دُکھی انسانیت کے مسیحا عبدالستار ایدھی کو ہم سے بچھڑے 3سال بیت گئے

July 8, 2019 12:30 pm

کراچی جدت ویب ڈیسک :: دکھی انسانیت کے مسیحا عبدالستار ایدھی کی خدمات کو فراموش نہیں کیا جاسکتا، اپنی زندگی انسانیت کیلئے وقف کرنے والے عبدالستار ایدھی کو ہم سے بچھڑے تین سال بیت گئے ہیں مگر دلوں میں آج بھی زندہ ہیں۔یتیم بچوں کا بڑا سہارا ، نومولود بچوں کی پرورش ، زخمیوں کا علاج معالجہ ہو یا لاوارث لاشوں کی تدفین ، انسانیت کی بلارنگ و نسل خدمت کرنے والے عبدالستار ایدھی کی کہانی میٹھادر میں واقع تین منزلہ عمارت کے کمرے سے عیاں ہے۔
سال 1928 کو بھارتی ریاست گجرات میں پیدا ہونے والے ایدھی کو بچپن سے فلاحی کاموں سے لگاؤ تھا، ہر مشن میں شانہ بشانہ رہنے والی ان کی اہلیہ بلقیس ایدھی کہتی ہیں ایدھی پاکستان کو فلاحی ریاست دیکھنا چاہتے تھے، اچھی نیت کے ساتھ خدمت کا آغاز کیا تو اللہ کی مدد پہنچتی رہی۔
بلقیس ایدھی کا کہنا ہے کہ ایدھی صاحب کار خیر کا کارواں چلانے کیلئے اپنی ذمہ داری پوری کرکے گئے ہیں۔
تین برس قبل 8 جولائی 2016 کو ایدھی دنیا سے رخصت ہوئے تو ان کی خدمات کے اعتراف میں نہ صرف انہیں کئی اعزازات سے نوازا گیا بلکہ انیس توپوں کی سلامی بھی دی گئی جبکہ اسٹیٹ بینک نے یادگاری سکہ بھی جاری کیا۔
بچھڑا کچھ اس ادا سے کہ رت ہی بدل گئی
اک شخص سارے شہر کو ویران کرگیا

عبدالستار ایدھی ‏ کراچی ‏ ‏92 نیوز دکھی انسانیت ‏

متعلقہ خبریں