کرونا وائرس کی روک تھام کے لیے بیرون ملک سے آنے والے مسافروں کے لیے جدید منصوبہ پاکپاس ایپ متعارف

July 1, 2020 1:17 pm

اسلام آباد: جدت ویب ڈیسک ::حکومت نے بیرون ملک سے آنے والے مسافروں کے لیے ایک جدید منصوبہ پاکپاس ایپ متعارف کرا دی ہے۔
رپورٹ کے مطابق کرونا وائرس کی روک تھام کے لیے حکومت نے بیرون ملک سے پاکستان آنے والے مسافروں کے ٹیسٹ، ان کی نقل و حرکت اور ہوم قرنطینہ سے متعلق معلومات اکھٹی کرنے کا جدید منصوبہ بنا لیا۔اس سلسلے میں بیرون ملک سے آنے والے مسافروں کے لیے پاکپاس موبائل ایپ متعارف کرائی گئی ہے، تمام مسافروں کو پاکپاس موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنا لازمی قرار دیا گیا ہے، پاکپاس ایپ کے لازمی استعمال کے حوالے سے ایئر پورٹس انتظامیہ اور ملکی و غیر ملکی ایئر لائنز انتظامیہ کو ہدایات بھی جاری کر دی گئیں، جب کہ سی اے اے کے شبعہ ایئر ٹرانسپورٹ نے باضابطہ نوٹیفکیشن جاری کر دیا ہے۔
سول ایوی ایشن اتھارٹی کا کہنا ہے کہ موبائل ایپ متعارف کرانے کا مقصد پاکستان پہنچنے والے مسافروں کا 14 دن تک قرنطینہ موجودگی کو لازمی بنانا ہے، ایپ کے ذریعے ان کی ٹریکنگ ہوگی۔
ایپ سے کرونا ٹیسٹنگ اور ہوم آئسولیشن کے بارے میں معلومات اکٹھا کی جا سکیں گی، سی اے اے نے ہدایات جاری کی ہیں کہ ٹکٹ بک کرواتے وقت ایئرلائن انتظامیہ مسافروں کو بذریعہ ای میل موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کی ہدایت کرے، اور چیک اِن، بورڈنگ ڈیسک پر مسافروں کے موبائل میں ایپ کی موجودگی یقینی بنائے۔ ایئر لائن انتظامیہ بورڈنگ پاس پر موبائل ایپ کا لِنک پرنٹ کرے گی، بورڈنگ کے وقت انتظامیہ پاسپورٹ کے ساتھ موبائل ایپ پر درج پاسپورٹ نمبر بھی چیک کرے گی، موبائل ایپ انسٹال نہ کرنے والے مسافروں کے خلاف لینڈنگ کے وقت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔
ہدایات میں کہا گیا ہے کہ فیملی کی صورت میں ایک فرد ہی موبائل ایپ انسٹال کرے گا، اسمارٹ فونز نہ رکھنے والے مسافروں کو ایئر پورٹ پر سخت عمل سے گزارا جائے گا۔

متعلقہ خبریں