روزنامہ جدت دنیائے صحافت میں قلم کی عزت اورحرمت کے نگہبان کی حیثیت سے اپنا فرض ہر مشکل و سختی کے باوجود بھرپور طریقے سے ادا کر رہا ہے۔ اس فرض کی ادائیگی میں  گزرے ہوئے ماہ و سال ہموار، یکساں اور آسان نہیں تھے۔مشکلات کا سامنا بھی رہا اور مصائب کی بھٹی میں سلگنا پڑا لیکن اللہ تعالیٰ کے فضل و کرم سے اس نے ہر آزمائش کا مردانہ وار مقابلہ کیا۔ آزادی صحافت  پر کبھی کوئی سمجھوتہ نہیں کیا اور نہ ہی زمینی خدائوں کے سامنے سر تسلیم خم کیا۔ ہمار یقین اول اور مقصد نظریہ پاکستان اور دین اسلام کی سربلندی ہے، آج دین حق کو دہشت گردی کے ساتھ جوڑنے کی ناپاک سازش کو ہم  اسلام اور ملک و قوم کے خلاف سمجھتے ہیں، روزنامہ جدت  اس دہشت گردی کیخلاف جنگ میں اپنا فعال کردار ادا کر رہا ہے اور مستقبل میں بھی کرتا رہے گا، اسلام کا اولین تقاضا یہ ہے کہ ہر شہری کے ساتھ یکساں سلوک ہو، اس کے یکساں حقوق ہوں، مملکت کے وسائل پر سب کا یکساں حق تسلیم کیا جائے اور عوام کی عزت نفس کو مجروح کرنے والے، اس پاک سرزمین کے باغی اور غدار قراردئیے جائیں۔

 

مراعات یافتہ طبقوں کی بالادستی کے خاتمے اور عوام کی حکمرانی کیلئے ہماری جدوجہد روز اول سے جاری ہے اور انشاللہ آخری فتح تک جاری رہے گی۔ ہم جمہور کیلئے بادشاہت نہیں بلکہ جمہوریت پر یقین رکھتے ہیں۔ ملکی بقا کیلئے قومی و ریاستی اداروں کی اعانت ہمارا منشور ہے۔ ہمارا اس بات پر پختہ یقین ہے کہ پاکستان کے وسائل اس کے تمام شہریوں کیلئے عام ہونے چاہئیں۔ پاکستان کے سب بچوں کو یکساں تعلیم دینی چاہئے۔ پاکستان کے ہر شہری کو ارزاں علاج کی سہولت حاصل ہونی چاہئے۔ اس وقت پاکستان پر مخصوص طبقات نے قبضہ کر رکھا ہے، اس کے وسائل مخصوص ٹولوں نے اپنی گرفت میں لے رکھے ہیں مگر اب اسلامی جمہوریہ پاکستان میں روشن دن بہت دور نہیں، تبدیلی اور بہتری کی ہوا چل پڑی ہے ، اب  پاکستان حاصل کرنے والے، اس کےلئے جان لڑانے والے، اس کو اپنے پسینے سے توانائی فراہم کرنے والے ہی اس ملک کو آگے لے کر چلیں گے، وہی اس ملک کے حقیقی ہیرو ہیں۔ روزنامہ جدت ان ہی پسماندہ طبقات کی آواز ہے جو ہر گزرتے دن کے ساتھ بلند ہوتی جائے گی انشاللہ۔

 

” ہمارے لئے اللہ ہی کافی ہے اور وہ سب سے بہتر مددگار ہے“۔

 

فیصل شاہجہاں