اب پاکستان میں صرف بیٹری والے رکشے سڑک پر چل سکیں گے

October 9, 2019 3:10 pm

جدت ویب ڈیسک ::وفاقی وزیر برائے سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے کہا ہے کہ پاکستان میں بیٹری سے چلنے والے رکشوں کی تیاری آخری مراحل میں پہنچ گی ہے اور چھ سے آٹھ ماہ تک ایسے دس ہزار رکشے سڑک پر ہوں گے۔
انہوں نے یہ دعویٰ سماجی رابطے کی ایپ ٹوئٹر پر کیا ہے، ان کا کہنا ہے کہ اگلے تین سے پانچ سالوں کے دوران پاکستان میں انجن سے چلنے والے تمام رکشوں پر پابندی عائد کر دی جائے گی کیونکہ بیٹری سے چلنے والے رکشوں بڑی تعداد میں متبادل کے طور پر سامنے آ چکے ہوں گے۔
پاکستان کوالٹی اسٹینڈرز اس وقت بیٹری کے رکشوں کے اسٹنڈرز بنا رہا ہے، انشاللہٰ چھ سے آتھ ماہ میں پہلا دس ہزار بیٹری رکشوں کا بیج (Badge) سڑک پر آجائیگا۔ تین سے پانچ سالوں میں انجن والا رکشہ سڑکوں پر بین (Ban) کر سکیں گے۔۔پاکستان میں بجلی سے چلنے والی موٹرسائیکلیں بننا شروع ہوگئیں۔۔ پٹرول سے چلنے والی موٹرسائیکل کا اگر ماہانہ خرچہ 4000 ہے اس موٹرسائیکل سے خرچہ کم ہوکر 500 روپے ماہانہ ہوجائے گا۔۔اس سے قبل وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی نے بیٹری کے ذریعے چلنے والا موٹر سائیکل اور رکشہ خود چلا کر دکھایا تھا، ان کا کہنا تھا کہ ٹیکنالوجی میں تبدیلی سے ماحول میں موجود نقصان دہ دھوئیں میں بھی کمی آئے گی۔

Image result for electric rickshaw in pakistan

متعلقہ خبریں