نواز شریف سیر سپاٹے کر رہے ہیں ، ان کے ڈاکٹرز کہتے ہیں کہ ان کی حالت خراب ہے ۔ڈاکٹر عدنان نے نوازشریف کی میڈیکل رپورٹس ٹویٹ کر دیں

January 14, 2020 2:56 pm

جدت ویب ڈیسک ::وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ نواز شریف سیر سپاٹے کر رہے ہیں ، ان کے ڈاکٹرز کہتے ہیں کہ ان کی حالت خراب ہے ۔
ڈاکٹر یاسمین راشد نے بتایا کہ نواز شریف کو صحت پر دی گئی ضمانت کی مدت 25 دسمبر کو ختم ہوئی ،27دسمبر کو نوازشریف کے وکیل خواجہ حارث نے میڈیکل رپورٹ بھجوائی،رپورٹ کی بنیاد پر میڈیکل بورڈ کا اجلاس طلب کیا گیا، رپورٹ ایسا کچھ بھی نیا نہیں تھا، وہی پرانی باتیں تھیں، جن کا ہم کو پہلے ہی پتا ہے، رپورٹ میں نوازشریف کی پرانی طبی تشخیص بھجوائی گئی، میڈیکل بورڈ نے کہا کہ نوازشریف کی رپورٹس نامکمل ہیں۔وزیر صحت پنجاب نے کہا کہ میں نے کل نواز شریف کو چائے پیتے دیکھا تو پھر ان کے معالج کو فون کیا اور پوچھا کہ آپ کہتے ہیں نواز شریف کی حالت بہت خراب ہے اور وہ سیر سپاٹے کرتے پھرتے ہیں ۔ان کا مزید کہنا تھا کہ جس کے بارے میں کہا جا رہا ہو کہ وہ تشویش ناک حالت میں ہیں تو ان کے ساتھ تو ڈاکٹر کو ہر وقت ہونا چاہئے،ہوا خوری ریسٹورنٹ میں نہیں بلکہ باہر ہوتی ہے، مریم نواز بھی کہہ رہی ہیں کہ والد کی تیمار داری کیلئے جانا ہے ۔
نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان نے نواز شریف کی میڈیکل رپورٹس ٹویٹ کر دیں اور لکھا کہ تازہ رپورٹس حکومت کو بھجوا دی ہیں ۔ اپنے ٹویٹ میں نواز شریف کے ذاتی معالج کا کہنا تھا کہ میڈیکل رپورٹس متعلقہ وزراء اور اداروں کو بھجوا دی گئی ہیں ۔
دوسری جانب پنجاب حکومت نے نواز شریف کی جانب سے پہلی بھجوائی گئی میڈیکل رپورٹس کو مسترد کر دیا ہے ۔ ذرائع کے مطابق :نوازشریف کی میڈیکل رپورٹ میں کئی اعتراضات اٹھا گئے ، نوازشریف کی جانب سے یہ رپورٹ ضمانت میں توسیع کےلئے دی جانیوالی رپورٹ کے ساتھ لف کی گئی تھی۔
ذرائع کے مطابق نوازشریف کی میڈیکل رپورٹ جس نے لکھی وہ ڈاکٹر میڈیکل بورڈ میں شامل ہی نہیں، پنجاب حکومت نے نوازشریف کی مدت میں توسیع کی مخالفت کی ، محکمہ داخلہ پنجاب نے نوازشریف کی تازہ میڈیکل رپورٹس فوری طورپر بھیجوانے کا حکم دیا تھا ، تازہ میڈیکل رپورٹس کا میڈیکل بورڈ جائزہ لے گا پھر ضمانت میں توسیع کا فیصلہ ہوگا۔

متعلقہ خبریں