برطانوی انتخابات، بورس جانسن کے دوبارہ وزیراعظم بننے کے امکانات روشن

December 13, 2019 10:47 am

جدت ویب ڈیسک ::۔۔۔ برطانوی انتخابات میں کنزرویٹو پارٹی واضح اکثریت کی راہ پر گامزن ہے۔ بورس جانسن کے دوبارہ وزیراعظم بننے کے امکانات روشن ہیں۔ برطانوی انتخابات میں لیبرپارٹی کو دوبارہ انتخابات کا مطالبہ لے ڈوبا۔ حکمران کنزرویٹو پارٹی نے 362 نشستیں جیت کر میدان مار لیا۔
برطانوی میڈیا کے مطابق 650 میں سے 647 نشستوں کے نتائج آگئے۔ کنزرویٹو پارٹی 362 نشستوں پر کامیاب ہوئی۔ لیبر پارٹی203 نشستوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے۔
اسکاٹش نیشنل پارٹی کی 48 نشستیں، لبرل ڈیموکریٹس 11 نشستوں پر کامیاب ہوئی۔ 23 نشستیں دیگر پارٹیوں اور آزاد امیدواروں کے نام رہیں۔
بورس جانسن تاریخی کامیابی ملنے پر خوش ہیں اور عوام سے اظہار تشکر کیا۔ انہوں نے کہا کہ قوم نے بریگزٹ مسئلے کو حل کرنے کیلئے طاقتور مینڈیٹ دیا، بریگزٹ کا معاملہ پایہ تکمیل تک پہنچائیں گے۔ ہمارا کام آج سے شروع ہو رہا ہے۔ادھر جیریمی کوربن نے شکست تسلیم کرتے ہوئے پارٹی قیادت چھوڑ دی۔ بولے گزشتہ رات بہت مایوس کن تھی،، بریگزٹ نے الیکشن نتائج کو متاثر کیا۔ آئندہ الیکشن میں پارٹی قیادت نہیں کرونگا۔برطانوی الیکشن میں پاکستانی نژاد امیدواروں کی بڑی کامیابیاں ہوئیں۔ نازشاہ مسلسل تیسری بار بریڈ فورڈ سے رکن پارلیمنٹ منتخب، ساجد جاوید برومس گرو سے فاتح ٹھہرے۔ خالد محمود اور طاہر علی نے برمنگھم،، یاسمین قریشی نے ساؤتھ بولٹن سے کامیابی سمیٹی۔ پاکستانی نژاد زارا سلطانہ، شبانہ محمود، محمد یاسین، نصرت غنی، افضل خان، عمران احمد اور رحمان چشتی بھی اپنی سیٹ جیت گئے
ایگزٹ پول کے مطابق بورس جانسن ایک بار پھر برطانوی وزیر اعظم بننے میں کامیاب ہو جائیں گے۔ کنزرویٹو پارٹی جسے ٹوری پارٹی بھی کہا جاتا ہے ایک بار پھر ہاؤس آف کامنز کی سب بڑی جماعت کے طور پر ابھر سکتی ہے۔
ایگزٹ پول کے مطابق کنزرویٹو پارٹی کو گزشتہ انتخابات کے مقابلے میں 50 نشستیں زیادہ ملنے کا امکان ہے۔ ایگزٹ پول ایوان نمائندگان میں ٹوری ایم پیز کی تعداد 368 تک پہنچنے کی پیش گوئی کرتا دکھائی دیتا ہے۔ایگزٹ پول کے مطابق انتخابات کے نتائج لیبرپارٹی کیلئے کسی ڈراؤنے خواب سے کم نہیں ہوں گے۔ جیریمی کوربن کی لیبر پارٹی کو 191 سیٹیں ملنے کا امکان ہے۔ 2017کے انتخابات کے مقابلے میں لیبر پارٹی کو 71 نشستوں کا نقصان اٹھانا پڑ سکتا ۔
ایگزٹ پول کے مطابق لبرل ڈیموکریٹکس گزشتہ انتخابات کے مقابلے میں 1 نشست زیادہ جیت کر 13 نشستیں حاصل کر سکتے ہیں جبکہ اسکاٹش نیشنل پارٹی 55 نشستیں جیتنے کی پوزیشن میں آ گئی ہے جو گزشتہ انتخابات کے مقابلے میں 20 نشستیں زیادہ ہوں گی۔
پلیڈ کیمری 3 ، گرین پارٹی 1 نشست جیت سکتی ہے جبکہ 19 آزاد امیدواروں کے میدان مارنے کا امکان ہے۔ نیجل فراج کی بریگزٹ پارٹی شائد ایک بھی نشست نہ جیت سکے۔

متعلقہ خبریں