٹک ٹاک، ٹوئیٹر، گوگل پلس سمیت تمام کمپنیوں پرلاگو ہونگے۔5 لاکھ سے زائد صارفین والی سوشل میڈیا کمپنیوں کی رجسٹریشن لازم قراردی گئی ہے۔رولز نفاذ کرنے بعد 9 ماہ میں اپنے دفاتر پاکستان میں قائم کرنا ہوں گے جس کے بعد 3 ماہ کے اندر کوآرڈینشن کی خاطر فوکل پرسن کا تقرر لازم ہوگا۔18 ماہ میں ڈیٹا بیس سرور قائم کرنا ہوگا۔تمام کمپنیاں پاکستان کے وقار،سلامتی ودفاع کے خلاف مواد ختم کرنےکی پابند ہوں گی۔
واضح رہے کہ وفاقی کابینہ نے سوشل میڈیا کو ریگولیٹ کرنے سے متعلق رولز کا ٹاٹٹل تبدیل کرکے دوبارہ منظوری دی تھی۔پہلےان رولز کا نام آن لائن ہارم ٹو پرسن رولز تھا جس کو عوام اور سوشل میڈیا پلیٹ فارمز کی مخالفت کے باعث واپس لیا گیا تھا۔اس کا نیا نام ریموول اینڈ بلاکنگ اَن لاء فل آن لائن کنٹینٹ رکھا گیا

متعلقہ خبریں