سائنسدانوں نے چاند پر پانی کی موجودگی کی تصدیق کردی

October 27, 2020 3:37 pm

واشنگٹن:ویب ڈیسک ::تہلکہ خیز دریافت: امریکی خلائی ادارے ناسا کے سائنسدانوں نے چاند پر پانی کے خلیوں کی دریافت کی تصدیق کر دی ہے۔
سائنسدانوں کو پانی کے شواہد چاند کے قطبوں پر ملے ہیں جس سے یہ نتیجہ اخذ کیا گیا ہے کہ اس کی سطح کا تقریباً 40 ہزار مربع میٹر اس کی صلاحیت رکھتا ہے۔اس کے علاوہ اندھیرے میں موجود علاقوں کا مشاہدہ بھی کیا گیا۔ سائنسدانوں نے ان کو کولڈ ٹریپ کا نام دیا ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی ہے کہ ممکن ہے کہ ان کولڈ ٹریپس میں پانی پھنس جائے اور ہمیشہ کے لیے موجود رہے۔سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ چاند کے جنوبی قطب میں پانی کا ذخیرہ تخمینوں کی نسبت کہیں زیادہ ہے۔ اس قدرتی وسائل کی دریافت سے چاند پر خلائی سٹیشن بنانے کے امکانات مزید روشن ہو گئے ہیں۔
ناسا کے ایڈمنسٹریٹر جم بیڈین سٹائن نے اس تاریخی خبر سے لوگوں کو آگاہ کرنے کیلئے ٹویٹر پر ایک ویڈیو شیئر کی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ ہم نے سوفیا ٹیلی اسکوپ کی مدد سے چاند پر موجود پانی دریافت کر لیا ہے۔
جم بیڈین سٹائن نے اپنی ٹویٹ میں لکھا کہ ہم ابھی تک یہ نہیں جانتے کہ اسے فوری طور پر استعمال کر سکتے ہیں یا نہیں لیکن یہ دریافت ہمارے چاند پر موجود پانی سے متعلق منصوبوں کے لیے کلیدی حیثیت رکھتی ہے

متعلقہ خبریں