بجٹ 20-2019 کا نفاذ ، 569 درآمدی اشیاء 90 فیصد تک مہنگی

July 2, 2019 11:00 am

اسلام آباد۔۔۔جدت ویب ڈیسک ::بجٹ 20-2019 کا نفاذ ہو گیا ، 569 درآمدی اشیاء 90 فیصد تک مہنگی ہو گئیں ۔جوسز، شہد، خشک میوہ جات، کافی، صابن، پرفیوم، کپڑوں کی قیمت میں پچاس فیصد تک اضافہہو گیا ۔ پنیر اور دہی پر اضافی درآمدی ڈیوٹی عائد کر دی گئی ، موبائل فون بھی مہنگے ہو گئے ۔مالی سال 20-2019 کا آغاز ہوتے ہی 30 ڈالر مالیت تک کے موبائل فون پر 165 روپے، 100 ڈالر تک کے فون پر 1620 روپے ڈیوٹی عائد کر دی گئی ۔
دوسو ڈالر تک کے فون پر 2430، 350 ڈالر تک 3240 روپے اور 500 ڈالر مالیت والے موبائل فون پر 9450 روپے ڈیوٹی عائد۔ 500 ڈالر سے زیادہ کے موبائل فون پر 16 ہزار 650 روپے ڈیوٹی عائد کی گئی ہے ۔ایک ہزار سے 1300 سی سی انجن والی گاڑیوں پر 15 فیصد ڈیوٹی کا نافذ، 1800 سے 3000 اور اس سے زاید انجن والی استعمال شدہ گاڑیوں پر 70 فیصد، جبکہ نئی گاڑیوں پر 90 فیصد ڈیوٹی عائد ہو گئی۔ سائیکلوں کی درآمد پر 10 فیصد اور کلائی گھڑیوں پر 30 فیصد، آٹومیٹک اور سیمی آٹومیٹک پسٹل پر 20 فیصد جبکہ بندوقوں پر 25 فیصد ڈیوٹی عائد ہو گئی ۔
فلموں کی درآمد پر 3000 روپے فی منٹ ریگولیٹری ڈیوٹی عائد کی گئی۔ پنیر اور دہی کی درآمد پر 50 فیصد ڈیوٹی لگی۔
آرٹیفیشل جیولری کی درآمد پر 45 فیصد ڈیوٹی عائد، فروٹ جوس پر 60 فیصد، شہد پر 30 فیصد، خشک میوہ جات پر 20 فیصد، کافی پر 15 فیصد اور صابن پر 20 فیصد ڈیوٹی عائد کی گئی ہے ۔
پرفیومز پر 50 فیصد، کپڑے پر 10 فیصد، اور وال پیپر پر 30 فیصد ڈیوٹی لگائی گئی ہے ۔

متعلقہ خبریں