لاک ڈاؤن کا فیصلہ بروقت کرلیا جاتا تو صورتحال اتنی خراب نہ ہوتی۔وزیراعلیٰ سندھ

June 6, 2020 6:58 pm

کراچی جدت ویب ڈیسک ::وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے وزیراعظم عمران خان اور وفاقی حکومت کو ملک میں کورونا وائرس کے کیسز میں اضافے کا براہ راست ذمہ دار قرار دے دیا۔
انہوں نے کہا کہ اگر لاک ڈاؤن کا فیصلہ بروقت کرلیا جاتا تو صورتحال اتنی خراب نہ ہوتی۔
رپورٹ کے مطابق انہوں نے مزید کہا کہ دیر سے لاک ڈاؤن کا فیصلہ اور پھر وزیراعظم کی جانب سے لاک ڈاؤن کے خلاف ملے جلے پیغامات آنا شروع ہوگئے لہذا ہم لاک ڈاؤن کے نتائج حاصل نہیں کرسکے۔سندھ اسمبلی میں کورونا وائرس سے متعلق بحث کا اختتام کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس تفتان سے آنے والے زائرین سے نہیں بلکہ بیرون ملک سے آنے والے لوگوں سے پھیلا۔انہوں نے مزید کہا کہ تبلیغی جماعت کے 5 ہزار سے زائد افراد کے ٹیسٹ کیے گئے جن میں سے 765 کے نتائج مثبت آئے۔
انہوں نے کہا کہ اگر لاک ڈاؤن سے متعلق میری تجویز کو قبول کرلیا جاتا تو ضلع رائے ونڈ سے سندھ اور دیگر صوبوں کے مختلف اضلاع جانے والے تبلیغی جماعت کے افراد کی جانب سے مقامی سطح پر منتقلی کو 13 مارچ کو روک دیا جاتا۔

متعلقہ خبریں